Connect with us

Urdu Shayari

Intezar Poetry in Urdu

عمر بھر منتظر رہوں گی مگر
آنے میں عمر نہ لگا دینا

Umar bhar muntazir rahu gi magar

Aane main umar na laga dena

●○●○●○●○●○●○●○●

بس ایک شام کا ہر شام انتظار رہا
مگر وہ شام کسی شام بھی نہیں آئی

Bs aik sham ka har sham intezar raha

Magar wo shaam ksi bhi shaam na aai

●○●○●○●○●○●○●○●

شدید اتنا رہا تیرا انتظار مجھے
کہ وقت منتیں کرتا رہا گزار مجھے

shadeed itna raha tera intezar mje 

k wakt minatain karta raha guzaar mje 

●○●○●○●○●○●○●○●

ساری زندگی تیرا انتظار کر لیں گے
مگر یہ رنج رہے گا کہ زندگی کم ہے

Sari zindagi tera intazar kar lain ge

Magar ye rabt rahe ga k zindagi kam hai

●○●○●○●○●○●○●○●

پیار کیا اگر کوئی میرے جتنا
انتظار بھی کرے تو اس کے ہو جانا

pyaar  kyaa agr koi mre jitna

intezar bhi kare ga to uske hoo jana

●○●○●○●○●○●○●○●

انتظار یار بھی لطف کمال ہے
آنکھیں کتاب پر اور سوچیں جناب پر

intezar yar bhi lutf  kahin e kamal hai

Ankhain kitaan par or sochain janab pe

●○●○●○●○●○●○●○●

مجھے بھی سکھا دے یوں نظرانداز کرنے کا ہنر
میں تھک گٸ ہوں ہر لمحہ ہر سانس تیرے انتظار میں

Mje b sikha de yu nazar andaz karne ka hunar

Main thak gai hu har lamha sans trre intazar main

●○●○●○●○●○●○●○●

تیرے آنے کی کیا امید
مگر کیسے کہہ دو انتظار نہیں

tere aane ki kya umeed

magr kese keh do k intzar nahi

●○●○●○●○●○●○●○●

مڑ کر دیکھنے کی جرات وہی کرتا ہے
جس کو یہ یقین ہو کہ پیچھے کوئی منتظر ہوگا

Mur kar daikhne ki jurrat woi karta hai

Jis ko Ye yakeen hoke. Pichay koi muntzir ho ga

●○●○●○●○●○●○●○●

صبر اور انتظار میں پتہ کیا فرق ہے
صبر خود کیا جاتا ہے اور انتظار کوئی کروا رہا ہوتا ہے

Sabr or intezar ma pta kya farq hai

Sabar khd kiya jata hai Or intezar koi karwa raha hota hai 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

انتظار ایک اذیت ہے
پھر چاہے ہاتھ میں موبائل پکڑے کسی کے مسیج کا ہو
چوکھٹ پر بیٹھے کسی کے لوٹ آنے کا ہو بستر پر لیٹ کر نیند کا ہو یا زندگی سے ہار کر موت کا ہو

Intezar aik aziyat hai

Phr chahe hath main mbl pakre ksi message ka ho chokhat par baithe ksi ke lot aane ka ho bistar par lait kar nend ka ho ya zindagi se haar kar mot ka.ho

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کاش تو بھی انتظار کرے میری طرح 

اور میں نہ آؤں تیری طرح

Kash tu bhi intazar kare meri tarha

Or mai na aaon teri tarha

●○●○●○●○●○●○●○●○●

برسوں  بعد اس نے پوچھا کیا کرتے ہو 

میں نے کہا تمہارا لوٹ کر آنے کا انتظار

Barsoon baad usne pucha kya karte ho

Main ne kaha tumara lot ke aane ka intazar

●○●○●○●○●○●○●○●○●

جس کے ملنے کے منتظر تھے ایک عرصے سے
کمال کا شخص تھا آیا بھی تو الوادع کہنے

Jis ke milne ke muntazir the ik Arse se

Kamal ka shakhs tha aaya bhi to alwida kehne

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ

اور ہم انتظار کریں مسلسل
Yaani tum nazar andaz karo hmesha

Or hm intezar karain musalsal

●○●○●○●○●○●○●○●○●

انتظار کرنا کسی کو کہاں اچھا لگتا ہے
ایک بار تم کر کے دیکھنا نفرت ہو جائے گی مجھ سے
Intezar karna ksi ko kahan acha lagta hai

Aik bar tum kar ke daikhna nafrat ho jaye gi mujh se

●○●○●○●○●○●○●○●○●

انتظار طویل ہو جائیں تو آنکھوں میں
موجود رنگ پھیکے پڑنے لگتے ہیں
Intezar taweel hoo jayain to ankhon main

Mojood rang pheekay parne lagte hain

●○●○●○●○●○●○●○●○●

زندگی کا سب سے اذیت ناک کام
مسلسل کسی لاپرواہ انسان کا انتظار کرنا

Zindagi ka sab se aziyat naak kaam

Musalsal ksii la parwa inssn ka intezar karna

●○●○●○●○●○●○●○●○●

وقت چاہے جتنا بھی لگے
انتظار ہمیشہ آپ کا ہی رہے گا

Wakt chaahe jitna bhi lage

Intezar hmesha apka hi rahe ga

●○●○●○●○●○●○●○●○●

‏کن لفظوں میں لکھوں میں تیرے انتظار کو
بے زبان عشق میرا ڈھونڈتا ہے خاموشی سے تجھے

Kin lafzoon main likhu main tere intezar ko

Be zubaan Ishq mera dhundta hai khamoshi se tuje

●○●○●○●○●○●○●○●○●

جانتا ہے کہ وہ نہ آئیں گے
پھر بھی مصروف انتظار ہے دل

Janta hu k wo na aayain ge

Phr bhi masroof intazar hai dil

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کہیں وہ آ کے مٹا دیں نہ انتظار کا لطف
کہیں قبول نہ ہو جائے التجا میری

kahin wo aake mita na dain intezar ka lutf

See also  Bewafa Poetry in Urdu

kahin qubool na hoo jaaye iltaja meri 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اےموت ایک تیرے سوا
سب انتظار ختم ہوگئے ہیں

Ae mot ik tere siwa 

Sab intezar khatam hogye hain

●○●○●○●○●○●○●○●○●

وقت چاہے جتنا بھی لگے
انتظار ہمیشہ آپ کا ہی رہے گا

Wakt change jitna bhi lage 

Intazar hmesha apka hi rahe ga

●○●○●○●○●○●○●○●○●

مجھ کو یہ آرزو وہ اٹھائیں نقاب خود
ان کو یہ انتظار تقاضا کرے کوئی

Muj ko ye arzoo wo uthayain niqaab khd 

Inko ye intazar taqaaaza kare koi 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کوئی اشارہ دلاسا نہ کوئی وعدہ مگر
جب آئی شام ترا انتظار کرنے لگے

Koi isharaa dilaasa na koi wada magar

Jab aai sham tera intezar krne lage

●○●○●○●○●○●○●○●○●

غضب کیا ترے وعدے پہ اعتبار کیا
تمام رات قیامت کا انتظار کیا

Gazzab kiya tere wade pe aitbaar kiya

Tamaam raat Qeyamat ka intezar kiya

●○●○●○●○●○●○●○●○●

‏کن لفظوں میں لکھوں میں تیرے انتظار کو
بے زبان عشق میرا ڈھونڈتا ہے خاموشی سے تجھے

Kin lafzon main likhu main tere intazar ko

Be zuban Ishq mera dhundta hai khamosh se tuje

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اس كی انتظار میں ہم نے گزار دی صدیاں
وہ آیا تو لبوں پہ شكایتیں لے كر

Uski inrazar main hmne guzaar di sadyaan

Wo aaya to laboon pe shikaytain le ke

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یہ انتظار سحر کا تھا یا تمہارا تھا
دیا جلایا بھی میں نے دیا بجھایا بھی

Ye intazar sehar ka tha ya tumara tha

diya jalaya bhi maine diya bhujaya bhi maine

●○●○●○●○●○●○●○●○●

تمہارے انتظار کی جستجو اور یہ اکیلا پن
تھک کر مسکرا دیتے ہیں جب رویا نہیں جاتا

tumare intazar ki justuju or ye akela pan

thak kar muskura dete hain jab roya nai jata

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اپنی عمر گنوا دی میں نے
اک تیرے انتظار میں

Apni Umr ganwa di ma nay

aik tairay Intazar ma 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کہتے ہیں لوگ موت سے بدترین ہے انتظار
اپنی تو ساری عمر کٹی انتظار میں

Kehtay Hn Log Maut sa Badtareen hn intzar

Apni tu sari Umar kati intzar ma

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ
اور ہم انتظار کریں مسلسل

Yani Tm Nzr Andaz kro Hmaesha

or Hm intzar kray Muslsl

●○●○●○●○●○●○●○●○●

انتظار ایک اذیت ہے

پھر چاہے ہاتھ میں موبائل پکڑے کسی کے مسیج کا ہو

چوکھٹ پر بیٹھے کسی کے لوٹ آنے کا ہو بستر پر لیٹ کر نیند کا ہو یا زندگی سے ہار کر موت کا ہو

intezar aik ezayt hay

phir chahay hath ma Mobile paray kisi kay message ka hoo

chokhat par bathay kisi kay lout anay ka ho

bistar par lait neend ka ho

ya zindagi say har kar moat ka ho

………………….

زخم اتنے گہرے ہیں اظہار کیا کریں

ہم خود بن گئے نشانہ وار کیا کریں

ہم مر گئے مگر کھلی رہی آنکھیں

اس سے زیادہ ہم اس کا انتظار کیا کریں



zakhm itnay gehray hain izhar kya karain

ham khud ban gay nishana war kya karain

ham mar gay magar khuli rahi ankhain

is say zayda ham is ka intezar kya karain

………………….

مجھے بھی سکھا دے یوں نظرانداز کرنے کا ہنر 

میں تھک گٸ ہوں ہر لمحہ ہر سانس تیرے انتظار میں

mujhay br sekha day youn nazar andaz karny ka hunar

ma thak gai hon har lambay har  sans taray intezar ma

 ………………….

تیرے آنے کی کیا امید 

مگر کیسے کہہ دو انتظار نہیں 

taray aany ki kya uneed

magar kasay keh don Intezar nahi

………………….

مڑ کر دیکھنے کی جرات وہی کرتا ہے 

جس کو یہ یقین ہو کہ پیچھے کوئی منتظر ہوگا

Murckar dakhny ki jurat wohi karta hay

jus ko ya yaqeen ho kay oeechyvkoi muntazir ho gaa

………………….

آنکھیں رہتی ہیں شام و سحر منتظر تیری

آنکھوں کو سونپ رکھا ہے انتظار تیرا

ankhain rehti hain shamo e sehar muntazir tari

ankhon ko sounp rakha hay intezar tera

………………….

ہم تڑپتے ہیں اس کی یادِ میں 

روتے ہیں فریاد میں 

اے خدا ایک بار اسے ملا دے 

کہیں ایسا نہ ہو ہم مر جائے اس کے انتظار میں 

Ham tarpatay hain us ki yad may

ritay hain faryad may

Aay Khuda

Ak bar usy mila day

kahi asa naa ho ham mar jain us kay intezar ma

………………….

انتظار کتنا جان لیوا ہوتا ہے 

کبھی خود کا واسطہ پڑے تو بتانا

Intezar kitna jan lewa hota hay

kabi khud ka wasta paray to batana

See also  Dua poetry in urdu

………………….

انتظار ایک ایسی چیز ہے کہ انسان خود کرے تو اسے برا لگتا ہے اور اگر کوئی اس کے لیے کرے تو اسے اچھا لگتا ہے

intezar ak aasi cheez hay kay insan khud karay to isy bura lagta hay

or

agar koi is kay leya karay to isay acha lagta hay

………………….

ﺍﺏ ﺗﻮ ﺩﯾﻤﮏ ﺑﮭﯽ ﮐﮭﺎ ﮐﺮ ﭼﮭﻮﮌ ﮔﺊ

ﺗﯿﺮﯼ ﺩﺳﺘﮏ ﮐﮯ ﻣﻨﺘﻈﺮ ﺩﺭﻭﺍﺯﻭﮞ ﮐﻮ

Ab to demak be khaa kar chor gaii

tari dastak kay mubtazir darwazon ko

………………….

مت ڈھونڈھ اندھیروں میں کچھ پائیگا نہیں

اس کا بھی کیا انتظار کرنا جو کبھی آئیگا ہی نہیں

mat dhond andhron ma kuch payga nahi

is ka be kya intezar karna jo kabi aayn gaa  he nahi

………………….

دوستی دو لوگ کرتے ہیں مگر 

انتظار کسی ایک کے حصے میں آتا ہے

dostii do log karty hain magar

intezar kusi aik kay hisay ma aata hay

………………….

انتظار کتنا جان لیوا ہوتا ہے 

کبھی خود کا واسطہ پڑے تو بتانا

intezar kitna jan lewa hota hay

kabi khud ka wasta paray to batana

………………….

کوئی کسی کا منتظر نہیں ہوتا 

ہم خود کو فقط بیوقوف بناتے ہیں

koi kisi ka muntazir nahi hota

ham khud ko faqt batwaqoof banatay hain

………………….

تیری محبت پر میرا حق تو نہیں

پر دل چاہتا ہے آخری سانس تک تیرا انتظار کروں 

tari muhabat par mera haq to nahi

par dill chahta hay aakhiri sans tak tera intezar karon

………………….

میں ہار گیا ستاروں سے انتظار میں 

وہ دن کا انتظار کرتے رہے میں تیرا

ma harr gaya sitaron say intezar ma

wo din ka intezar karty rahy ma tera

………………….

انتظار تو ہم تیرا ساری عمر کر لے گے

بس خدا کرے تو بے وفا نا نکلے

Intezar to ham tera sari umar kay lain gay

bass khuda karay tu baywafa na niklay

………………….

اس کا انتظار ہم نے کچھ یوں کیا 

کہ جب وہ آیا تو موت نے ہمارا انتظار کرنا چھوڑ دیا



Us ka intezar ham nay kuch yon keya

kay jab wo aya to moat nay hamara intezar karna chor deya

………………….

اس انتظار سے کیا گلا 

جو تیرے دیدار پہ ختم ہو

Is intezar say kya gilla

jo taray dedar pat khatam hoo

………………….

ساری زندگی تیرا انتظار کر لیں گے 

مگر یہ رنج رہے گا کہ زندگی کم ہے 

Sari zindagi tera intezar karvlain gay

magar ya rang rahy gaa kay zindagi kam hay

………………….

پیار کیا اگر کوئی میرے جتنا 

انتظار بھی کرے تو اس کے ہو جانا

Pyar keya agar koi mara jitna

intezar be karay to is kay ho jana

………………….

انتظار یار بھی لطف کمال ہے 

آنکھیں کتاب پر اور سوچیں جناب پر 

intezar yar be luft kamal hay

ankhain katab par ir sochain janab par

………………….

نه کسی کو دل دینا نہ کسی سے پیار کرنا 

میں ضرور لوٹ آوں گا صرف میرا انتظار کرنا

Na kisi ko dill dena na kisi say pyar karna

ma zaroor loat aayon gaa sirf mera intezar karna

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 

درد دیتا ہے اس کا کہـیں اور مصروف رہنا

intezar karna lakh muskil sahi

dard deya hay is ka kahi or masroof rehna

………………….

انتظار ہمیشہ رہے گا 

لیکن

آواز کبھی نہیں دوں گا

intezar hamasha rahy gaa

lakin

awaz kabi nahi don gaa

………………….

بس ایک شام کا ہر شام انتظار رہا 

مگر وہ شام کسی شام بھی نہیں آئی 

Bass ak sham ka har sham intezar raha

magar wo sham kisi sham be nahi aaie

………………….

شدید اتنا رہا تیرا انتظار مجھے 

کہ وقت منتیں کرتا رہا گزار مجھے

Shadeed itna raha tera intezar mujhy

kay waqt mintay karta raha guzara mujhay

………………….

انتظار تو ہم ساری عمر کر لیں گے تیرا 

بس خدا کرے کہ تو بیوفا نہ نکلے

intezar to ham sari umar kar lain gay tera

bass khuda karay tu baywafa naa nikaly

………………….

کاش تو بھی انتظار کرے میری طرح 

اور میں نہ آؤں تیری طرح

kash tu be intezar karay mari tarah

or ma na aayon tari tarah

………………….

برسوں بعد اس نے پوچھا کیا کرتے ہو 

میں نے کہا تمہارا لوٹ کر آنے کا انتظار

Barsoo bad is nay pocha kya karty ho

many kaha tumara loat kar aany ka intezar

………………….

کتنے نایاب ہوتے ہیں یہ محبتوں کے رشتے 

کوئی یاد نہ بھی کرے تو انتظار پھر بھی رہتا ہے 

See also  Eid sad poetry in poetry

Kitnay nayab hotay hain ya Mohabaton kay ristay

koi yad na b karay to intezar phir be rehta hay

………………….

اے رات چلی جا 

کیوں آئی ہے میری چوکٹ پر 

چھوڑ گئے وه لوگ جن کی یاد 

میں ہم تیرے آنے کا انتظار کرتے تھے

aay rat chali jaa

kuy aaie hay mari chokhat par

chor gay  wo log jin ki yad

may ham taray aany ka intezar karty thay

………………….

اپنی عمر گنوا دی میں نے 

اک تیرے انتظار میں

apni umar ghawa dii ma nay

ak taray intezar ma

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 



درد دیتا ہے اس کا کہی اور مصروف رہنا

intezar karna lakh muskil sahi

dard deta hay us ka kahi or masroof rehna

………………….

کہتے ہیں لوگ موت سے بدترین ہے انتظار

اپنی تو ساری عمر کٹی انتظار میں

kehtay hain log moat say battreen hay intezar

apni to sari umar katii intezar ma

………………….

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ

اور ہم انتظار کریں مسلسل

Zanii tum nazar andaz karo hamasha

or ham intezar karain musalsal

………………….

انتظار طویل ہو جائیں تو آنکھوں میں 

موجود رنگ پھیکے پڑنے لگتے ہیں

intezar taweel ho jayin to ankhon ma

majood rang pheekay parny lagtay hain

………………….

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو

intezar in ka keya jata hay

jis kay any ki koi uneed ho

………………….

میں نے رات ساری اس کی انتظار میں گزاری 

اور جب صبح وہ ملا تو سرخ آنکھوں کا سبب پوچھنے لگا

ma nay rat sari us ki intezar ma guzarii

or jab shuba wo mila to surkh ankhon ka sabab pochnay laga

………………….

اس نے ایک پل بھی رکنا گوارا نہیں کیا 

ہم ساری زندگی انتظار میں کھڑے رہے

is nay ak pal be rukna gawara nahi keya

ham sari zindagi intezar ma kharay rahy

………………….

آج وعدہ ہے اس کے آنے کا 

آج اٹکی ہے جان دستک پر

aj wada hay kisi kay any ka

aj atkaii hay jan dastak par

………………….

اے رات چلی جا 

کیوں آئی ہے میری چوکٹ پر 

چھوڑ گئے وه لوگ جن کی یاد 

میں ہم تیرے آنے کا انتظار کرتے تھے

aay rat chali jaa

kuy aaie hay mari chokhat par

chor gay  wo log jin ki yad

may ham taray aany ka intezar karty thay

………………….

اپنی عمر گنوا دی میں نے 

اک تیرے انتظار میں

apni unar ghawa di ma nay

ak taray intezar ma

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 

درد دیتا ہے اس کا کہی اور مصروف رہنا

Intezar karna lakh muskil sahi

dard deta hay is ka kahi or musroof rehna

………………….

کہتے ہیں لوگ موت سے بدترین ہے انتظار

اپنی تو ساری عمر کٹی انتظار میں

kehtay hain log moat say battreen hay Intezar

apni to sari umar katii intezar may

………………….

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ

اور ہم انتظار کریں مسلسل

zanii tum nazar andaz karo hamasha

or ham intezar karain musalsal

………………….

انتظار طویل ہو جائیں تو آنکھوں میں 

موجود رنگ پھیکے پڑنے لگتے ہیں



Intezar taweel ho jayin to ankhon ma

majood rang phekay parny lagtay hain

………………….

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو

intezar in ka keya jata hay

jis kay any ka koi umeed ho

………………….

میں نے رات ساری اس کی انتظار میں گزاری 

اور جب صبح وہ ملا تو سرخ آنکھوں کا سبب پوچھنے لگا

ma nay rat sari is ki intezar ma guzarii

or jab shubawo mila to surkh ankhon ka sabab pochnay laga

………………….

اس نے ایک پل بھی رکنا گوارا نہیں کیا 

ہم ساری زندگی انتظار میں کھڑے رہے

Us nay aik pal be rukna gawara nahi keya

ham sari zindagi Intezar ma kharay rahy

………………….

آج وعدہ ہے اس کے آنے کا 

آج اٹکی ہے جان دستک پر

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو



aj wada hay us kay aany ka

aj atkii hay jan dastak par

intezar in ka keya jata hay

jis kay aany ki koi umeed ho

………………….

صبر اور انتظار میں پتہ کیا فرق ہے 

صبر خود کیا جاتا ہے اور انتظار کوئی کروا رہا ہوتا ہے

Sabar or intezar may pata kya farq hay

sabar khud kya jata hay or intezar koi karwa raha hota hay

………………….