Latest Khubsurati poetry in urdu

زلفیں چاہے کتنی حسین کیوں نہ ہوں
دوپٹہ شخصیت کو چار چاند لگا دیتا ہے

Zulfain cahhe kitni haseen ki na ho.

Dupatta shakhsiyat ko chaar chand laga deta hai

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اس نے کہاں کافی نازک ہے ہاتھ تمھارے
میں بھی مسکرا تے ہوئے کہا نازک کلیاں ہی سب سے پہلے ٹوٹ کر بکھرتی ہیں

Isne kahan kafi nazuk hath hai tumarr

Main b muskuratte hud kaha nazuk kalyaa ho sab se pehle toot kar bikharti hain

●○●○●○●○●○●○●○●○●

بات تیری سنی نہیں میں نے
دھیان میرا ترے لبوں پہ تھا

baat teri suni nai maine

dheyan mra terea laboon pe tha

●○●○●○●○●○●○●○●○●

نشیلی آنکھیں دھیما لہجہ حسن تو قیامت
واللہ ہم تو فنا ہو جائیں گے خود کو دیکھتے دیکھتے

Nasheeli ankhain dhema lehja husan to qeyamat

WAllah hm to fanah ho jayain ge khd ko daikhte daikhte

●○●○●○●○●○●○●○●○●

زمین پر رہتی ہوں مگر آسمان جیسی ہوں
میں نرم دل کی لڑکی چٹان جیسی ہوں

Zamen par rehti hu magr asmaan jesi hu

Main naram dil ki larki chitaan jesi hu

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ہم نے قطرہ دیکھا نہ دریا پہ غور کیا
بس جہاں تیری جھلک نظر آئی وہیں ڈوب گئے

hmne qatra daikh na darya pe goor kiya 

Bs jahan teri jhalak nazar aai wahi doob gye 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اوڑھ لی خاموشی اب گفتگو نہیں کرنی
دل کو بند رکھنا ہے اب آرزو نہیں کرنی

Orh li khamoshi Ab guftugu nai karni

Dil ko band rakhna hai ab arzoo nahi karni

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ہاتھ اٹھ جائیں جو پورے تو قیامت آ جائے
حشر اٹھا رکھا ہے آدھی تیری انگڑائی نے

Hath uth jayain jo pure to qeyamat aajaye

Hashr utha rakha hai adhi teri nigha main

●○●○●○●○●○●○●○●○●

نہ جھٹکو زلف سے پانی موتی ٹوٹ جائیں گے
تمہارا تو کچھ نہ بگڑے گا ہمارا دل ٹوٹ جاۓ گا

Na jhatko zulf se paani mot toot jayain ge

Tumara to kxh na bigrr ga hmara dil toot jaaye ga 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اپنی نظر اتار لیجئے گا
ہر نظر ماشاءاللہ نہیں کہتی

Apni nazar utaar lijiye

Har nazr ma sha Allah nai kehti

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ادھر الجھی پڑی ہے زندگانی
ادھر زلفیں سنواری جا رہی ہیں

Idar ulji pari hai zindgaani

Udar zulfain sanwari ja rai hain

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یہ ادا یہ شوخیاں رخسار ولب کی سرخیاں
آئینہ شرما گیا تیرے سنور جانے کے بعد

Ye ada ye shokhiyan rulkhsar o lab ki surkhiyan

See also  Alvida poetry in urdu

Aaina shrma gya tere sanwar Jane k baad

●○●○●○●○●○●○●○●○●

وہ کہتی ہے میری آنکھوں میں دیکھو
میں نے کہا مجھے تیرنا نہیں آتا

Wo kehti hai meri ankhoon m daikho

Main ne kaha mje tairna nai aata

●○●○●○●○●○●○●○●○●

تیرا کنگن تیرا جھمکا اپنی جگہ
ہائے تیری یہ پائل توبہ توبہ

Tera kangan tera jhumka apni jaga

haye teri ye payel toba toba

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یوں تو پہلے بھی حور لگتی ہے
آج اس نے جھمکا بھی پہن رکھا ہے

Yu to  pehle bhi hoor lagti hai

aj isne jhumka bhi pehan rakha hai 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اس قدر کشش ہے تیری اداؤں میں ہم اگر تم ہوتے تو خود سے عشق کر لیتے ہیں

Is qadar kashish hai tri adaayon mai hm agr Tum hote to khd se ishq kat lete hain 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

شعلہ حسن سے جل جائے نہ چہرے کا نقاب
اپنے رخسار سے پردے کو ہٹائے رکھئے

Shola hussan se jal jaye na chehre  ka naqaab

Apne rulkhsar se chehre ko hataye rakhye

●○●○●○●○●○●○●○●○●

رخ پہ لہراتی ہیں کبھی شانوں سے الجھ پڑتی ہیں
تو نےزلفوں کو بہت سر پہ چڑھا رکھا ہے

Rukh pe lehrati hain kabi shanoo se ulaj parti hain

Tune  zulfoon ko bht sar charha rakha hai

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اوڑھ لی خاموشی اب گفتگو نہیں کرنی
دل کو بند رکھنا ہے اب آرزو نہیں کرنی 

Orh li khamoshi Ab guftugu nai karni 

Dil ko band rakhna hai ab arzoo nahi karni 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

چہرہ کیوں چھپاتے ہو نقابوں میں
ویسے بھی شمار ہو تم گلابوں میں

Chahra ku chupate ho naqaabon main

Wese bhi shumaar ho tm gulaabon main

●○●○●○●○●○●○●○●○●

قصہ یہ پڑھا ہے پرانی کتاب میں
حسن محفوظ رہتا ہے ہمیشہ حجاب میں

Qissa ye parha hai purani kitab main

Hussan mehfooz rehta hai hmesha hijaab main

●○●○●○●○●○●○●○●○●

گجرے کا بھی نشان پڑتا ہے

اتنی نازک ہے کلائی اس کی

Gajray ka bhi nishan parta hai

Itni nazuk hai kalai uski

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ﺩﺍﮌﮬﯽ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﺎ ﺣﺴﻦ ﺗﻢ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﻧﻮ
ﺗﻢ ﻧﮯ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮨﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺯﻟﯿﺨﺎ ﮐﺎ ﺗﮍﭘﻨﺎ

Darhi walo ka hussn tum kya jano

Tumne daiikha hi nahi zulekha ka tarapna

●○●○●○●○●○●○●○●○●

معصوم چہرہ آنکھوں میں شرارت
کیسے ممکن کوئی دیکھے اور فدا نہ ہو

Masom chehra ankhoon m shararat

Kese mumkin koi daikhe or fida na ho

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کون کہتا ہے سنورنے سے بڑھتی ہے خوبصورتی
دلوں میں چاہت ہو تو چہرے یوں ہی نکھر آتے ہیں
Kon kehta hai sanwarne ne barhti hai khubsurti
Dilo Maim chahat ho to chehre yu hi nikhar aate hain

See also  Tareef poetry in urdu

●○●○●○●○●○●○●○●○●

آئینے کو بھی حیرت میں ڈال دیتا ہے
کسی کسی کو خدا یہ کمال دیتا ہے
Ainay ko bhi Hairat mai daal deta hai
Ksi kisi ko khuda ye kamaal deta hai

●○●○●○●○●○●○●○●○

آج اس کی کھولی ہوئی زلفیں دیکھیں تو اندازہ ہوا
کہ چاند کالی گھٹاؤں میں کچھ زیادہ ہی خوبصورت
لگتا ہے
Aj uski khuli hui zulfain daikhi to andaza hua
K chand kaali ghataain main kxh zyada hi khubsurt lagta hai

●○●○●○●○●○●○●○●○●

سازوں میں بہترین ساز تیری ہنسی کا ہے
اور لفظ خوبصورت بھی تم ہی پہ جچتا ہے

Sazoon main behtareen saaz teri hansi ka hai

Or lafz khubsurt bhi tum pr hi jajta hai

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ہاتھ اٹھ جائیں جو پورے تو قیامت آ جائے
حشر اٹھا رکھا ہے آدھی تیری انگڑائی نے

Hath uth jaayain jo pure to Qeyamat aajaye

Hashar uthaa rakha hai teri angraai ne

●○●○●○●○●○●○●○●○●

میرے حسن کو پردے کی ضرورت ہی کیا ہے
کون رہتا ہے ہوش میں مجھے دیکھنے کے بعد

Mre hussan ko parde ki zororat hi kya hai 

Kon rehta hai hosh m mje daikhne k baad

●○●○●○●○●○●○●○●○●

گلاب جیسی ہو گلاب لگتی ہو
ہلکا سا بھی مسکراؤ تو لا جواب لگتی ہو

Gulab Jesi.ho gulaab lagti ho

halka sab bhi muskurao to la jawab lagti ho 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کیا تم نے دیکھا ہے چمکتا چاند؟
میں نے دیکھا ہے یہ منظر سیلفی لیتے ہوئے

Kyaa tumne daikha hai chamakta chand?

Maine daikh hai ye manzar selfie lete hue

‏●○●○●○●○●○●○●○●○●

‏مجھے دیکھو گے بھیڑ میں تو پہچان جاو گے
خُوش مزاج سا چہرہ بہت اُداس سی آنکھیں

Muje daikho ge bheer main to pehchaan jao ge

Khush mizaaj sa chehra bht udass hain ankhain 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اس میں خطرہ ہے ڈوب جانے کا۔
جھانکئے مت جناب آنکھوں میں۔

Is main khatra hai dooob Jane ka

Jhankiye mat janab ankhoon main

●○●○●○●○●○●○●○●○●

یہ میری ہی نشیلی____ آنکھیں ہیں
جس میں تو کاٹے گا قید یا محبت

Ye meri gain nasheeli…..ankhain hain 

Jis main tu kaatay ga qaid Ya muhabbat

●○●○●○●○●○●○●○●○●

نیند کو آج بھی شکوہ ہے میری آنکھوں سے
میں نے آنے نہ دیا کبھی اس کو تیری یاد سے پہلے

See also  Ishq Poetry in Urdu

Nend ko aj bhi shikwa hai meri ankhoon se

Maine aane na dia kabi isko teri yaad se pehle

●○●○●○●○●○●○●○●○●

قیامت خیز ہیں تمہاری آنکھیں
تم آخر خواب کس کے دیکھتے ہو

Qeyamat khez hain ankhain tumari

Tum akhir khuab kis ke daikhte ho

●○●○●○●○●○●○●○●○●

جس دن تیرے نگر سے کُوچ کریں گے
ہر اشکبار آنکھ میں برساتیں ہوں گی

jis din tere nagar se kooch krain ge

hr ashkbaar aankh main barsaatain hoon gi

●○●○●○●○●○●○●○●○●

‏مجھے دیکھو گے بھیڑ میں تو پہچان جاو گے
خُوش مزاج سا چہرہ بہت اُداس سی آنکھیں

muje daikho ge bheer main to pehchaan jao ge

Khush mizaaj sa chehra bht udas si ankhain

●○●○●○●○●○●○●○●○●

تیرے حسن وجمال کی مثال کیا دوں
اگر دیکھنا ہو تو آ کر میرا تڑپنا دیکھ لے

Tere husnoo jamaal ki misaal kya du

Agar daikhna ho to aa kr mera tarapna  daikh le

●○●○●○●○●○●○●○●○●

ہم مردوں کی حسن و جمال کی کیا مثال دیں تم نے دیکھا نہیں زلیخا کا تڑپنا

Hm mardoon ki husn o jimal ki kya misaal dain tum ne daikh nahi zulaikha ka tarapna

●○●○●○●○●○●○●○●○●

کلیوں کا رس نچوڑ کے بھر لوں کوئی دوات
پھر حسن بے مثال کی اک اک ادا لکھوں

Kalyoon ka rus Nichor kar bhar lu koi dawaat

Phr husn e misaal ki.ik ik ada likhu

●○●○●○●○●○●○●○●○●

نہ جھٹکو زلف سے پانی موتی ٹوٹ جائیں گے
تمہارا تو کچھ نہ بگڑے گا ہمارا دل ٹوٹ جاۓ گا

Na jhatko zulf se paani moti toot jaayain ge 

Tumara to kuch na bigre ga hmara dil toot jaaye ga

●○●○●○●○●○●○●○●○●

نغمۂ عشرت پر رقص کرتی ہیں کلیاں
کہ گلستاں میں لگتی ہے وہ گلاب جیسی

Nagma e ishrat par raqs karti hain kalyaan

Ke gulsitaan main lagti hai wo gulaab jesi 

●○●○●○●○●○●○●○●○●

اس کے چہرے کی چمک کے سامنے سادہ لگا
آسماں پہ چاند پورا تھا مگر آدھا لگا

Uske chehre ki chamal ke samne saada laga

Aasman pe chaand puraa tha magar adha tha

●○●○●○●○●○●○●○●○●

‏جان لیوا تھا اس کا سانولہ رنگ
اور ہم کڑک چاۓ کے شوقین بھی تھے

Jaan lewa tha uska sanwla rang

Or hum karak chaye ke shoqeen bhi the

●○●○●○●○●○●○●○●○●

تیرا کنگن تیرا جھمکا اپنی جگہ
ہائے تیری یہ پائل توبہ توبہ

Tera kanghan tera jhumka apni jaga

Haye teri te paayel toba toba

●○●○●○●○●○●○●○●○●