Zamana Poetry in Urdu

حادثے سے بڑھ کر سانحہ یہ ہوا

کوئی رکا ہی نہیں حادثہ دیکھ کر

Hadsay say bhar kay sanha ya hoa

Koi ruka hi nae nae hadsah deakh kar

💔💔💔

○●○●○●○●○●○●○●

ﻋﻤﺮ ﺑﮭﺮ ﮐﺎﻧﭩﮯ ﺍﭨﮭﺎﺋﮯ ﺟﻦ ﮐﯽ ﺭﺍﮨﻮﮞ ﺳﮯ

ﺁﮒ ﺩﮮ ﮐﺮ ﺁﺷﯿﺎﮞ ﮐﻮ ﻭﮦ ﮨﻮﺍ ﺩﯾﺘﮯ ﺭﮨﮯ

Omar bhar kanaty otya jin ki rahon say

Agg day kar asheyan ko wo hawa deaty rahy

○●○●○●○●○●○●○●

آج کل کی یاری ٹشو سے کم نہیں

لوگ استعمال کر کے چھوڑ دیتے ہیں




Ajj kal ki yari tissue say kam nae

Loag istimat kar kay chore daty han

○●○●○●○●○●○●○●

اک دن بھی نبھا نہ پائیں گے میرا کردار

وہ لوگ جو مجھے مشورے ہزار دیتے ہیں

Ik din bhi nibha na payian gay mera qirdar

Wo laog jo muja mashwaray hazar dety hn

○●○●○●○●○●○●○●

ذات دیکھ کر شادی کرنے والے 

خون کی بوتل کسی سے بھی لے لیتے ہیں

Zaat deakh kar shadi karny walay

Khoon ki botel kizi say bhi lay letay hn

🔥🔥🔥

○●○●○●○●○●○●○●

سب تعلق ہیں ضرورت کے یہاں پر 

نہ کوئی دوست نہ اپنا نہ سہارا کوئی .

Sab taluq han zarort kay yahan

Na koi dost na apna na sahara koi

○●○●○●○●○●○●○●

‏پہلے کسی بات کو ثابت کرنے کے لیے لوگ قسم اٹھاتے تھے 

اب اسکرین شاٹ دکھا دیتے ہیں

Phalay kisi bat ko sabit karany kay liya loag qasam othaty thy

Ab screen shot dekha detay hn

○●○●○●○●○●○●○●

جب ضروت بدلتی ہے تو 

لوگوں کا لہجہ بدل جاتا ہے 

Jab zarort badalti ha to

Logon k lahja badal jaata ha

○●○●○●○●○●○●○●

خوب واقف ہوں میں اس دنیا کی فطرت سے

بہت اچھے ہیں لوگ مگر ضرورت کی حد تک




Khoob waqif hin ma is dunia ki fitrat say

Buht achay han loag mager zarort ki had tak

○●○●○●○●○●○●○●

عجیب قحط مسیحائی ہے کہ اب تو یہاں

 اپنے بھی اپنوں کو چھو لیں تو مر جائیں گے

Ajeeb faqat mesihayi ha kay ab to yahann

Apnay bhi apno ko choo layin to marr jayin gy

○●○●○●○●○●○●○●

پہلے بنتے ہیں موت کا باعث

لوگ پھر برسیاں مناتے ہیں

Phlay bnaty hn moat ka bayis

Loag phir barsiyan manaty hn jo

○●○●○●○●○●○●○●

میں نے پوری زندگی میں ایک بات سیکھی ہے 




مطلب کی دنیا ہے کوئی نہیں کسی کا

Ma nay pori zindagi ma ak bat seekhi ha

Matlab ki duniya ha koi nae ksi ka

○●○●○●○●○●○●○●

بھری ہوئی جیب سے دنیا کا پتہ چلتا ہے 




اور خالی جیب سے اپنوں کا

Bhari hoi jaib say dunia ka pata chlata ha

Or khali jaib say apano ka

○●○●○●○●○●○●○●

زمانه نہیں بدلتا 

مگر لوگ بدل جاتے ہیں 

ہر ایک برا نہیں ہوتا 

ہم خود برا سمجھتے ہیں

سوچیں بدلو گے تو خوش رھو گے

Zamanah nae badalta mager laog badal jatay hn

Har ak bura nae hota

Hum khud bura smajty hn

Sochyin badlo gay to khush raho gy

○●○●○●○●○●○●○●

آپ کو لوگوں سے اس وقت بہت کچھ سیکھنے کو ملے گا

جب آپ ان کو وه نہیں دیں پائیں گے جس کی وه آپ سے توقع رکھتے ہیں

Ap ko logon say buht kuch seekhy ko milay ga

Jab ap in ko nae day payain gay

Jis ki wo ap say tawaqa rakahty hn

○●○●○●○●○●○●○●

ہر انسان اپنا عروج اور دوسرے کا زوال دیکھنا چاہتا ہے

Har insan apna arooj or dosron ka zawal dekhana chata ha

○●○●○●○●○●○●○●

ہر شخص کو آپ کی ضرورت ہے اپنی ضرورت تک

Har shakahs ko zarort ha apni zarort tak

See also  WhatsApp status in urdu

○●○●○●○●○●○●○●

چار بیویوں پہ راضی لوگ 

چار بیٹیاں ہونے پہ رونے لگتے ہیں

تلخ حقیقت

Char biviyon pay razi log

Char betiyan hony pay ronay lagty hn

○●○●○●○●○●○●○●

لوگوں کو مل رہے ہیں شریکِ حیات 

المختصر ہمیں مل رہے ہیں لوگ واحیات

Logon ko mill rahay hn sharek hayat

Almukhtasir humay mill rahay han loag wahyat

○●○●○●○●○●○●○●

پہلے بنتے ہیں موت کا باعث

لوگ پھر برسیاں مناتے ہیں

Phlay bnaty hn moat ka bayis

Loag phir barsiyan manaty hn jo

●○●○●○●○●○●○●

میں نے پوری زندگی میں ایک بات سیکھی ہے 

مطلب کی دنیا ہے کوئی نہیں کسی کا

Many pori zindagi ma ak bat seekhi ha

Matlab ki dunia ha koi nae kisi ka

○●○●○●○●○●○●○●

بھری ہوئی جیب سے دنیا کا پتہ چلتا ہے 

اور خالی جیب سے اپنوں کا

Bhari hoi jaib say dunia ka pata chalta ha

Or khali jaib say apno ka

○●○●○●○●○●○●○●

زمانه نہیں بدلتا 

مگر لوگ بدل جاتے ہیں 

ہر ایک برا نہیں ہوتا 

ہم خود برا سمجھتے ہیں

سوچیں بدلو گے تو خوش رھو گے

Zamana nae badalta

Mager loag badal jatay hn

Har ak bura nae hota

Hum khud bura samjaty hn

Sochyain badlo gay to khush raho gay

○●○●○●○●○●○●○●

آپ کو لوگوں سے اس وقت بہت کچھ سیکھنے کو ملے گا

جب آپ ان کو وه نہیں دیں پائیں گے جس کی وه آپ سے توقع رکھتے ہیں

Ap ko logon say buht kuch seekhy ko milay ga

Jab ap in ko nae day payain gay

Jis ki wo ap say tawaqa rakahty hn

●○●○●○●○●○●○●

ہر انسان اپنا عروج اور دوسرے کا زوال دیکھنا چاہتا ہے

Har insan apna arooj or dosron ka zawal dekhana chata ha

●○●○●○●○●○●○●

جو کچھ نہیں کر سکتے 

وہ حسد کرتے ہیں 

Jo kuch nae kar sakaty wo

Hasad karatay hn

○●○●○●○●○●○●○●

 راستے اپنی تباہی کے نکالے ہم نے

آستینوں میں سانپ ہیں پالے ہم نے

Rastay pani tabahi kay nikalay hum. Nay

Astino ma sanp han palay hum nay

○●○●○●○●○●○●○●

وہ چاہتا ہے مہینہ کٹے نہ جلدی سے

کرایہ دار کے دکھ بھی عجیب ہوتے ہیں

Wo chata h mahina katay na jaldi say

Karaya daar kay dhook bhi ajeeb hoty hn

○●○●○●○●○●○●○●

ایسے دیتی ہے محبت میں اذیت دنیا 

جیسے ململ کو کوئی کانٹوں پہ رکھ کر کھینچے

Asay deti ha muhabat ma aziyat duniya

Jesay malmal ko koi kanto pay rakh kar khanchay

○●○●○●○●○●○●○●

ﭼﺎﮨﺘﻮﮞ ﮐﺎ ﻣﺎﻥ ﮐﻮﻥ ﺭﮐﮭﺘﺎ ﮨﮯ

ﺿﺮﻭﺭﺕ ﮐﮯ ﻣﺎﺭﮮ ﮨﯿﮟ ﻟﻮﮒ

Chahaton ka maab kon rahta ha

Zarort kay maray hn loag

○●○●○●○●○●○●○●

مجھے ان اندھوں پر بہت ترس آتا ہے 

جنھیں اپنی غلطی نظر نہیں آتی 




Muja in andho pay buht taras ata ha

Jinhayin apni galti nazar nae ati

○●○●○●○●○●○●○●

ستم زمانے کے ہم کو نہ دے سکیں گے شکست

ہم ایسے لوگ ہیں جو مسکرا کہ جیتے ہیں

Sitam zamany kay hum ko na day sakayin gay sekasaht

Hum asay loag han jo muskara kay jeetay hn

○●○●○●○●○●○●○●

کہاں ملتا ہے کوئی سمجھنے والا

جو بھی ملتا ہے سمجھا کے چلا جاتا ہے

Kahan milta ha koi samajny wala

Jo bhi milta ha samjah ky chala jata ha

○●○●○●○●○●○●○●

کیا کوئی یہ بتا سکتا ہے؟

یہ جو اپنے ہوتے ہیں 

یہ اپنے کیوں نہیں ہوتے 

Kiya koi ya bata sakta ha

Jo apnay hotay han

Ya apnay kun nae hoty

○●○●○●○●○●○●○●

رشتے تب مضبوط ہوتے ہیں جب آپ کے مالی حالات مضبوط ہوں

Rishtya tab mazboot hoty hn jab apkay mali halat mazboot hon

See also  Zukhm Poetry in Urdu

○●○●○●○●○●○●○●

تم جو کہتے ہو دیکھ لی دنیا تم نے

کبھی دیکھا ہے ہنستے ہوئے مجھے

Tum jo khaty ho deakh li dunia tum nay

Kbahi dekha ha humnsaty hoya muja

○●○●○●○●○●○●○●

اگر آپ حادثاتی طور پر کسی سے دو چار کتابیں زیادہ پڑھ گئے ہیں تو ہضم کرنے کی کوشش کریں دوسروں کا جینا حرام نہ کریں

Ager ap hadsati tor par kisi sy do char kitabayin zayda parh gaya hn to hazam karany ki koses karin dosron ka jeena haram na karin

○●○●○●○●○●○●○●

چھوٹے آدمی شخصیات پر بحث کرتے ہیں

 اوسط آدمی واقعات پر

اور اعلی آدمی نظریات پر

Chotay admi shaksiyat par bahas karaty hn

Osat admi waqiyat par

Or asay admi nazriyat par

○●○●○●○●○●○●○●

ضمیر بیچنے والوں نے خوب کام کیا 

جسے عروج پر دیکھا اسے سلام کیا

Zameer bachanay walon nay khoob kam kiya

Jesay arooj par dekha isy salam kiya

○●○●○●○●○●○●○●

وہ بھی کیا دن تھے؟جب کیڑا صرف لوگوں کے 

دانتوں میں ہوا کرتا تھا

Wo bhi din thy jab. Keera sirf logon kay danton ma hoa karta tha

○●○●○●○●○●○●○●

الفاظ کی تلخیاں میری وضاحتوں کے قابل نہیں

میرے سکوت کا تھپڑ کافی ہیں ہر گستاخ لہجے کے لیے

Ilfaz ki talkhiyan mari wazahaton kay qabhil nae

Meray sakoot ka thapar kafi han har ghusthak lahjay kay liya

○●○●○●○●○●○●○●

دریا تھک گیا پانی لیے لیے

لوگوں نے نیکیاں موبائل میں ڈال دیں

Darya thaq gaya pani kay liya

Logon nay nakiyan mobile ma daal din

○●○●○●○●○●○●○●

امن کے ساتھ سوکھی روٹی خوف کے شہر سے بہتر ہے 

خیمہ جس میں پردہ ہو فتنہ والے محل سے اچھا اور بہتر ہے

Aman kay shat sookhi roti khoaf kay shahar say bhatter ha

Khemah jis ma pardah ho fitna wala mahala say acha or bahter ha

 

○●○●○●○●○●○●○●

زندگی کی الجھنوں نے اتنا سبق سکھا دیا دنیا کے سامنے رو گے تو دنیا ہنسے گی رب کے سامنے رو گے وہی دنیا آپ کی کامیابی پہ روئے گی

Zindagi ki oljahno ny itna dabeq dekha dia

Dinaya ky smany ro gay to dunia humsay gi rab ky smany ro gay

Wohi dunia ap ki kamyabi pay roya gi

●○●○●○●○●○●○●○●

ظلم جب حد سے بڑھتا ہے تو ہمت آ ہی جاتی ہے

پلٹ کر باز سے چڑیا کو ہم نے لڑتے دیکھا ہے 

Zulam. Jab had say bharhata h to himat a hi jati ha

Palat kar baaz say chiriya ko hum. Nay lartay dekha ha

○●○●○●○●○●○●○●

زندگی میں سب لوگ دوست یا رشتہ دار بن کر نہیں آتے 

کچھ لوگ سبق بن کر بھی آتے ہیں  

zindagi ma sab laog dost ya rishata dar ban kar nae

Atay

Kuch log sabaq ban kar atay hn

●○●○●○●○●○●○●

سب ایک جیسے ہوتے ہیں

بس ان کے ڈسنے کے طریقے مختلف ہوتے ہیں




Sab ak jesay hoty h. Bus in kay dasnay kay tareeqay muhktalif hoty hn●○●○●○●○●○●○●

اوقات بہت چھوٹی تھی لیکن سپنے بہت بڑے تھے 

پیچھے مڑ کر دیکھا تو میرے اپنے دشمن بنے کھڑے تھے

Oqat bhht choti thi lakin supnay buht baray thy

Pechay murr kr dekha ti meray apny dushman banay kharay thy

●○●○●○●○●○●○●

بابا کے کندھے پر چڑھ کر جیسی نظر آتی ہے

ویسی نہیں ہے دنیا

Baba ky knadhay par char kar jesai nazar ati ha

Wasi nae ha dunia

●○●○●○●○●○●○●

‏بعض اوقات زندگی میں خیر خواہ لوگ کم

اور خواہ مخواہ لوگ زیادہ ہوتے ہیں

Baz oqat zindagi ma khair khawah log km

Or kham ma khawa log zayda hoty hn

See also  Life poetry in urdu

●○●○●○●○●○●○●

تم پہ لازم ہے تم اس وقت ہنسنا سیکھو 

جب تمام لوگ تم سے رونے کی امید لگائے بیٹھے ہوں

Tum par lazim ha tum is waqat humsana seekho

Jab tamam log tum say ronay ki omeed lagaya betahy hon

●○●○●○●○●○●○●

●○●○●○●○●○●○●

اس وہم سے کہ نیند میں آئے نہ کچھ خلل

احباب زیر خاک سلا کر چلے گئے

Is waham say kay neend ma aya na kuch khalal

Ehbab zare khak sula kar chaly gaya

●○●○●○●○●○●○●

داماد اچھا ہے کیونکہ وہ بیٹی کو خوش رکھتا ہے اور بیٹا برا ہے کیونکہ وہ بہو کا خیال کرتا ہے یہ ہے دوہرے سماج کا کڑوا سچ

Damad acha ha kun kay wo bati ko khush rakhta ha

Or beta bura ha kun kay wo baho ka khayal karta ha

Ya ha dhoray samaj ka karwa such

○●○●○●○●○●○●○●

زندگی کی الجھنوں نے اتنا سبق سکھا دیا دنیا کے سامنے رو گے تو دنیا ہنسے گی رب کے سامنے رو گے وہی دنیا آپ کی کامیابی پہ روئے گی

Zindagi ki oljahno ny itna dabeq dekha dia

Dinaya ky smany ro gay to dunia humsay gi rab ky smany ro gay

Wohi dunia ap ki kamyabi pay roya gi

●○●○●○●○●○●○●

ظلم جب حد سے بڑھتا ہے تو ہمت آ ہی جاتی ہے

پلٹ کر باز سے چڑیا کو ہم نے لڑتے دیکھا ہے 

Xulam jb had say bharhata ha ti himat a hi jati ha

Palat kar baaz say chiriya ko hum ny lartay dekha ha

●○●○●○●○●○●○●

زندگی میں سب لوگ دوست یا رشتہ دار بن کر نہیں آتے 

کچھ لوگ سبق بن کر بھی آتے ہیں

zindagi ma sab laog dost ya rishata dar ban kar nae

Atay

Kuch log sabaq ban kar atay hn

○●○●○●○●○●○●○●

سب ایک جیسے ہوتے ہیں

بس ان کے ڈسنے کے طریقے مختلف ہوتے ہیں

Sab ak jesay hoty h. Bus in kay dasnay kay tareeqay muhktalif hoty hn

○●○●○●○●○●○●○●

اوقات بہت چھوٹی تھی لیکن سپنے بہت بڑے تھے 

پیچھے مڑ کر دیکھا تو میرے اپنے دشمن بنے کھڑے تھے

Oqat bhht choti thi lakin supnay buht baray thy

Pechay murr kr dekha ti meray apny dushman banay kharay thy

○●○●○●○●○●○●○●

ظلم جب حد سے بڑھتا ہے تو ہمت آ ہی جاتی ہے

پلٹ کر باز سے چڑیا کو ہم نے لڑتے دیکھا ہے 

Xulam jb had say bharhata ha ti himat a hi jati ha

Palat kar baaz say chiriya ko hum ny lartay dekha ha

○●○●○●○●○●○●○●

بابا کے کندھے پر چڑھ کر جیسی نظر آتی ہے

ویسی نہیں ہے دنیا

Baba ky knadhay par char kar jesai nazar ati ha

Wasi nae ha dunia

○●○●○●○●○●○●○●

‏بعض اوقات زندگی میں خیر خواہ لوگ کم

اور خواہ مخواہ لوگ زیادہ ہوتے ہیں

Baz oqat zindagi ma khair khawah log km

Or kham ma khawa log zayda hoty hn

○●○●○●○●○●○●○●

تم پہ لازم ہے تم اس وقت ہنسنا سیکھو 

جب تمام لوگ تم سے رونے کی امید لگائے بیٹھے ہوں.

Tum par lazim ha tum is waqat humsana seekho

Jab tamam log tum say ronay ki omeed lagaya betahy hon

○●○●○●○●○●○●○●

اس وہم سے کہ نیند میں آئے نہ کچھ خلل

احباب زیر خاک سلا کر چلے گئے




Is waham say kay neend ma aya na kuch khalal

Ehbab zare khak sula kar chaly gaya

○●○●○●○●○●○●○●

Leave a Comment