Paisa Poetry in Urdu

زندگی میں پیسہ نمک کی طرح ہوتا ہے 

اگر زیادہ ہو جائے تو ذائقہ بگاڑ دیتا ہے 

Zindagi mai paissa namak ki tarha hota hai

Ager zayda ho jaya to zaiqa bekar deta ha

🔥🔥🔥

○●○●○●○●○●○●○●

جیب بھاری ہو تو دشمن بھی خطائیں معاف کر دیتے ہیں

اور ہاتھ خالی ہو تو سگے بہن بھی سلام نہیں کرتے 

Jaib bhari ho to dushman bhi khatayin maaff kar detay hain 

Or hat khali ho to sagay behan bhai bhi salam nae karty

○●○●○●○●○●○●○●

جیب خالی ہو تو دانائی کا اظہار نہ کر

ایسی باتوں کا بڑے لوگ برا مانتے ہیں




Jaib khali ho to danayi ka izhar na karna

Asi bataon ka baray loag bura mantay hain

○●○●○●○●○●○●○●

اس غریبی سے پناہ مانگو جو مایوس کر دیتی ہے 

اس مال سے پناہ مانگو جو مغرور کر دیتا ہے

Asi gareebi say pana mango jo mayoos kar deti ha

Is maal say panah mango jo magror kar deti ha🙏🙏🙏🙏

○●○●○●○●○●○●○●

بندا کتنا بھی امیر کیوں نہ ہو 

وہ کبھی بھی گزرے ہوۓ وقت کو نہیں خرید سکتا

Banda kitna b ameer kun na ho wo kbhi bhi guzray hoya waqat ko khareed nae skata

🤑🤑🤑🤑🤬

○●○●○●○●○●○●○●

دنیا میں پیسے سے ہر شے خریدی جا سکتی ہے مگر تین چیزے نہیں خریدی جا سکتی وہ ہے زندگی صحت اور خوشیاں 

Dunia ma pasay say har shay khareedi ja skati ha mager

Teen cheezyin nae khareedi ja sakti wo ha zindagi sahat or khusiyan

○●○●○●○●○●○●○●

دولت ہو تو پردیس میں بھی دیس ہے 

اور غربت ہو تو دیس میں بھی پردیس ہے

غربت انسان کو اپنے ہی شہر میں اجنبی بنا دیتی ہے

Dolar ho to pardais ma b pardais ha

Or gurbat ho to pardais ma bhi pardais h

Gurbat insan ko apnay hi sahar mai ajnabi bana deti ha

○●○●○●○●○●○●○●

غربت انسان کو اپنے ہی شہر میں انجان بنا دیتی ہے

Gurbat insan ko apnay hi sahar mai ajnabi bana deti ha

○●○●○●○●○●○●○●

انسان بهی کتنا خودغرض ہے

پیسہ کمانا جانتا ہے پر رشتے نبھانا نہیں جانتا

Insan b kitna  khud garaz hai

Paisa kamana janta hai ristahy nibhana nae janta

○●○●○●○●○●○●○●

پیسہ وہ واحد چیز ہے جو کسی بھی صورت میں اپنی قدر نہیں کھوتا

Paisa wo Wahid cheez ha jo kisi b surt ma apni qader nae khota

○●○●○●○●○●○●○●

لوگوں کے محل دیکھ کر اپنے آپ کو غریب مت سمجھو

کیونکہ 

امیر اور غریب کی قبر ایک جیسی ہوتی ہے

Logon kay mahal deakh kar apnay ap ko gareeb mat samjo

Kun kay

Ameer or gareeb ki qaber aik jesi hoti hai

○●○●○●○●○●○●○●

دل کا امیر انسان دولت سے غریب نہیں ہو سکتا 

جبکہ دولت کا امیر انسان دل سے غریب ہوسکتا ہے

Dill ka ameee insan folat say gareeb nae ho sakta

Jabkay dolat ka ameer insan dill say gareeb ho sakta hai

○●○●○●○●○●○●○●

امیر کی بیٹی کا شادی کا سوٹ جتنے پیسوں کا ہوتا ہے اس سے آدھے سے بھی کم پیسوں میں غریب کی بیٹی کی شادی ہو جاتی ہے.

Ameer ki bati ka shadi ka soot jitnay pason ka hota hai us say adhay passon ma gareeb ki beti ki shadi ho jati ha

○●○●○●○●○●○●○●

کمائی چھوٹی یا بڑی ہو سکتی ہے 

مگر روٹی کا سائز لگ بھگ سبھی گھروں میں ایک جیسا ہی ہوتا ہے

Kamayi choti ya bari ho sakti hai

Mager roti ka saiz lag bhag sabhi gaharon mai ak jesa hi hota ha

●○●○●○●○●○●○●

بننا ہے تو دین دار بنو 

مالدار تو فرعون بھی تھا

Banta hi to deen dar bano

Maldar to firyon bhi tha

○●○●○●○●○●○●○●

جہیز کے فتنے دب جائینگے ایک دن

یا رب کسی غریب کی بیٹی جواں نہ ہو

Jahaiz kay fitany daab jayin gayin ak din

Ya rab kisi gareeb ki bati jawan na ho

○●○●○●○●○●○●○●

کڑی دھوپ میں جلتا ہوں اس یقیں سے 

میں جلوں گا تو میرے گھر میں اجالے ہوں گے




Kaarri dhoop ma jalta hon is yaqeen say

Mai jalon gaa to meray ghar mai ojalay hon gay

○●○●○●○●○●○●○●

گندم امیر شہر کی ہوتی رہی خراب

بیٹی مگر غریب کی فاقوں سے مرگئی

Gandum ameer shahar ki hoti rahi kharab beti gareeb ki faqon say maar gayi

○●○●○●○●○●○●○●

رزق صرف یہ نہیں کہ تمهیں کهانا ملے 

بلکہ اچهی نوکری اچهے ماں باپ اچهی اولاد بهی بہترین رزق ہیں

Rizq sirf ya nae kay tumhay khana

milay balkay achi nokri achay maa

baap achi olad bhi bhatareen rizq hain

○●○●○●○●○●○●○●

پیسہ چیز ہی ایسی ہے 

بڑے بڑے رشتے اور تعلق بھلا دیتا ہے .

Paisa cheez hi asi ha

Baray baray risthay or taluq bhula deta hai

○●○●○●○●○●○●○●

‏غریب بندہ روٹی کے پیچھے بھاگتا ہے 

اور امیر بندہ روٹی ہضم کرنے کے لیے بھاگتا ہے

Gareeb banda roti kay pachay bhagta hai

Or ameer banda roti hazam karany kay liya bhagta ha

○●○●○●○●○●○●○●

آداب اور اخلاق خریدے نہیں جاتے

دولت سے گفتگو کا سلیقہ نہیں آتا

Adab or ikhlaq khareeday nae jatay

Dolat sy goftago ka saliqa nae ata

○●○●○●○●○●○●○●

دیکھی جو گھر کی غربت تو چپکے سے مر گئی 

ایک بیٹی اپنے باپ پہ احسان کر گئی

Dekhi jo ghar ki gurbat to chupkau say maar gayi

Ak beti apnay baap pay ehsan kar gayi

○●○●○●○●○●○●○●

میں نے بہت سے جھونپڑے والوں کو سکون سے سوتے دیکھا ہے 

میں نے بہت بڑے محل والوں کو بے سکون ہوتے دیکھا ہے

Mai nay buht jhonparay walon ko sakoon say sotay dekha hai

Ma ny buht baray mahal walon ko bay sakoon hoty dekha ha

○●○●○●○●○●○●○●

بخیل آدمی کی دولت اس وقت باہر آتی ہے 

جب وہ خود زمین کے اندر جاتا ہے

Bakheel admi ki dolat is waqat bahir ati ha jab wo khud zameen kay under jata hai

○●○●○●○●○●○●○●

ایسی غربت پر صبر کرنا

جس میں عزت محفوظ ہو

ایسی امیری سے بہتر ہے

جس میں ذلت اور رسوائی ہو

Asi gurbat par saber karana

jis mai izzat mahfi ho

Asi ameeri say bhatter ha

jis ma zilat o ruswayi ho

○●○●○●○●○●○●○●

‏بھوک پھرتی ہے میرے شہر میں ننگے پاٶں 

‏رزق ظالم کی تجوری میں چھپا بیٹھا ہے

Bhook phirti hai meray shahr mai nangay payaon rizq zalim ki tajori mai chopya betha hai

○●○●○●○●○●○●○●

کبھی کسی غریب کی ہنسی مت چھینئے 

اک زمانہ لگتا ہے ان کو مسکرانے میں

Kabhi kiisi gareeb ki hunsi maat cheniya

Ik zamana lagta hai in ko muskarany mai

○●○●○●○●○●○●○●

پیسہ پاس ہے تو انسان عقل مند اور خوبصورت دونوں ہو جاتا ہے 

Passah pass hai to insan aqaal maand or khubsurt dono ho jata hai ○●○●○●○●○●○●○●

تلاش رزق میں یہ شام اس طرح گزر گئی 

کوئی ہے اپنا منتظر خیال ہی نہیں رہا




Talash rizq mai ya sham is tarha guzar gayi

Koi ha apna muntazir khayal hi nae raha

○●○●○●○●○●○●○●

امیر آدمی غصہ کرتا ہے تو لوگ کہتے ہیں صاحب کا بی پی ہائی ہو گیا ہے 

جب غریب آدمی غصہ کرتا ہے تو لوگ کہتے ہیں اس کا دماغ خراب ہو گیا ہے 

Ameer admi gussa karta hai to loag khaty hn sahib ka bp high ho Gaya hai

Jab gareeb admi gussa karta hai to loag khaty hin is ka damag kharb ho gaya hai

○●○●○●○●○●○●○●

خاندانی اڑان میں آواز نہیں ہوتی 




تجھے دیکھ کے لگتا ہے یہ دولت نئی نئی ہے

Khandani oraan mai awaz nae hoti

Tujay deakh kay lagta hai ya dolat nai nai hai

○●○●○●○●○●○●○●

جب آپ کے پاس دولت ہو تو تکبر مت کرنا 

دولت تو ایک نہ ایک دن چلی جائگی مگر آپ کا رویہ یاد رہ جائگا

Jab ap kay pass dolat ho to taqabur mat karna

Dolat to aik na aik din chali jaya gi mager ap ka rawayia yad rah jaya ga

○●○●○●○●○●○●○●

‏غریب کی پینٹ پھٹی ہوئی ہو تو

غربت

امیر کی پینٹ پھٹ جائے تو فیشن




یہ کہاں کا انصاف ہے؟

Gareeb ki paint phati hoi ho to

Gurbat

Ameer ki paint phat jaya to fashion

Ya kahan ka insaff ha

○●○●○●○●○●○●○●

کسی غریب کو تنگ مت کرنا

تیری طاقت پیسہ ہے

اس کی طاقت اللّٰه ہے

Kisi gareeb ko tang mat karna

Tari taqat passah hai

Is ki taqat Allah hai

○●○●○●○●○●○●○●

اللہ سے اتنا ہی پیسہ مانگنۓ جتنے کی تمہیں ضرورت ہو کیونکہ اوقات سے زیادہ پیسہ بھی انسان کو گھمنڈ میں مبتلا کر دیتا ہے 

Allah say itna passah mango jitnay ki tumhay zarort ho kun kay oqar say zayda pasah bhi insan ko ghamand mai mubtalah kar deta ha

○●○●○●○●○●○●○●

شاعری لکھ رہا تھا غربت پر 

قلم ہی فروخت کرنا پڑ گیا مجھ

Shayri likh raha tha gurbat par

Qalam hi farokhat karna paar gaya muja

○●○●○●○●○●○●○●

شہرت کی بلندی کا تو اک پل کا بھروسہ نہیں ہے 

جس شاخ پے بیٹھے ہو وہ ٹوٹ بھی سکتی ہے 

Shohrat ki bulandi ka to ik pall ka bharosah nae hai

Jis shak pay bathay ho wo toot bhi skti hai

○●○●○●○●○●○●○●

دولت ایک ایسی تتلی ہے 

جسے پکڑتے پکڑتے

آدمی اپنوں سے دور نکل جاتا ہے

Dolat ak asi titli hai jesay pakarty pakarty admi apno say door nikal jata hai

○●○●○●○●○●○●

میری غربت نے اڑایا ہے میرے فن کا مذاق 

تیری دولت نے تیرے عیب چھپا رکھے ہیں

Mari gurbat ny oarya hi mery fun ka mazak

Tari dolat nay taray aib chupa rakhay hn

○●○●○●○●○●○●○●

آنسو بہا بہا کر بھی ہوتے نہیں کم

کتنی امیر ہوتی ہیں آنکھیں غریب کی

Anso baha baha kar bhi hoty nae kam

Kitni ameer hoti hain ankahyin gareeb ki

○●○●○●○●○●○●○●

میری زندگی کا تجربہ ہے کہ پیسہ بہت کچھ ہے 

لیکن پیسہ سب کچھ نہیں ہے

Mari zindgai ka tjurbah hai kay pasah buht kuch hai

Lakin passa sab kuch nae hai

○●○●○●○●○●○●○●

جانتا بھی ہے درزی یہ مفلسی کا لباس ہے 

پھر بھی میری قمیض پہ وہ جیب بنا دیتا ہے

Jitna bhia ha darzi ya muflasi ka labas

Phir bhi mari qameez pay wo jaib bana deta hai

○●○●○●○●○●○●○●

اگر تم وہ کرتے ہو جو ہمیشہ سے کرتے آرہے ہو 

تو تمہیں وہی ملے گا جو ہمیشہ سے ملتا آرہا ہے

Ager tum wo karaty ho jo hamisha say karty a rahay ho

To tumhay wohi milay ga jo hamisha say milta araha

○●○●○●○●○●○●○●

شاعری لکھ رہا تھا غربت پر 

قلم ہی فروخت کرنا پڑ گیا مجھے

Shayri likh raha tha gurbat par

Qalam hi farokhat karna paar gaya muja

○●○●○●○●○●○●○●

دولت محنت کرنے سے نہیں بلکہ عقل سے آتی 

ورنہ سر پہ پتھر اٹھانے والے مزدور سب سے زیادہ دولت مند بن جاتے

Dolat mahnat say nae balaky aqal say ati

Warna sir pay phater othany walay mazdoor sab say zayda Dolat maand ban jatay

○●○●○●○●○●○●○●

پیسے غرور کی اہم وجہ ہے اس سے لوگ دوسروں کو کم  تر سمجھتے ہیں

Pasay garor ki aham waja hai is sat loag dosron ko kam tar smjaty hn

○●○●○●○●○●○●○●

جس کے آنگن میں امیری کا شجر لگتا ہے 

ان کا ہر عیب زمانے کو ہنر لگتا ہے

Jis ky angan mai Ameeri ka shajar lagta hai

In ka har aib zamany ko hunar lagta ha

○●○●○●○●○●○●○●

کام کا آلس اور پیسے کا لالچ ہمیں ترقی کرنے نہیں دیتی.

Kaam ka Alass or pesay ka lalach taraqi nae deta

○●○●○●○●○●○●○●

اتنا قیمتی نہ کر خود کو کہ تو میری استطاعت سے باہر ہو جائے 

لوگ اکثر مہنگی چیز کو چھوڑ دیتے ہیں اپنی حیثیت دیکھ کر

Itna qimati  na kar khud ko kay to mari istitat say bahir hai

Loag aksar mahngi cheez ko chore detay han apni hasiyat deakh kar

○●○●○●○●○●○●○●

جو موت سے نہیں ڈرتا تھا بچوں سے ڈر گیا 

ایک رات خالی ہاتھ جب مزدور گھر گیا

Jo moat say nae tha darta bachon say daar gaya

Ak raat khali haat jab mazdoor gahr gaya

○●○●○●○●○●○●○●

دولت کی اصل خرابی یہ ہے کہ وہ آدمی کے پاس ہمیشہ نہیں رہتی اور اگر رہ جائے تو آدمی نہیں رہتا




Dolata ki asal kharabi ya ha ky wo admi kay paas hamisha nae rahti or ager rah b jaya to admi nae rahta

○●○●○●○●○●○●○●

جب دولت آنے پر کسی کا اخلاق تباہ ہوجائے 

تو سمجھ لو اس کے زوال کا وقت قریب آچکا ہے

Jab dolat anay par kiisi ka ikhlaq tabah ho jaya

To samaj lo is ky zawala ka waqat aa chuka ha

○●○●○●○●○●○●○●

میں نے ایک نوالے کیلئے جس کا شکار کیا 

وہ پرندہ بھی کہی روز سے بھوکا نکلا

Many ak nawalay ky liya jis ka shikae kiya

Wo parinda bhi kayi roaz say bhooka nikla○●○●○●○●○●○●○●

زمانہ کچھ نہیں بولتا سب پیسہ بولتا ہے 

پیسہ آنے کے بعد انسان نہیں انسان کا مزاج بولتا ہے

Zamna kuch nae bolta sab paisa bolta hai 

Paisa anay kay bad insan nae insan ka mezaj bolta hai

○●○●○●○●○●○●○●

کچھ لوگ دولت پکڑتے پکڑتے آپ سے بہت دور چلے جاتے ہیں

Kuch loag dolat pakarty pakarty ap say door chalay jatay hn

○●○●○●○●○●○●○●

دولت ایک ایسی تتلی ہے 

جسے پکڑتے پکڑتے آدمی اپنوں سے دور نکل جاتا ہے

Dolat ak asi titli hai jesay pakarty pakarty admi apno say door nikal jata hai

○●○●○●○●○●○●○●

میری جیب میں ذرا سا چھید کیا ہو گیا 

سکوں سے زیادہ رشتے سرک گئے

Mari jaib ma zara sa chaid kiya ho gaya

Sakoon say zayda ristay sarak gaya ○●○●○●○●○●○●○●

‏پہلے دولت کے انبار ڈھونڈتے ہیں

پھر زندگی میں قرار ڈھونڈتے ہی

Phlay dolat kay anbar dhoondaty hain.

 

Phir zindagi mai qarar dhoondaty hain ○●○●○●○●○●○●○●

ایسی غربت پر صبر کرنا جس میں عزت محفوظ ہو 

اس امیری سے بہتر ہے جس میں ذلت و رسوائی ہو 

Asi gurbat par saber karana jis mai izzat mahfi ho

Os ameeri say bhatter ha jis ma zilat o ruswayi ho

○●○●○●○●○●○●○●

آج کل صرف پیسے کی اہمیت ہے 

ہنر سڑکوں پر تماشا کرتا ہے

اور قسمت محلوں میں راج کرتی ہے

Aaj kal sirf passay ki ahmiyat hai

Hunar sarkon par tamasha karta hai

Or qismat mahlon mai raaj karti hai

○●○●○●○●○●○●○●

امیر کے گھر کا کوا بھی ہر کسی کو مور نظر آتا ہے




اور غریب کے گھر کا بچہ بھی ہر کسی کو چور نظر آتا ہے.

Ameer kay ghar ko kawa bhi har kiisi

ko moor nazar ata hai or gareeb kay

ghar ka bacha bhai hr kisi ko chore

 nazar ata hai

○●○●○●○●○●○●○●

اگر رزق عقل اور دانشوری سے ملتا تو جانور اور بے وقوف بھوکے مرجاتے

Ager rizq aqal or daniswari say milta

to janwar or bewaqoof bhooky maar

jaty

○●○●○●○●○●○●○●

میری غریبی نے اڑایا ہے میرے فن کا مزاق

تیری امیری نے تیرے عیب چھپا رکھے ہیں

Mari greebi ny oraya hai meray fun ka mazak

Tari ameeri nay taray aib chupa rahy hain

○●○●○●○●○●○●○●

غریب شہر تو فاقوں سے مر گیا

امیر شہر نے ہیرے سے خود کشی کر لی

Gareeb shahar to faqaon say marr gaya

Ameer shahar nay hiray say khud kushi kar li

○●○●○●○●○●○●○●

وفا کی خوشبو تو غریب سے آتی ہے

امیر کا تو عکس بھی بدل جاتا ہے

Wafa ki khushboo to gareeb say ati hai 

ameer ka to akas bhai badal jata hai

○●○●○●○●○●○●○●

کسی غریب کا کرتی نہیں ہے احترام

یہ دنیا لباس دیکھ کر سلام کرتی ہے

Kisi gareeb ka karti nae hai ihtiram

Ya duniya labas deakh kar salam karti ha

○●○●○●○●○●○●○●

مفلسی کے خنجر سے باپ مر ہی جاتا ہے

چوڑیوں کے لیے جب مچلتی ہیں بیٹیاں

Muflasi ky khanjar say baap maar hi jata hai

Choriyon kay liya jb machlti hain batiyan

○●○●○●○●○●○●○●

یہ جو تجھے جھک کر سلام کرتے ہیں 

یہ تیرے پیسے کا احترام کرتے ہیں

Ya jo tujay jhuk kar salamm kartay hain

Ya teray pasay ka ihtiram karaty hain

○●○●○●○●○●○●○●

ایسی غربت پر صبر کرنا جس میں عزت محفوظ ہو 

اس امیری سے بہتر ہے جس میں ذلت و رسوائی ہو 

Asi gurbat par saber karana jis mai izzat mahfi ho

Os ameeri say bhatter ha jis ma zilat o ruswayi ho

○●○●○●○●○●○●○●

آج کل صرف پیسے کی اہمیت ہے 

ہنر سڑکوں پر تماشا کرتا ہے

اور قسمت محلوں میں راج کرتی ہے

Aaj kal sirf passay ki ahmiyat hai

Hunar sarkon par tamasha karta hai

Or qismat mahlon mai raaj karti hai

○●○●○●○●○●○●○●

امیر کے گھر کا کوا بھی ہر کسی کو مور نظر آتا ہے

اور غریب کے گھر کا بچہ بھی ہر کسی کو چور نظر آتا ہے

Ameer kay ghar ko kawa bhi har kiisi ko moor nazar ata hai or gareeb kay ghar ka bacha bhai hr kisi ko chore

 nazar ata hai

○●○●○●○●○●○●○●

اگر رزق عقل اور دانشوری سے ملتا تو جانور اور بے وقوف بھوکے مرجاتے

Ager rizq aqal or daniswari say milta

to janwar or bewaqoof bhooky maar

jaty

○●○●○●○●○●○●○●

میری غریبی نے اڑایا ہے میرے فن کا مزاق

تیری امیری نے تیرے عیب چھپا رکھے ہیں

Mari greebi ny oraya hai meray fun ka mazak

Tari ameeri nay taray aib chupa rahy hain

○●○●○●○●○●○●○●

غریب شہر تو فاقوں سے مر گیا

امیر شہر نے ہیرے سے خود کشی کر لی

Gareeb shahar to faqaon say marr gaya

Ameer shahar nay hiray say khud kushi kar li

○●○●○●○●○●○●○●

وفا کی خوشبو تو غریب سے آتی ہے

امیر کا تو عکس بھی بدل جاتا ہے

Wafa ki khushboo to gareeb say ati hai

ameer ka to akas bhai badal jata hai

○●○●○●○●○●○●○●

Chai Poetry in Urdu

میچور ہونے کی نشانی یہ ہے کہ پیار ملے یا نہ ملے ٹنیشن نہیں ہوتی لیکن چائے نہ ملے تو بندہ نیم پاگل ہوجاتا ہے

Read more

Bewafa Poetry in Urdu

محبتیں چھن بھی جایا کرتی ہیں

شرک کوئی چھوٹا گناہ تو نہیں 

Mohabatin cheen be jaya karti hain

sherak koi chota ghuna to nahi


○●○●○●○●○●○●○●

کسی ناقدرے سے محبت کرنا ایسا ہی ہے

جیسے آپ انہیں سونے کے برتن میں آب حیات پیش کریں اور وه اسے هونٹوں سے لگانے کی بجاۓ اس سے اپنے پاؤں دھولے

Kisi na qadray say Mohabat karna asa he ha

jasay ap inay sonay kay bartan ma aaby hayat paisj karain or wo usy hanton say laganay ki bajay is say apny paon dhoo lay

 

○●○●○●○●○●○●○●

وہ مجھ کو ٹوٹ کے چاہے گا چھوڑ جائے گا 

مجھے خبر تھی اسے یہ ہنر بھی آتا ہے



wo mujh ko toot kar chahay ga chir jay ga

mujhay khabar thi usy ya hunar be aata hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

نا جانے کیوں آتے ہیں زندگی میں وہ لوگ

وفائیں کر نہیں سکتے باتیں ہزار کرتے ہیں

Na janay kuy aatay hain zindagi ma wo log

wafain kar nahi saktay batain hazar karty hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

اتنا بھی ہم سے ناراض نہ ہوا کر

بد نصیب ضرور ہیں پر بے وفا نہیں

itna be ham say nazar na hova kar

bad naseeb zaroor hain par baywafa nahi

 

○●○●○●○●○●○●○●

چھوڑ کر نہیں گیا مجھے 

کہا نا توڑ کر گیا ہے

chor kar nahi gaya mujhy

kahan naa toor kay gaya hay

○●○●○●○●○●○●○●

مجھ سے بچھڑا ہوا شخص لباس تھا میرا

ارے رقیبوں کو مبارک ہو اترن ہماری 

mujhay say bichara hova sakhs labas tha mera

Aray

raqeebon ko mubarak ho utran hamari

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہم اسے یاد بہت آئیں گئے 

جب اسے بھی کوئی ٹھکرائے گا

ham usy yad bohat aayn gayin

jab usy be koi thukray gaa

 

○●○●○●○●○●○●○●

چھوڑ دو وہ بہانے جو تم کرتے ہو سنگدل 

مجھے بھی پتا ہے مجبوریاں تبھی آتی ہیں جب دل بھر جاتا ہے

chor do bahanay jo tum karty ho

singdill

mujhay be oata hay mujboriyan tabi aati hain jab dill bhar jata hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

اس وقت تیرے دل میں بہت درد اٹھے گا 

جب بچھڑ کر مجھ سے تجھے میرے ہم نام ملیں گے

us waqt taray dill ma bohat dar uthay gaa

jab bichar kar mujhy say tujhay maray ham nam milain gayn

 

○●○●○●○●○●○●○●

اس کی آواز میری بھوک مٹایا کرتی تھی 

میرا رزق بھی مجھ سے چھین لیا گیا

us ki awaz mari bhook metaya karti thi

mera rizq be mujhay say cheen leya gaya

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں تیرے بعد کوئی تیرے جیسا ڈھونڈتا ہوں

جو بےوفائی بھی کریں بےوفا نہ لگے 

ma taray bad koi taray jesa dhondta hoon

jo baywafai be karain baywafa naa lagay

 

○●○●○●○●○●○●○●

کہیں کسی سے بھی ذکر جدائی مت کرنا

ان آنسوؤں روشنائی مت کرنا 

جہاں تمہارا دل نہ لگے وہیں بچھڑ جانا 

مگر خدا کے لیے بےوفائی مت کرنا 

kahi kisi say be zijar judai mat karna

in ansoo rosnaii mat karna

jahan tumra dill na lagay wohin bichar jana

magar khuda kay keya baywafai mat karna

 

○●○●○●○●○●○●○●

بہت مان تھا جن پر 

بڑے بے ایمان نکلے وہ

bohat man tha jin par

Baray bay eman niklay woo

 

○●○●○●○●○●○●○●

اے دل تنہائی میں رہنے کا عادی ہو جا

بدل گئے ہیں وہ لوگ جو صبح شام یاد کیا کرتے تھے

Aay dill tanhai ma rehnay ka aadi ho jaa

badal kay hain wo log jo shuba sham yad keya karty thay

 

○●○●○●○●○●○●○●

یہ غم نہیں کہ وہ مجھ سے وفا نہیں کرتا

ستم تو یہ ہے کہ کہتا ہے جا نہیں کرتا



ya gham nahi kay wo mujh say wafa nahi krta

sitam to ya hay kay kehta hay ja nahi karty

 

○●○●○●○●○●○●○●

یاد کرو گے ایک دن مجھے یہ سوچ کر 

کیوں نہیں قدر کی میں نے اس کے پیار کی

yad karo hay ak din mujhy ya soch kar

kuy nahi qadar ki ma nay us kay pyar ki

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہم شجر تھے اور شجر ہی رہے 

وہ بدلتا رہا موسموں کی طرح 

ham sajar thay or sajar he rahay

wo badal raha mosamon ki tarah

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں نے زہر بھی زخموں پر لگا کر دیکھا ہے

اتنی آہیں نہیں نکلتی جتنی تیری بے رخی سے نکلتی ہیں

ma nay zahar be zakhmo par laga kar dakha hay

itni aahain nahi nikalti jitna tarai bayrukhi say nikalti hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہنسی آجاتی ہے یہ سوچ کر کہ 

ہم بھی تجھ جیسے کے لیے روۓ تھے

hansi aa jati ha ya soch kar kay

ham be tujh jesay kay keya roy thay

 

○●○●○●○●○●○●○●

پائیدار خلوص میں دشواریاں نہ کر

چاہت نہیں تو ہم سے اداکاریاں نہ کر

Paydar khaloos ma dushwariyn na kar

chahat nahi to ham say adakariyn naa kar

 

○●○●○●○●○●○●○●

میری زندگی میں ایک شخص اتنا اہم ہو گیا

اسے ہم سے محبت ہے ہمیں یہ وہم ہو گیا

mari zindagi ma ak sakhs itna eham ho gaya

usy ham say Mohabat hay hamay ya weham ho gaya

 

○●○●○●○●○●○●○●

مرد کی محبت جب حد سے تجاوز کر جائے 

تو عورت اکثر بےوفا ہو جاتی ہے

mard ki Mohabat jab had say tajawz kar jay

to aurat aksar baywafa ho jati hay

 

○●○●○●○●○●○●○

دل تو بہت بار ٹوٹ چکا ہے تیری بے وفائی پر

دعا کرو اس بار سانسیں ٹوٹے 

dill to bohat bar tot chuka hay tari bat wafai par

dua karo is bar sansain tootay

 

○●○●○●○●○●○●○●

بچھڑنے کا وہ پہلے سے طے کر چکا تھا 

اسے میری طرف سے بدگمانی چاہیے تھی

bichranay ka wo pehlay say tay kar chuka tha

 

ysy mari taraf say badgumani chay thi

 

○●○●○●○●○●○●○●

مجھے چھوڑنے والے

میرا کچھ تو چھوڑ جاتے

mujhu chornay walay

mera kuch to chor jatay

 

○●○●○●○●○●○●○●

کتنے آرام سے چھوڑ دیا تم نے بات کرنا 

جیسے صدیوں سے تم پہ بوجھ تھے ہم

kitnay aram say chor deya tum nay bat karna

jasay sadiyon say tum pay bohh thay ham

 

○●○●○●○●○●○●○●

جب لوگ طے کر لیتے ہیں کہ اب تعلق نہیں رکھنا 

تو وہ پتھر کے ہو جاتے ہیں اور پتھر کے سامنے جتنا بھی رو لو 

گڑ گڑا لو معافیاں مانگ لو وہ کہاں سنتے ہیں

jab log tay kar katay hain kay ab talak nahi rakhna

to wo pathar kay ho jatay hain or pathar kay samnay jina b roo loo

girgiraa li mafiyan mang lo wo kahan sunta hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

اے چراغ جلنا ہے تو ہٹ کر جل میرے مزار سے

کیونکہ میں پہلے سے جلا ہوا ہوں ایک بیوفا کے پیار سے

aay Charag jalna hay to hat kar jal maray mezar say

kuy kay

ma prhlay say jala hova hon ak baywafa kay pyar say

 

○●○●○●○●○●○●○●

ابھی سکون میں ہے وہ کسی اور کا ہو کر

آگ تو تب لگے گی جب ہم کسی اور کے ہوں گے

abi sakoon ma hay wo kusi or ka ho kar

aagh to tab lagy gi jab ham kisi ir kay hon gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

پائیدار خلوص میں دشواریاں نہ کر

چاہت نہیں تو ہم سے اداکاریاں نہ کر.5



baydar khaloos ma dushwariyn na kar

chahat nahi to ham say adakaraiyn naa karr

 

○●○●○●○●○●○●○●

میری زندگی میں ایک شخص اتنا اہم ہو گیا

اسے ہم سے محبت ہے ہمیں یہ وہم ہو گیا

mari zindagi ma Ak Shaks itna eham ho gaya

Usy ham say Mohabat hay hamay ya waham ho gaya

 

○●○●○●○●○●○●○●

مرد کی محبت جب حد سے تجاوز کر جائے 

تو عورت اکثر بےوفا ہو جاتی ہے

mard ki Mohabat jab had say tajawaz kar jay

to aurat aksar baywafa ho jati hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

دل تو بہت بار ٹوٹ چکا ہے تیری بے وفائی پر

دعا کرو اس بار سانسیں ٹوٹے 

Dill too bohat bar tot chuka hay tari bay wafai par

dua karo is bar sansain tootay

 

○●○●○●○●○●○●○●

بچھڑنے کا وہ پہلے سے طے کر چکا تھا 

اسے میری طرف سے بدگمانی چاہیے تھی

bichranay ka wo pehlay say tay kar chuka tha

ysy mari taraf say badgumani chay thi

 

○●○●○●○●○●○●○●

مجھے چھوڑنے والے

میرا کچھ تو چھوڑ جاتے

mujy chornay walay

mera kuch to chor jatay

 

○●○●○●○●○●○●○●

کتنے آرام سے چھوڑ دیا تم نے بات کرنا 

جیسے صدیوں سے تم پہ بوجھ تھے ہم

kitnay aram say chir deya tum nay bat karna

jasay sadiyon say tum pay bojh thay ham

 

○●○●○●○●○●○●○●

جب لوگ طے کر لیتے ہیں کہ اب تعلق نہیں رکھنا 

تو وہ پتھر کے ہو جاتے ہیں اور پتھر کے سامنے جتنا بھی رو لو 

گڑ گڑا لو معافیاں مانگ لو وہ کہاں سنتے ہیں

 

jab log tay kar katay hain kay ab talak nahi rakhna

to wo pathar kay ho jatay hain or pathar kay samnay jina b roo loo

girgiraa li mafiyan mang lo wo kahan sunta hain

○●○●○●○●○●○●○●

اے چراغ جلنا ہے تو ہٹ کر جل میرے مزار سے

کیونکہ میں پہلے سے جلا ہوا ہوں ایک بیوفا کے پیار سے

 

aay Charag jalna hay to hat kar jal maray mezar say

kuy kay

ma prhlay say jala hova hon ak baywafa kay pyar say

○●○●○●○●○●○●○●

ابھی سکون میں ہے وہ کسی اور کا ہو کر

آگ تو تب لگے گی جب ہم کسی اور کے ہوں گے

Abi sakoon ma hay wo kisi or ka ho kar

aagh to tab lagay gi jab ham kusi or kay hon gay

○●○●○●○●○●○●○●

تیری محبت بھی کراۓ کے گھر کی طرح تھی 

کتنا بھی سجایا پر میری نہ ہوئی

tari Mohabat b karay kay ghar ki tarah thi

kitna b sajaya par mari na hoie

 

○●○●○●○●○●○●○●

تجھ سے دور جانے کا کوئی ارادہ نہ تھا

پر کرتے ہم کیا جب تو ہی ہمارا نہ تھا

tujh say dour janay ka koi irada naa tha

par karty ham jya jab tu he hamara naa tha

 

○●○●○●○●○●○●○●

اتنی وفائیں بھی نہ کرنا کبھی کسی شخص سے

دل کی گہرائی سے چاہا جائے تو لوگ مغرور ہو جاتے ہیں

itni wafain be na karna kabi kisi sakhs say

dill ki gehrai say chaha jay to lig magroir ho jatay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

مانا کہ بہت خوش ہو تم اس جدائی سے 

مگر اللہ نہ کرے کہ تمہیں کوئی تمہارے جیسا مل جائے

mana kay bohat khush ho tum is judai say

Magar Allah na karay kay tumay koi tumaray jesa mil jay

 

○●○●○●○●○●○●○●

کبھی اس کا ہوا کبھی اس کا ہوا کبھی میرا ہوا 



اس نے حسن گنوا دیا تجارت کرتے کرتے

kabi us ka hova kabi  is ka hova kabi mera hova

is nay husn gawa deya tajarat karty karty

 

○●○●○●○●○●○●○●

تیرے بیوفا ہونے کی شدت نے رولا دیا 

ورنہ ہم تو رونے والوں کو فنکار سمجھتے تھے

taray baywafa honay ki shidat nay rula deya

warna ham to ronay waly ko fankar samajhtay thay

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏میں خود میں برائیاں ڈھونڈتا ہی رہ گیا 

اس نے جب کہا تھا تو میرے لائق نہیں

ma khud ma burayin dhondta he rah gaya

us nay jab kaha tha tu maray laiq nahi

 

○●○●○●○●○●○●○●

جب اس نے کہا بھول جانا مجھے 

تب پہلی بار مجھے اپنے ذہین ہونے پر افسوس ہوا

jab us nay kaha bhool jana mujhy

tab pehlu bar mujh apnay sehan honay par afsos hova

 

○●○●○●○●○●○●○●

اِتنی شدت سے نہ کر ترک تعلق کا سوال

یہ نہ ہو ہم سے تیری بات نہ ٹالی جائے

itni shidat say na kar tarak e talaq ka sawal

ya na ho ham say tari bat na talii jay

 

○●○●○●○●○●○●○●

صبح کی روشنی کی طرح ڈھلتے دن کی طرح

اکثر لوگ بدلتے ہیں جدا ہوتے ہیں

Shuba ki roshni ki tarah dhaltay din ki tarah

aksar log badaltay hain juda hotay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

انسان دو وجہ سے بدل جاتا ہے

کوئی خاص اس کی زندگی میں آجاۓ 

یا کوئی بہت خاص اس کی زندگی سے چلا جائے

insan do waja say badal jata hay

koi khas is ki zindagi ma aa jay

ya koi bohat khass us ki zindagi say chala jay

 

○●○●○●○●○●○●○●

بہت کمزور ہے وہ مرد جو عورت کے دل میں 

اپنی محبت پیدا کر کے اسے چھوڑ دے

bohat kamzoor hay wo mard jo aurat kay dill ma

apni Mohabat peda kar kay usy chor day

 

○●○●○●○●○●○●○●

محبت تھی اک ایسے شخص سے 

جس کے چاہنے والے ہزاروں تھے

Mohabat thi ak asy sakhs say

jis kay chahnay walay hazaron thay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہزاروں نے دیں دلیل کے بے وفا ہے تو 

پر دل نہ مانا میری محبت کی تجھ سے انتہا تھی یہ 

hazaron nay dain daleel kay bay wafa hay tu

par dill na mana marai Mohabat ki tujh say inteha thi ya

 

○●○●○●○●○●○●○●

اور آخر میں ہم سب کسی نہ کسی کی زندگی کا بھولا ہوا کل بن کر رہ جاتے ہیں

or aakhir ma ham sab kisi naa kis ki zindagi ka bhola hova kal ban kar rah jatay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

تعلقات کو بس اس مقام تک رکھیے 

کسی کو چھوڑ نا پڑ جائے تو مرے نہ کوئی

taluqat ko bass is muqam tak rakheya

kisi ko chorna par jay to marry na koii

 

○●○●○●○●○●○●○●

جب لہجے بدل جائیں تو وضاحتیں کیسی

نئی میسر ہو جائیں تو پرانی چاہتیں کیسی

jab lehjay badal jain to wazahatin kiasi

neaii muyasir ho jain to purani chahtain kasii

 

○●○●○●○●○●○●○●

سمجھ سکتے ہو اذیت میری 

میرے سامنے ہی بدل گئی محبت میری 

samjh saktay ho aziyat mari

maray samnay he badal gai Mohabat mari

 

○●○●○●○●○●○●○●

سانس لو بھی تو اس کی مہک آتی ہے

اس نے ٹھکرایا ہے مجھے اتنے قریب آنے کے بعد

sans lo be to us ki mahak aati hay

us nay thukraya hay mujhay itnay qareeb aany kay bad

 

○●○●○●○●○●○●○●

مت لکھ یوں اپنے خون سے ہر بار تحریر ان کے لیے 

جو تیرا خلوص نہ پہچان سکے وہ تیرا خون کیا پہچانے گے

mat likh yun apnay khoon say har bar tehreer in kay leya

jo tera khaloos na pehchan sakay wo tera khoon kya oehchany gaa

 

○●○●○●○●○●○●○●

اتنی چاہت کے بعد بھی تجھے احساس نہ ہوا

ذرا دیکھ تو لے دل کی جگہ پتھر تو نہیں.

itnii chahat kay bad be tujhay ehsas na hova

zara dakh to lay dill ki jhaga pathar to nahii

 

○●○●○●○●○●○●○●

نا جانے کس کے مقدر میں لکھے ہو تم مگر

سچ تو یہ ہے کہ امید وار ہم آج بھی ہیں 

na janay kis kay muqadar ma likhay ho tum magar

 

aach to ya hay k umeedwar ham aj be hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

استخارہ کیا ہے آج میں نے اس کے نام کا 

محبت میں وفادار ہے وہ پر کسی اور کے لیے

Estekhara kya ha aj ma nay ys kay nam ka

Mohabat ma wafadar hay wo par kisi or kay leya

 

○●○●○●○●○●○●○●

نہیں چھوڑ سکتے ہم دوسروں کے ہاتھ میں تم کو

لوٹ آو کہ ہم ابھی تک تمہارے ہیں

nahi chor saktau ham dosron kay hath ma tum ko

lout aayon k ham abi tak tumaray hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

اس نے کہا یہ ساتھ قیامت تک کا ہے

پھر کچھ دنوں کے بعد قیامت ہی آگئی

us nay kaha ya sath kayamat tak kahan hay

phr kuch dino kay bad kayamat he aa gai

 

○●○●○●○●○●○●○●

وفا کی تلاش تو بےوفائوں کو بھی ہوتی ہے 

ہم نے تو دنیا ہی چھوڑ دی کسی کی وفا کی خاطر.

Wafa ki talash to baywafaon ko be hoti hay

ham nay to duniya he chor di kisi ki wafa ki khatir

 

○●○●○●○●○●○●○●

چھوڑ تو دیا مجھے پر کبھی یہ سوچا تم نے

اب کبھی جھوٹ بولا تو قسمیں کس کی کھاو گے

chor to deya mujhy par kabi ya socha tum nay

ab kabi jhot bila to qasmain kis ki khoy gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

محبت سیکھا کر جدا ہو گیا

نہ سوچا نہ سمجھا خفا ہوگیا

کس کس کو ہم اپنا کہیں

جو اپنا تھا وہی بے وفا ہو گیا

Mohabat sekha kar juda ho gaya

na socha na samjha khafa ho gaya

kis kis ko ham apna khain

jo apna tha wohi baywafa ho gaya

 

○●○●○●○●○●○●○●

کچھ لوگ ہماری قدر اس لیے بھی نہیں کرتے 

کیونکہ ہم لوگ انہیں چاہنے میں انتہا کر دیتے ہیں.

kuch log hamari qadra is keya be nahi karty

kuy kay

ham log inay chahnay ma inteha kardatay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہمیں ڈھونڈنے کی کوشش اب نہ کیا کر 

تو نے راستہ بدل دیا ہم نے منزل

hamain dhondnay ma koshish ab na keya kar

tu nay rastay badal deyan ham nay manzil

 

○●○●○●○●○●○●○●

آج گزرے جو تیرے شہر سے بہت رونا آیا 

کچھ بھی تو نہیں بدلہ وہاں اِک تیرے سوا



aj guzray jo taray seha say bohat rona aya

kuch he to nahi badla wahan ak taray sawa

 

○●○●○●○●○●○●○●

جن کا من بھر جاتا ہے نا 

ان کا بات کرنے کا طریقہ بھی بدل جاتا ہے

ji kay man bhar jata hay naa

us ka bat karny ka tareeka be badal jata hay

○●○●○●○●○●○●○●

ہیں نہ مجھے غلط فہمیاں؟ 

تجھے جب بھی لکھا اپنا لکھا.

hain naa mujh ma gakat fahmiyab

tujhay jab be kikha apna likha

○●○●○●○●○●○●○●

سمندر بھی تیری طرح مطلبی نکلا

جان لے کر لہروں سے کہتا ہے

لاش کنارے پر لگا دو

samundat be tari tarah matlabi nikla

janlay kar lahro say kehta hay

lashh kinaray par laga doo

 

○●○●○●○●○●○●○●

دل میں اتر کر آنکھوں سے بہہ گیا 

تیرا غم بھی تیری طرح بےوفا نکلا 

dill ma utar kar ankhon say beh gaya

tera gham be tari tarah baywafa nikla

 

○●○●○●○●○●○●○●

آج اس نے سلام بھیجا ہے

پھر کسی سے بگڑ گئی ہوگی

aj us nay salam bhaja hay

phir kisi say bigar gai ho ge

○●○●○●○●○●○●○●

بعد مرنے کے میری قبر پہ آے دعا مانگنے 

عمر بھر جس نے میرے مرنے کی دعائیں مانگیں 

bad marnay kay mari  qabar pay ayn dua mangany

umar bhar jis nay maray marnay ki duain mangin

 

○●○●○●○●○●○●○●

عید کا تیسرا دن ان کو مبارک 

جنہوں نے کسی تیسرے کے لیے ہمیں چھوڑا

Eid ka tersa din un ko mubarak

jino nay kusi teseay kay leya hamay chora

○●○●○●○●○●○●○●

میں بس سہارا تھا 

کنارہ کوئی اور تھا اس کا

ma bass sahara tha

kinara koi or tha us ka

 

○●○●○●○●○●○●○●

ﺗﺠﮭﮯ ﭼﮭﻮﮌﻭﮞ ﺗﻮ ﻣﺮ ﻧﮧ ﺟﺎؤﮞ

ﮐﭽﮫ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﮐﮯ ﺗﮭﮯ ﻧﺎ ﻭﻋﺪﮮ ﺗﯿﺮﮮ؟

tujhay choron to mar na joyn

kuch is tarah kay thay naa waday taray?

 

○●○●○●○●○●○●○●

کمال کا طعنہ دیا آج دل نے

اگر تیرا کوئی ہے تو کدھر ہے

kamal katana deya aj dill nay

agar tera koi hay to kidr hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

بچھڑنے کا وہ پہلے سے تھیہ کر چکا تھا 

اسے میری طرف سے بدگمانی چاہیے تھی

bichrany ka wo oehly say tay kar chuka tha

usy mari taraf say badgumani chaye thi

 

○●○●○●○●○●○●○●

سب کچھ ملا زندگی میں سوائے تیری وفا کے 

تم بے وفا تھے اور ہم تم سے ہی وفا مانگتے رہے 

sab kuch mila zindagi ma saway tari wafa kay

tum baywafa thay or ham tum say he wafa mangaty rahy

 

○●○●○●○●○●○●○●

تمہیں محبت کہاں تھی بس عادت تھی

ورنہ ہمارا پل بھر کا بچھڑنا تمہارے لیے عذاب ہوتا

tumay Mohabat kahan thi bas adat thii

 

warna hamara pal bhar ka becharna tumray leya azab hota

 

○●○●○●○●○●○●○●

کاش ہم جان جاتے کہ تم یوں بھلا دو گے

قسم لے لو تعلق جوڑنے سے پہلے ہم ہاتھ جوڑ لیتے

Kash ham jan jatay kay tum youn bhula do gay

qasam lay lo talq jornay say leglay ham bath jor latay

 

○●○●○●○●○●○●○●

جب ملو کسی سے تو ذرا دور کی یاری رکھنا



جان لیوا ہوتے ہیں اکثر سینے سے لگانے والے

jab milo kisi say to zara dour ki yaro rakhna

jan lewa hotay hain aksr seenay say lagany waly

 

○●○●○●○●○●○●○●

نصیب میرا کیوں مجھ سے خفا ہو جاتا ہے

اپنا جس کو بھی مانو بے وفا ہو جاتا ہے

naseeb mera kuy mujh say khafa ho jata hay

apna jis ko be mano wo baywafa ho jata ha

○●○●○●○●○●○●○●

اس نے بہانے سے ایک ہاتھ چھڑایا 

میں نے احتیاط سے دوسرا بھی چھوڑ دیا

us nay bahanay say ak hath churaya

many ehteyat say dosra be chor deya

 

○●○●○●○●○●○●○●

مجھے ایک پل میں برباد کر گیا وہ شخص 

جو میری ہجکی پر بھی تڑپ اٹھتا تھا

mujhay ak pal ma barbad kar gaya wo sakhs

jo mari hajki par b tarap uthta tha

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہر کسی کے بس کی بات نہیں ہوتی

کسی ایک کے لیے وفادار ہونا 

har kisi kay bass ki bat nahi hoti

kisi ak kay leya wafadr hona

 

○●○●○●○●○●○●○●

ایک منفرد طریقہ سے مسترد کیا گیا مجھے 

آپ بہت اچھے ہیں پر میں آپ کے قابل نہیں

ak munfarid tarekay say mustard keya gaya mujhy

ap bohat achy hain par ma apkay qabil nahi

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہر وہ انسان 



دو ٹکے کا ہی ہے 

جو کسی کے دل میں جگہ بنانے کے بعد بھی 

اس سے بہتر کی تلاش رکھتا ہے

har wo insan  do takay ga hay

jo kisi kay dill ma jhaga banay kay bad

us say behtar ki talash rakhta hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

Bhen Bhai Poetry in Urdu

جن کو اپنی بہنوں کی عزت پیاری ہوتی ہے 

وہ ہر بنت حوا کی عزت کرتے ہیں

Jin ko apni bhano ki izzat payari hoti ha

Wo har bintay hawa ki izzat karaty hn

🥰🤩😍

○●○●○●○●○●○●○●

ان بھائیوں کی بھی کیا شان ہے 

جن کی بہنیں ہم جیسی سمارٹ ہے

In bhayion ki bhi kiya shan hai

Jin ki bhanyin hum jesay smarat hai😜😎😁🥰🤩😍😘

○●○●○●○●○●○●○●

بابا کی لاڈلی

اور بھائی کی ضدی بہن

تمہارے آگے اپنی ہر ضد اور

 انا ہار جاتی ہے

Baba ki ladli 

Or bhai ki zidi bahan 

Tumhary  agya apni har zid or 

Ana haar jati ha

○●○●○●○●○●○●○●

بھائی بہن کے پیار میں صرف اتنا فرق ہے کہ رولاکر جو منالے وہ بھائی ہے اور رولاکر جو خود روپڑے وہ بہن ہے 



Bhai behan kay pyar mai itna farq haii ky rola kar jo mana lay wo bhai hai ot rola kar jo khud ro paray wo behan

 

○●○●○●○●○●○●○●

آپ کو کیا پتا بہن کیا ہوتی ہے جس کے پاس ہے وہ روتا ہے 

اور جس کے پاس نہیں ہے اس کو رولاتی ہے

Ap ko kiya pata behan kiya hoti ha jis kay pasa hai wo rota ha 

Or jis kay pass nae hai or jis kay pass nae ha is ko rolati ha

○●○●○●○●○●○●○●

ان بہنوں کے بھی کیا ٹھاٹ ہوتے ہیں

جن کے بھائی ہم جیسے اسمارٹ ہوتے 

In bhano ky b kiya that hotay hn 

Jin kay bhai hum jesay smarat hotay han😎😎😜😎😎

 

○●○●○●○●○●○●○●

بہن بھائیوں کا انوکھا پیار کبھی پکی دوستی کبھی پکے دشمن بھائی کی جان بہن 

بہن کا مان بھائی کبھی رازدار کبھی چغلی لگانے کے ماہر اور ضرورت پڑنے پر بہن ماں کا کردار اور بھائی باپ کی جگہ لے لیتا ہے

Behan bhai ka anokha payar kabhi pakai dosti kbahi pakay  dushaman bhai ki jan behan 

Mahar or zarort parany par behan maa ka kirdar or bhai bapp ki jagha lay lita h

○●○●○●○●○●○●○●

بچپن میں بہن بھائی دن میں دس دفعہ ناراض ہوتے اور راضی ہو جاتے وہی بہن بھائی بڑے ہو کر ناراض ہوتے ہیں پھر شاید جنازوں پر ملتے ہیں

Bachpan mai behan bhai din mai dass dafa nataz hoty or razi ho jatya eohi behan bhai baray ho kar naraz hotay hai. Phir shayed janazon par milty hn

○●○●○●○●○●○●○●

 عزت کرو بہنوں کی 

چاہے اپنی ہوں یا غیروں کی

Izzat karo bhano ki 

Chahy apni hon ya gairon ki

○●○●○●○●○●○●○●

میری بہن میری شان ہے 

اس پر جان بھی قربان ہے 

Mari behan mari shaan 

Is par jan b quraban hai

○●○●○●○●○●○●○●

ماں کے بعد وفا کا دوسرا نام بہن ہے 

اللہ پاک سب کی بہنوں کے نصیب اچھے کرے

Maa kay bad kwafa ka dosra naam behan hai 

Allag pak sab ki bhano kay naseeb achay kary

○●○●○●○●○●○●○●

بہن بھائیوں کا رشتہ بھی عجیب ہے 

ضرورت پڑنے پر انہیں اپنے دونوں گردے تو نکال کر دے سکتے ہیں 

لیکن اٹھ کر ایک گلاس پانی نہیں دے سکتے

Behan bhayion ka risahta bhi ajeeb hai 

Zarort parany par inhyi apnay dobo gurday to nikal kar day skaty hin 

Lakin oth kar ak Glas pani nae day sakaty

○●○●○●○●○●○●○●

بڑے بھائی کا ہونا کسی نعمت سے کم نہیں

کیونکہ کہ وہ ہمشہ آپ کو غلط چیزوں سے روکتے ہیں

Baray bhai ka hona kisi namat say kam. Nae 

Kun kay wo hamisha ap ko galat cheexon say rokatu hin

○●○●○●○●○●○●○●

بہنوں کا مان ہوتے ہیں بھائی اسی لیے خاص ہوتے ہیں بھائی

Bhano ka maan hoty hain bhai isi liya khas hoty hain bhai

○●○●○●○●○●○●○●

کولر کے پاس سے آکر صوفے پر پاٶں پے پاٶں رکھ کر پانی مانگنے والی مخلوق کو بھائی کہتے ہیں 

Coller ky paass akar sofay par payon py payon rak kar 

Pani manganay wali makhlloq ko bhai khaty hin

○●○●○●○●○●○●○●

وقت ملے تو دیکھنا رشتوں کی کتاب کو کھول کر

بہن بھائی کا رشتہ بھی ہر رشتہ سے لاجواب ہے



Waqat milay to dekhana rishton ki kitab ko khol kar 

Behan bhai ka ristah bhi har risathy say lajawab hai

 

○●○●○●○●○●○●○●

کسی کی بہن کو نہیں تنگ کرنا 

بہن تیری بھی جوان ہے 

اور کسی کے بھائی کے ساتھ بھی مت کھیلنا 

بھائی مسکرتا تیرا بھی کمال ہے

Kisi ki behan ko nae tang karana 

Behan tari bhi jawan ha 

Or kisi kay bhai kay shat bhi mat khailna

Bhai muskarta tera bhi kamal ha

○●○●○●○●○●○●○●

میری بہن میری خوشی ہے 

یا اللّه میری خوشی کو ہر بری نظر سے بچانا 

آمین 

Mari behan mari khushi hai

Ya Allah mari khuahi ko buri nazar say bachana

Ameen 

○●○●○●○●○●○●○●

میری بہن میری خوشی ہے 

یا اللّه میری خوشی کو ہر بری نظر سے بچانا 

آمین 

Mari behan mari khushi hai

Ya Allah mari khuahi ko buri nazar say bachana

Ameen

○●○●○●○●○●○●○●

ہر رشتے سے پیارا رشتہ ہے میرے بھائی کا

رلاتا ہے تو پھر بھی اداس رہتا ہے

Har ristay say payara tista hai mry bhai ka 

Rulata hai to phir bhai oadas rahta ha

○●○●○●○●○●○●○●

جن کی دہلیز پر بہنیں ہوتی ہیں 

وہ دوسروں کی بہنوں کو دھوکے نہیں دیتے

Jin ki Dhaleez par bhanyain hoti hain wo dosron ki bhano ko dhokha nae detay

○●○●○●○●○●○●○●

ماں کے بعد وفا کا دوسرا نام بہن ہے 

اللہ پاک سب کی بہنوں کے نصیب اچھے کرے

Maa kay bad wafa ka dosra naam behan ha 

Allah sab bhano ky nasseb achay karay

○●○●○●○●○●○●○●

بہن بھائیوں کا رشتہ بھی عجیب ہے 

ضرورت پڑنے پر انہیں اپنے دونوں گردے تو نکال کر دے سکتے ہیں 

لیکن اٹھ کر ایک گلاس پانی نہیں دے سکتے

Behan bhayion ka risahta bhi ajeeb hai 

Zarort parany par inhyi apnay dono gurday to nikal kar day skaty hin 

Lakin oth kar ak Glas pani nae day sakaty 

●○●○●○●○●○●○●

بڑے بھائی کا ہونا کسی نعمت سے کم نہیں

کیونکہ کہ وہ ہمشہ آپ کو غلط چیزوں سے روکتے ہیں

Baray bhai ka hona kisi namat say kam nae kun ky wo hamisha ap ko galat cheezyon say rokaty hn

○●○●○●○●○●○●○●

بہنوں کا مان ہوتے ہیں بھائی اسی لیے خاص ہوتے ہیں بھائی

Bhano ka maan hoty ha. Bhai is liya khas. Hotay hn bhai

○●○●○●○●○●○●○●

کولر کے پاس سے آکر صوفے پر پاٶں پے پاٶں رکھ کر پانی مانگنے والی مخلوق کو بھائی کہتے ہیں 

Coller ky paass akar sofay par payon py payon rak kar 

Pani manganay wali makhlloq ko bhai khaty hin

○●○●○●○●○●○●○●

وقت ملے تو دیکھنا رشتوں کی کتاب کو کھول کر

بہن بھائی کا رشتہ بھی ہر رشتہ سے لاجواب ہے

Waqat milay to dekhana rishton ki kitab ko khol kar 

Behan bhai ka ristah bhi har risathy say lajawab hai

○●○●○●○●○●○●○●

کسی کی بہن کو نہیں تنگ کرنا 

بہن تیری بھی جوان ہے 

اور کسی کے بھائی کے ساتھ بھی مت کھیلنا 

بھائی مسکرتا تیرا بھی کمال ہے

Kisi ki behan ko nae tang karana 

Behan tari bhi jawan ha 

Or kisi kay bhai kay shat bhi mat khailna

Bhai muskarta tera b kamal hi

○●○●○●○●○●○●○●

میری بہن میری خوشی ہے 

یا اللّه میری خوشی کو ہر بری نظر سے بچانا 

آمین 

Mari behan mari khushi hai

Ya Allah mari khuahi ko buri nazar say bachana

Ameen

○●○●○●○●○●○●○●

ہر رشتے سے پیارا رشتہ ہے میرے بھائی کا

رلاتا ہے تو پھر بھی اداس رہتا ہے



Har ristay say payara tista hai mry bhai ka 

Rulata hai to phir bhai oadas rahta

😍❤️💫

○●○●○●○●○●○●○●

جن کی دہلیز پر بہنیں ہوتی ہیں 

وہ دوسروں کی بہنوں کو دھوکے نہیں دیتے

Jin ki Dhaleez par bhanyain hoti hain wo dosron ki bhano ko dhokha nae detay

○●○●○●○●○●○●○●

جب تمہارے گھر رزق میں تنگی محسوس ہونے لگے تو اپنی بہنوں اور بیٹیوں کو دعوت پہ بلا لیا کرو

Jab tumhary ghar ma tizq mai tangi mahsos honay lagy to 

Apni bhano ko or batiyon ko dawat bula liya karo

○●○●○●○●○●○●○●

بھائیوں کے حق میں مانگی ہوئی بہنوں کی دعا کبھی رد نہیں ہوتی

Bhayion ky haq ma mangi hoi bhano ki dua kabhi raad nae hoti

○●○●○●○●○●○●○●

ماں باپ کے دم تک ہی رہی گھر میں محبت 

پھر بھائیوں نے خون کا رشتہ بھی نہ رکھا

Maa bapp kay dum tak hu rahi ghr mai muhabat 

Phir bhayion ny khoon ka rishtah bhi na rakha

○●○●○●○●○●○●○●

میرا بھائی میری جان ہے 

اے خدا 

میرے بھائی کو ہمیشہ خوش رکھنا

Mera bhai mari jan hai 

Ay khudaha

Meray bhai ko hamisha khush rakhna

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏ماں باپ کے بعد اگر سب سے زیادہ جو دعائیں دیتا ہے وہ رشتہ بہنوں کا ہوتا ہے بہن گھر پر آئے یا آپ بہن کے گھر جائیں اور بہن کے سر پر ہاتھ رکھیں اور وہ آپ کو دل سے دعائیں دے اس کیفیت کو لفظوں میں بیان کرنا مشکل ہے اللہ سب کی بہنوں کو سلامت رکھے 

Maa bapp kay bad ager sab say zayda jo dunayin deti ha wo risthah behanon ka hota ha bahan  ghar par aya ya ap behan Kay ghr jyain or behan ky sir par hat rakhyin or wo ap ko dill sy duayin day is kafiyat ko lafzon mai beyan karna muskil hai Allah sab ki bhano ko salatam rakhy

😇💫😍🌹🌺

●○●○●○●○●○●○●

دنیا میں بھائی بڑے ہوں یا چھوٹے

بہنوں کا غرور ہوتے ہیں

Duniya ma bhai choty hon ya baray 

Bhano ka garoor hotay hain 

🤗☺️😊😎

○●○●○●○●○●○●○●

یا اللہ میرے بہن بھائیوں کو ہمیشہ خوش رکھنا ان کو کبھی کسی کا محتاج نہ کرنا آمین

Ya Allah meray behan bhayion ko hamisha khush rakhana in ko kabhi kisi ka muhtaj na karna ameen

😇😇😇🙏

○●○●○●○●○●○●○●

بہنوں والے دوسروں کی بہنوں سے نہیں کھیلتے

Bhano walay dosron ki bhano say nae khailtay

○●○●○●○●○●○●○●

بھائی والدین کے جائیداد میں اور بہن والدین کے غم میں ہمیشہ برابر کے حصہ دار ہوتے ہیں

Bhai waldain kay jaidad mai or bhen waldain kay ghum ma hamisha baraber ky hissa dar hoty hn

🔥🔥🔥🔥

○●○●○●○●○●○●○●

ایسے رشتے جو جنگلیوں کی طرح لڑتے ہوئے نظر آئیں اور تھوڑی دیر بعد ایک دوسرے کے لئے جان بھی دینے کے لئے تیار ہو اسے بھائی بہن کہتے ہیں

Asay risty jo jangliyon ki trha larty nazar ayin or thori dair bad ak dosry kay liya jan bhi deny kay kiya tyar ho isay bhai behan khatay hn

○●○●○●○●○●○●○●

جب تمہارے گھر رزق میں تنگی محسوس ہونے لگے تو اپنی بہنوں اور بیٹیوں کو دعوت پہ بلا لیا کرو

Jab tumhary ghar ma tizq mai tangi mahsos honay lagy to 

Apni bhano ko or batiyon ko dawat bula liya karo

○●○●○●○●○●○●○

بھائی والدین کے جائیداد میں اور بہن والدین کے غم میں ہمیشہ برابر کے حصہ دار ہوتے ہیں

Bhai waldain kay jaidad mai or bhen waldain kay ghum ma hamisha baraber ky hissa dar hoty hn

🔥🔥🔥🔥

○●○●○●○●○●○●○●

جب تمہارے گھر رزق میں تنگی محسوس ہونے لگے تو اپنی بہنوں اور بیٹیوں کو دعوت پہ بلا لیا کرو

Jab tumhary ghar ma tizq mai tangi mahsos honay lagy to 

Apni bhano ko or batiyon ko dawat bula liya karo

○●○●○●○●○●○●○●

بھائیوں کے حق میں مانگی ہوئی بہنوں کی دعا کبھی رد نہیں ہوتی

Bhayion ky haq ma mangi hoi bhano ki dua kabhi raad nae hoti

○●○●○●○●○●○●○●

ماں باپ کے دم تک ہی رہی گھر میں محبت 

پھر بھائیوں نے خون کا رشتہ بھی نہ رکھا

Maa baap kay dum tak hi rahi ghar mai muhabat 

Phir bhayion ny khoon ka rista bhi na rakha

🤐🤐🤐

○●○●○●○●○●○●○●

میرا بھائی میری جان ہے 

اے خدا 

میرے بھائی کو ہمیشہ خوش رکھنا

Mera bhai mari jan hai 

Ay khudaha

Meray bhai ko hamisha khush rakhna

○●○●○●○●○●○●○●

‏ماں باپ کے بعد اگر سب سے زیادہ جو دعائیں دیتا ہے وہ رشتہ بہنوں کا ہوتا ہے بہن گھر پر آئے یا آپ بہن کے گھر جائیں اور بہن کے سر پر ہاتھ رکھیں اور وہ آپ کو دل سے دعائیں دے اس کیفیت کو لفظوں میں بیان کرنا مشکل ہے اللہ سب کی بہنوں کو سلامت رکھے آمین

Maa bapp kay bad ager sab say zayda jo dunayin det ha wo risthah behanon ka hota ha bahan  ghar par aya ya ap nehan. Kay ghr jyain or behan ky sir par hat rakhyin or wo ap ko dill sy duayin day is kafiyat ko lafzon mai beyan karna muskil hai Allah sab ki bhano ko salatam rakhy

○●○●○●○●○●○●○●

دنیا میں بھائی بڑے ہوں یا چھوٹے



بہنوں کا غرور ہوتے ہیں

Duniya ma bhai choty hon ya baray 

Bhano ka garoor hotay hain 

 

○●○●○●○●○●○●○●

یا اللہ میرے بہن بھائیوں کو ہمیشہ خوش رکھنا ان کو کبھی کسی کا محتاج نہ کرنا آمین

Ya Allah meray behan bhayion ko hamisha khush ralhna in ko kabhi kisi mhataj na rakhna Ameen

 

○●○●○●○●○●○●○●

بہنوں والے دوسروں کی بہنوں سے نہیں کھیلتے

Bhano waly dosray ki bhano say nae khailty

○●○●○●○●○●○●○●

بھائی والدین کے جائیداد میں اور بہن والدین کے غم میں ہمیشہ برابر کے حصہ دار ہوتے ہیں

Bhai waldain ki jaidad ma or bhanyin waldain ky hum mai hamidha baraber ky hissay daar hoty hn

○●○●○●○●○●○●○●

ایسے رشتے جو جنگلیوں کی طرح لڑتے ہوئے نظر آئیں اور تھوڑی دیر بعد ایک دوسرے کے لئے جان بھی دینے کے لئے تیار ہو اسے بھائی بہن کہتے ہیں

○●○●○●○●○●○●○●

میرے حصے کی وراثت بھی توں رکھ لے بھائی 

صحن کے بیچ میں دیوار نہیں چاہتا میں

Meray hissay ki warast bhi ton rakh lay bhai 

Sehan kay beech mai dewae nae chata ma

○●○●○●○●○●○●○●

بہن چھوٹی ہو یا بڑی اپنے بھائی کا ہمیشہ خیال رکھتی ہے

Behan choti ho ya bari apny bhai ka hamisha khayal rakhti ha

○●○●○●○●○●○●○●no

میرا فخر میرے بھائی 

میرا غرور میرے بھائی 

میرا مان میرے بھائی 

اے اللہ میرے بھائیوں کو صحت والی لمبی زندگی عطا فرما

Mera fakhar meray bhai

Mera garoor meray bhai

Mera maan meray bhai

Ay Allah meray bhayion ko sehat wali lambi zindagi ata farma

💫🙏🤲🏻

○●○●○●○●○●○●○●

ایسے رشتے جو جنگلیوں کی طرح لڑتے ہوئے نظر آئیں اور تھوڑی دیر بعد ایک دوسرے کے لئے جان بھی دینے کے لئے تیار ہو اسے بھائی بہن کہتے ہیں

Asay risty jo jangliyon ki trha larty nazar ayin or thori dair bad ak dosry kay liya jan bhi deny kay kiya tyar ho isay bhai behan khatay hn

○●○●○●○●○●○●○●

عید کے موقع پر اپنی بہنوں کے گھر جایا کرو 

کیونکہ ان کو بڑی اٙس ہوتی ہیں کہ اس کا بھائی آئے گا

Eid ky moka par apni behan ky ghar jaya karo 

Kun ky in ko bari aas hoti hain ky is ka bhai aya ga

○●○●○●○●○●○●○●

‏سچے رشتے کچھ نہیں مانگتے سوائے وقت اور عزت کے

Suchay ristay kuch nae mangty sawaya waqat or izzat

○●○●○●○●○●○●○●

بھائی کیوں ناراض ہو ہم سے

ہم تو آپ سے بولتے ہیں

آپ کے علاوہ کون ہے ہمارا

آپ ہی ناراض ہو گۓ تو کون بولے گا ہم سے

Bhai q naraz ho hum say

Hum to ap say bolty hin 

Ap kay alawah kon hai hamara

Ap hi naraz ho gaya to kon boly gaa hum say

○●○●○●○●○●○●○●.

‏جب بھائی آرام سے نرم لہجے میں پیاری سی بہن کہہ کر پکارے تو ہوشیار ہو جائیں

آپ کی جمع پونجی ادھار کے نام پر ضبط ہونے والی ہے 

Jab bhai aram say naram lahjay mai payari si behan kha kar pukaray to hosiyar ho jayin

Ap ki jama ponji odhar kay naam par zabat hony wali hai

 

○●○●○●○●○●○●○●

بڑی بہنیں پریوں کی طرح ہوتی ہیں 

اپنی چھوٹی بہن کی ہر خواہش کو پورا کرتی ہیں 

Bari bhanyin pariyon ki tarha hoti hain

Apni choti behan ki har khawaish ko pora krti hain

○●○●○●○●○●○●○●

میرا بھائی میری جان ہے

اے خدا

میرے بھائی کو ہمیشہ خوش رکھنا آمین

Mera bhai mari jan hai 

Ay khudaha

Meray bhai ko hamisha khush rakhna

○●○●○●○●○●○●

بہن بھائیوں کی لڑائی کے بعد پہلے امی سب کو مارتی ہیں پھر معلوم کرتی ہیں کہ غلطی کسی کی تھی اور اس کو ایڈیشنل مارتی ہیں

○●○●○●○●○●○●○●

میرے حصے کی وراثت بھی توں رکھ لے بھائی 

صحن کے بیچ میں دیوار نہیں چاہتا میں

Meray hissay ki warast bhi ton rakh lay bhai 

Sahan kay beech mai dewae nae chata ma

 

○●○●○●○●○●○●○●

بھائیوں کو تنگ کرنے میں جو مزا ہے 



وہ کسی اور کو تنگ کرنے میں نہیں 

Bhaiyon ko tang karany ma jo maza hai 

Wo kisi or ko tang karny ma nae

 

○●○●○●○●○●○●○●

Badnam Poetry in Urdu

میں صرف اس کی ذمہ دار ہوں جو میں نے کہا 

اس کی نہیں جو آپ سمجھیں 

Ma sirf us ki zinaydar hoon jo ma nay kaha

in ki nahi jo ap samjhain

○●○●○●○●○●○●○●

یوں ہی نہیں میں تیرے عشق میں بدنام

مجھے میسر ہے اس بدنامی میں سکون اپنا

Youn hi nahi ma taray ishq ma badnam

mujhy mayasar hay is badnamii ma sakoon apna

○●○●○●○●○●○●○●

ہمیں تو پیار کے دو لفظ بھی نصیب نہیں ہوئے 

اور بدنام ایسے ہوئے جیسے عشق کے بادشاہ تھے ہم 

hamay to pyar kay doo lafzz be naseeb nahi hovat

or badnam asy hovay jasay ishq kay badshaa thay ham

○●○●○●○●○●○●○●

نہ کامیاب ہوتا ہے نہ ناکام ہوتا ہے 

آدمی عشق میں بس بدنام ہوتا ہے

Naa kamyab hota hay naa kam hota hay

admii ishq ma bass badnam hota hay

○●○●○●○●○●○●○●



ہم تو برے تھے برے ہیں برے ہی رہیں گے 

فکر تو وہ کریں جو بولتے کچھ ہیں 

کرتے کچھ دکھاتے کچھ اور ہوتے کچھ ہیں

ham to buray thay buray hain buray he rahain gain

fikar to wo karain jo boltay kuch hain

karty kuch dekhtay kuch or hotay kuch hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

بس کر دیا اب نظریں جھکا کر نظر انداز کرنا

اب زبان کھینچ لیں گے کردار پر انگلی اٹھائی تو

 

bas kar deya ab nazrain jhukaa kar nazar andaz karna

ab zuban khench lain gay kardar par unglii uthai too

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏یہ میرا فرض بنتا ہے میں اُس کے ہاتھ دھلواؤں 

سنا ہے اُس نے آج میری ذات پہ کیچڑ اچھالا ہے

ya mera farzz banta hay ma us kay hath dhulwaa

suna hay us nay aj mari zaat pay keechar ujhala hay

○●○●○●○●○●○●○●

مجھ کو برا کہتے ہو

زمانہ نہیں دیکھا تم نے

mujh ko bura kehty ho

zamana nahi dekha tum nay

○●○●○●○●○●○●○●

جو کبھی محفلوں میں ذلیل کیا کرتے تھے 

وہی لوگ اب تنہائی میں سلام کو ترستے ہیں

jo kabi mehfilon ma zaleel karty thay

wohi log ab tanhai ma salam ko tarsatay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

کسی کی طرف انگلی اٹھانے والوں باقی انگلیوں کا رخ تو دیکھ لو کس کی طرف ہے

kisi ki tarf unglii uthany walon bakii ungliyon ka

rukh to dkh lo kis kibtaraf hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہم بھی تمہیں ستانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

تمہارا دل دکھانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

ہمیں بدنام کرتے پھرتے ہو اپنی محفل میں

اگر ہم سچ بتانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

ham be tumay satany par utar aayn to kya ho ga

tumara dill dukhany par utar ayn to kya ho gaa

hamay badnam karty phirty ho apni mehfil ma

agar ham sach batany par utar ayn to kya ho gaa

○●○●○●○●○●○●○●

کرنے دو جو بکواس کرتے ہیں 

ہمیشہ خالی برتن ہی آواز کرتے ہیں

karny do jo bakwas karty hain

hamasha khalii bartan hi awaz karty hain

 

○●○●○●○●○●○●○●



ہم نے تو پھونک پھونک کر رکھا تھا ہر قدم 

موسم ہی اپنے شہر میں رسوائیوں کا تھا

ham nay to phonk kar rakha tha har qadam

misam he apny sehar ma raswayion ka tha

 

○●○●○●○●○●○●○●

خیر بدنام تو پہلے بھی بہت تھے لیکن

تجھ سے ملنا تھا کہ پر لگ گئے رسوائی کو

khairr badnam to pehlay be bohat thay lakin

tujh say milnay tha kay par lag gay ruswai ko

 

○●○●○●○●○●○●○●

یہ پارسا لوگ مجھ جیسا گنہگار پے 

طنز نہ کریں تو مر جاٸیں

 Ya parsa log mujh hesa ghunaghar pay

tanzz na karain to mar jainn

○●○●○●○●○●○●○●

تمہیں ہم بھی ستانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

تمہارا دل دکھانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

ہمیں بد نام کرتے پھرتے ہو اپنی محفل میں

ہم اگر سچ بتانے پر اتر آئے تو کیا ہوگا

tumay ham satany par utar aayn to kya ho gaa

tumra dill dukhanay par utar aayn to kya ho gaa

hamy badnam karty phirtay ho apni mehfil ma

ham agar sach batany par utar aayn to kya ho gaa

 

○●○●○●○●○●○●○●

تو بدنام کر کے تو دیکھ مجھے محفل میں قسم سے 

مشہور میں شھر میں تجھے بھی نا کر دوں تو کہنا

tu badnam  kar kay to dakh mujh mehfil ma kisam say

mushoor ma sehar ma tujhy be na kar don to kehna

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں بدنام نہیں کرتا سارے راز چھپا لیتا ہوں 

کوئی پوچھے اس کے بارے ميں ہلکا سا مسکرا دیتا ہوں

ma badnam nahi karta saray razz chupa leta hon

koi pochay is kay baray ma halka sa muskura deta hon

 

○●○●○●○●○●○●○●

یوں الزام تراشیوں سے بہتر تھا 

ہم کتنے برے ہیں ہم سے ہی پوچھ لیتے

Youn ilzam tarashon nay behtar tha

ham kitny buray hain ham say he poch latay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہماری افواہ کا دھواں وہیں سے اٹھتا ہے 

جہاں ہمارے نام سے آگ لگ جاتی ہے

Hamari afwaa ka dhuwa wahi say uthta hay

jahan hanaray nam say aagh lag jati ha

 

○●○●○●○●○●○●○●

لذت غم بڑھا دیجئے آپ پھر مسکرا دیجئے 

میرا دامن بہت صاف ہے کوئی تہمت لگا دیجئے

Lazat gham barha dejeya ap phr muskura dejeya

mari daman bohat saf hay koi tohmat laga dehejeya

 

○●○●○●○●○●○●○●

جس کی کامیابی روکی نہیں جاسکتی 

اس کی بدنامی شروع ہو جاتی ہے

Jis ki kamyabi roku nahi jaa sakti

us ku badnami suro ho jati ha

 

○●○●○●○●○●○●○●

اتنے برے تو نہ تھے ہم جتنے الزام لگائے لوگوں نے 

بس کچھ مقدر برے تھے کچھ آگ لگائی اپنوں نے 

Itnay buray to na thay ham jitna ilzam lagay logo nay

bas kuch muqadar buray thay kuch aagh lagai apno nay

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏غیروں کو کیا پڑی ہے کہ رسوا کریں مجھے

ان سازشوں میں ہاتھ کسی آشنا کا ہے

Ghairon ko kya pari ha k ruswa karain mujhy

is Sazashon ma hath kisi aashana ka hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏محبت کرنے والے بڑے نادان ہوتے ہیں 

حاصل کچھ نہیں ہوتا مگر بدنام ہوتے ہیں

Mohabat karny walay baray nadan hotay hain

hasil kuch nahi hota magar badnam hotay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں نے پھر ویسا ہی بنا لیا خود کو 

جیسا ہونے کا الزام لگایا تھا اس نے

ma nay phir wesa be bana leya khud ko

Jesa honay ka ilzam lagay tha us nay

 

○●○●○●○●○●○●○●

روٹھے ہو تو مجھ پر کوئی تہمت نہ لگانا

کس کس کو بتاوں گا میں ایسا تو نہیں ہوں



Roothay hovay to mujh par koi tohmat na lagana

kis kis ko baton ga ma asa to nahi hon

 

○●○●○●○●○●○●○●

جس نے جیسا سوچ لیا ہم ویسے ہیں باقی میرا رب جانتا ہے ہم کیسے ہیں 

jis nay jesa socha leya

ham wasy hain

baki mera Rab janta ha

Ham kasay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

کہاں سے لاوں اپنے جیسا بد کردار

یہاں تو سب فرشتے بنے بیٹھے ہیں

kahan say layon apnay jesa bad qardar

yahan to sab farustay bany bathay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

احسان یہ رہا تہمت لگانے والوں کا مجھ پر 

اٹھتی انگلیوں نے مجھے مشہور کردیا

Ehsan ya raha tuhmat lagany walyon ka mujh par

uthi ungliyn nay mujhy mushoor kar deya

 

○●○●○●○●○●○●○●

کبھی کبھی آپ بنا کچھ غلط کیۓ بھی برے بن جاتے ہیں

کیونکہ جیسا لوگ چاہتے تھے آپ ویسا نہیں کرتے

kabi kabi aap bina kuch galat keyan b buray ban jatay hain

kuy kay

jesa log chahty thay ap wesa nahi karty

 

○●○●○●○●○●○●○●

الزام و تہمت لگانے والے بہت ہیں 

میں بھی مطمئن ہوں کہ خدا سب دیکھ رہا ہے 

ilzam e tohmat lagany waly bohat hain

ma be mutmain hon kay khuda sab dakh raha ha

 

○●○●○●○●○●○●○●

دنیا طعنے دے گی تم کو 

دور رہا کرو 

بگڑے ہوئے لوگ ہیں ہم

duniya tanay day gii tum ko

dour raha karo

bigray hovay log hain ham

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏کوشش بہت کی راز محبت بیاں نہ ہو 

ممکن کہاں ہے آگ لگے اور دھواں نہ ہو

koshish bohat ki raz Mohabat beyan naa ho

mumkin kahan hay aagh lagay or dhuwa na hoo

 

○●○●○●○●○●○●○●

کبهی آ کے تهوڑا وقت میرے ساتھ گزار 

جتنا تو نے سنا ہے اتنا برا نہیں ہوں میں

kabi aa kay thora waqt maray sath guzar

jitna to nay suna ha itna bura nahi hon ma

 

○●○●○●○●○●○●○●

تماشے سب یہاں عشق ہی نہیں کرتا

اس پیٹ نے بھی دی ہیں رسوائیاں بہت

Tamasahy sab yahan ishq he nahi karta

is pait nay b di hain ruswayian bohat

 

○●○●○●○●○●○●○●

بدنام زمانہ ہم پر کچھ بهی الزم لگائے

ہم تو جیتے ہیں آخرت میں کامیاب ہونے کیلئے

badnam zamana ham par kuch be ilzam lagay

ham to jeetay hain aakhrat ma kamyab honay kay leya

 

○●○●○●○●○●○●○●

گمنام زندگی بہتر ہے

نام میں بھی بدنامی ہے

Ghumnam zindagi behtar ha

nam ma be badnami hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں زمانے میں بدنام فقط اس لیے ہوں 

مجھے دنیا کی طرح بدل جانا نہیں آتا

Ma zamany ma badnam faqat is keya hon

mujhu duniya ku tarah badal jana nahi aata

 

○●○●○●○●○●○●○●

کھلی کتاب تھی ساری ہی زندگی میری 

پڑھا کسی نے نہیں تبصرے بہت سے ہوئے

khuli katab thi sari he zindagi mari

parha kisi nay nahi tabsaray bohat say hovay

 

○●○●○●○●○●○●○●

اگر لوگ یونہی خامیاں نکالتے رہے مجھ میں 

تو ایک دن صرف خوبیاں رہ جائیں گی

agar log yon hi khamiyan nikalray rahy mujh ma

to ak din surf khubiyan reh jain gii

 

○●○●○●○●○●○●○●

ناکامیوں نے اور بھی سرکش بنا دیا

اتنے ہوئے ذلیل کہ خوددار ہوگئے

Na kamiyon nay or be sar kash bana deya

itnay hovay zaleel kay khud dar ho gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

جن کی خاطر شہر بھی چھوڑا جن کے لیے بدنام ہوئے

آج وہی ہم سے بیگانے بیگانے سے رہتے ہیں

jin ki khatir sehar be chora jin kay leya badnam hovay

aj wohi ham say beganay beganay say rehtay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

سب جرم میری ذات سے منسوب ہیں 

کیا میرے سوا اس شہر میں معصوم ہیں سارے

Sab jurm mari zat say mansoob hain

kya maray sawa is sehar ma  masoom hain saray

 

○●○●○●○●○●○●○●

آوارگی چھوڑ دی تو بھولنے لگی دنیا

بدنام تھے تو اک نام تھا اپنا

Awargii chor di to boonay lagi dunia

badbam thay to ak nam tha apna

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏غیروں کو کیا پڑی ہے کہ رسوا کریں مجھے

ان سازشوں میں ہاتھ کسی آشنا کا ہے

Ghairon ko kya pari hay kay ruswa karain mujhy

in shazason ma hath kisi aasna ka hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

مت پوچھ میرےنام کی پہچان کہاں تک ہے

تو بدنام کر تیری اوقات جہاں تک ہے

mat poch maray nam ki pehchan kahan tak hay

to badnam kar tari okat jahan tak. Hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

منسوب اس کے قصے اوروں سے بھی تھے 

لیکن وہ بات بہت پھیلی جو بات چلی ہم سے



Munsoob us kay kisay oron say be thay

lakin wo bat bohat phali jo bat chali ham say

 

○●○●○●○●○●○●○●

پیار کیا تو بدنام ہو گئے

چرچے ہمارے سر عام ہو گئے

ظالم نے دل بھی اسی وقت توڑا

جب ہم اس کے پیار کے غلام ہو گئے

Pyar keya to badnam ho gay

charcha hamara sar aam ho gaya

zalim nay dill be isi waqt tora

jab ham is kay pyar kay ghulam ho gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہر شخص کی جوانی پر الزام ہوتا ہے 

لاکھ نظریں پاک ہو جوان بدنام ہوتا ہے

Har sakhs ki jawani par ilzam hota hay

lakh nazrain pak ho jawan badnam hota hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

اگر لوگ یونہی خامیاں نکالتے رہے مجھ میں 

تو ایک دن صرف خوبیاں رہ جائیں گی

agar log youn hi khamiyan nikaltay rahy mujh ma

to ak din sirf khobiyan reh jain gii

 

○●○●○●○●○●○●○●

ناکامیوں نے اور بھی سرکش بنا دیا

اتنے ہوئے ذلیل کہ خوددار ہوگئے

Nakamiyon nay or be sarkash bana deya

itna hovay zalil kay khud dar ho gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

جن کی خاطر شہر بھی چھوڑا جن کے لیے بدنام ہوئے

آج وہی ہم سے بیگانے بیگانے سے رہتے ہیں

jin ki khatir sehar be chora jin kay leya badnam hovay

aj wohi ham say begany beganay say rehtay hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

سب جرم میری ذات سے منسوب ہیں 

کیا میرے سوا اس شہر میں معصوم ہیں سارے

Sab juram mari zaat say munsoob hain

kya maray sawa is sehar ma masoom hain saray

 

○●○●○●○●○●○●○●

آوارگی چھوڑ دی تو بھولنے لگی دنیا

بدنام تھے تو اک نام تھا اپنا

Awargii chor di to bolnay lagi duniya

badnam thay to ak nam tha apna

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏غیروں کو کیا پڑی ہے کہ رسوا کریں مجھے

ان سازشوں میں ہاتھ کسی آشنا کا ہے

ghairon ko kya pari hay kay ruswa karain mujhy

in Shazon ma hath kisi asnaa ka hay

○●○●○●○●○●○●○●

مت پوچھ میرےنام کی پہچان کہاں تک ہے

تو بدنام کر تیری اوقات جہاں تک ہے

Mat poch maray nam ki pehchan kahan tak hay

to badnam kar tari okat jahan tak hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

منسوب اس کے قصے اوروں سے بھی تھے 

لیکن وہ بات بہت پھیلی جو بات چلی ہم سے

Munsoob is kay qusay oron say be thay

lakin wo bat bohat phelu jo bat chali ham say

 

○●○●○●○●○●○●○●

پیار کیا تو بدنام ہو گئے

چرچے ہمارے سر عام ہو گئے

ظالم نے دل بھی اسی وقت توڑا

جب ہم اس کے پیار کے غلام ہو گئے

Pyar keya to badnam ho gay

charcha hamara sar aam ho gaya

zalim nay dill be isi waqt tora

jab ham is kay pyar kay ghulam ho gay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہر شخص کی جوانی پر الزام ہوتا ہے 

لاکھ نظریں پاک ہو جوان بدنام ہوتا ہے

Har sakhs ki jawani par ilzam hota hay

lakh nazrain pak ho jawan badnam hota hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏خود سے ملنے کی بھی فرصت نہیں مجھے

اور وہ اوروں سے ملنے کا الزام لگا رہے ہیں

khud say milnay ki be fursat nahii mujhy

or wo oron say milnay ka ilzam laga rahy hain

○●○●○●○●○●○●○●

ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﺗﻨﯽ ﺧﺎﻣﯿﺎﮞ ﻧﮑﺎﻟﯽ ﮨﯿﮟ

ﮐﮧ ﺍﺏ مجھ ﻣﯿﮟ ﻓﻘﻂ ﺧﻮﺑﯿﺎﮞ ﮨﯽ ﺑﺎﻗﯽ ﮨﯿﮟ

logo nay itnii khamiyanbnikali hain

kay ab kujh ma faqt khamiyan he baki hain

 

○●○●○●○●○●○●○●

اچھا کرتے ہیں وہ لوگ جو اظہار نہیں کرتے

مر تو جاتے ہیں پر کسی کو بدنام نہیں کرتے

acha karty hain wo log jo izhar nahi karty

mar to jatay hain par  kisi ko badnam nahi karty

 

○●○●○●○●○●○●○●

غیروں سے کہا تم نے غیروں سے سنا تم نے

کچھ ہم سے کہا ہوتا کچھ ہم سے سنا ہوتا.

Ghairon say kaha tum nay ghairon say suna tum nah

kuch ham say kaha hota kuch ham say suna hota

 

○●○●○●○●○●○●○●

‏ﮨﻢ ﻧﮯ ﭘﮍﮬﯽ ﮨﯿﮟ ﺻﺎﻑ ﺻﺎﻑ ﮨﻢ ﻧﮯ ﺳﻨﯽ ﮨﯿﮟ ﻏﻮﺭ ﺳﮯ



ﻧﻈﺮﯾﮟ ﮐﮧ ﺟﻮ ﺍﭨﮭﯿﮟ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺎﺗﯿﮟ ﮐﮧ ﺟﻮ ﮨﻮﺋﯽ ﻧﮩﯿﮟ

Ham nay parhi hain saaf ham nah suni hain ghor say

narzain kay jo uthain nahi batain kay jo hoie nahii

 

○●○●○●○●○●○●○●

اگر دنیا میں رہنا ہے تو راز کسی کو مت دینا

یہ دنیا اک نقارہ ہے تجھے بدنام کر دے گی

Agar duniya ma rehna hay tobrazz kisi ko mat dena

ya duniya ak nakara hay tujhy badnam kar day gii

 

○●○●○●○●○●○●○●

میں وہ بدنام محبت ہوں جدھر جاوں زمانے میں

نگاہیں خلق کی اٹھتی ہیں مجھ پر انگلیاں بن کر

ma badnam Mohabat hon jidgar joy zamanay ma

nighain khalaq ki uthii hain mujh par ungliyn ban kar

 

○●○●○●○●○●○●○●

کوئی تو ہو جو مجھے سرعام برا کہے 

میں بھی دیکھوں حمایت کون کون کرتا ہے.

 

Koi to hoo jo mujhay sar aam bura kahay

ma be dakhaon hamayat kon kon karta hay

 

○●○●○●○●○●○●○●

ہمارے کردار کے داغوں پہ طنز کرتے ہو 

ہمارے پاس بھی آئينہ ہے دکھائيں کیا؟

Hamaray kardar kay daghon pay tanz karty ho

hamaray pass be aina hay dekhainn  kya ?

 

○●○●○●○●○●○●○●

مجھے بدنام کرنے کے بہانے ڈھونڈتے ہو کیوں 

میں خود ہو جاؤ گا بدنام پہلے نام ہونے دو

mujhy badnam karny kay bahanay dhondtay ho kuy

ma khud ho joy gaa badnam pehlay nam hony doo

 

○●○●○●○●○●○●○●

تم اپنی اچھائی میں مشہور رہو

ہم برے ہیں ہم سے دور رہو

tum apni achai ma mashoor rahoo

ham buray hain ham say dour raho

 

○●○●○●○●○●○●○●

یوں سرعام مجھے ملنے بلایا نہ کرو



لوگ کر دیتے ہیں بدنام زمانے بھر کے

youn sar aam mujhy milnay bulaya na karo

log kar datay hain badnam zamany bharr kay

○●○●○●○●○●○●○●

دیکھ میں ہو گیا بدنام کتابوں کی طرح

میری تشہیر نہ کر اب تو جلا دے مجھ کو

dakh ma hovgaya badnam kitabon ki tarah

mari tashbeer na kar ab to jala day mujh ko

 

○●○●○●○●○●○●○●

Intezar Poetry in Urdu

انتظار ایک اذیت ہے

پھر چاہے ہاتھ میں موبائل پکڑے کسی کے مسیج کا ہو

چوکھٹ پر بیٹھے کسی کے لوٹ آنے کا ہو بستر پر لیٹ کر نیند کا ہو یا زندگی سے ہار کر موت کا ہو

 

intezar aik ezayt hay

phir chahay hath ma Mobile paray kisi kay message ka hoo

chokhat par bathay kisi kay lout anay ka ho

bistar par lait neend ka ho

ya zindagi say har kar moat ka ho

 

………………….

زخم اتنے گہرے ہیں اظہار کیا کریں

ہم خود بن گئے نشانہ وار کیا کریں

ہم مر گئے مگر کھلی رہی آنکھیں

اس سے زیادہ ہم اس کا انتظار کیا کریں



zakhm itnay gehray hain izhar kya karain

ham khud ban gay nishana war kya karain

ham mar gay magar khuli rahi ankhain

is say zayda ham is ka intezar kya karain

 

………………….

مجھے بھی سکھا دے یوں نظرانداز کرنے کا ہنر 

میں تھک گٸ ہوں ہر لمحہ ہر سانس تیرے انتظار میں

mujhay br sekha day youn nazar andaz karny ka hunar

ma thak gai hon har lambay har  sans taray intezar ma

 

 ………………….

تیرے آنے کی کیا امید 

مگر کیسے کہہ دو انتظار نہیں 

 

taray aany ki kya uneed

magar kasay keh don Intezar nahi

 

………………….

مڑ کر دیکھنے کی جرات وہی کرتا ہے 

جس کو یہ یقین ہو کہ پیچھے کوئی منتظر ہوگا

Murckar dakhny ki jurat wohi karta hay

jus ko ya yaqeen ho kay oeechyvkoi muntazir ho gaa

………………….

آنکھیں رہتی ہیں شام و سحر منتظر تیری

آنکھوں کو سونپ رکھا ہے انتظار تیرا

 

ankhain rehti hain shamo e sehar muntazir tari

ankhon ko sounp rakha hay intezar tera

 

………………….

ہم تڑپتے ہیں اس کی یادِ میں 

روتے ہیں فریاد میں 

اے خدا ایک بار اسے ملا دے 

کہیں ایسا نہ ہو ہم مر جائے اس کے انتظار میں 

 

Ham tarpatay hain us ki yad may

ritay hain faryad may

Aay Khuda

Ak bar usy mila day

kahi asa naa ho ham mar jain us kay intezar ma

 

………………….

انتظار کتنا جان لیوا ہوتا ہے 

کبھی خود کا واسطہ پڑے تو بتانا

Intezar kitna jan lewa hota hay

kabi khud ka wasta paray to batana

………………….

انتظار ایک ایسی چیز ہے کہ انسان خود کرے تو اسے برا لگتا ہے اور اگر کوئی اس کے لیے کرے تو اسے اچھا لگتا ہے

intezar ak aasi cheez hay kay insan khud karay to isy bura lagta hay

or

agar koi is kay leya karay to isay acha lagta hay

 

………………….

ﺍﺏ ﺗﻮ ﺩﯾﻤﮏ ﺑﮭﯽ ﮐﮭﺎ ﮐﺮ ﭼﮭﻮﮌ ﮔﺊ

ﺗﯿﺮﯼ ﺩﺳﺘﮏ ﮐﮯ ﻣﻨﺘﻈﺮ ﺩﺭﻭﺍﺯﻭﮞ ﮐﻮ

Ab to demak be khaa kar chor gaii

tari dastak kay mubtazir darwazon ko

………………….

مت ڈھونڈھ اندھیروں میں کچھ پائیگا نہیں

اس کا بھی کیا انتظار کرنا جو کبھی آئیگا ہی نہیں

mat dhond andhron ma kuch payga nahi

is ka be kya intezar karna jo kabi aayn gaa  he nahi

………………….

دوستی دو لوگ کرتے ہیں مگر 

انتظار کسی ایک کے حصے میں آتا ہے

dostii do log karty hain magar

intezar kusi aik kay hisay ma aata hay

………………….

انتظار کتنا جان لیوا ہوتا ہے 

کبھی خود کا واسطہ پڑے تو بتانا

intezar kitna jan lewa hota hay

kabi khud ka wasta paray to batana

………………….

کوئی کسی کا منتظر نہیں ہوتا 

ہم خود کو فقط بیوقوف بناتے ہیں

koi kisi ka muntazir nahi hota

ham khud ko faqt batwaqoof banatay hain

………………….

تیری محبت پر میرا حق تو نہیں

پر دل چاہتا ہے آخری سانس تک تیرا انتظار کروں 

tari muhabat par mera haq to nahi

par dill chahta hay aakhiri sans tak tera intezar karon

………………….

میں ہار گیا ستاروں سے انتظار میں 

وہ دن کا انتظار کرتے رہے میں تیرا

ma harr gaya sitaron say intezar ma

wo din ka intezar karty rahy ma tera

………………….

انتظار تو ہم تیرا ساری عمر کر لے گے

بس خدا کرے تو بے وفا نا نکلے

Intezar to ham tera sari umar kay lain gay

bass khuda karay tu baywafa na niklay

………………….

اس کا انتظار ہم نے کچھ یوں کیا 

کہ جب وہ آیا تو موت نے ہمارا انتظار کرنا چھوڑ دیا



Us ka intezar ham nay kuch yon keya

kay jab wo aya to moat nay hamara intezar karna chor deya

………………….

اس انتظار سے کیا گلا 

جو تیرے دیدار پہ ختم ہو

Is intezar say kya gilla

jo taray dedar pat khatam hoo

………………….

ساری زندگی تیرا انتظار کر لیں گے 

مگر یہ رنج رہے گا کہ زندگی کم ہے 

Sari zindagi tera intezar karvlain gay

magar ya rang rahy gaa kay zindagi kam hay

………………….

پیار کیا اگر کوئی میرے جتنا 

انتظار بھی کرے تو اس کے ہو جانا

Pyar keya agar koi mara jitna

intezar be karay to is kay ho jana

………………….

انتظار یار بھی لطف کمال ہے 

آنکھیں کتاب پر اور سوچیں جناب پر 

 

intezar yar be luft kamal hay

ankhain katab par ir sochain janab par

………………….

نه کسی کو دل دینا نہ کسی سے پیار کرنا 

میں ضرور لوٹ آوں گا صرف میرا انتظار کرنا

 

Na kisi ko dill dena na kisi say pyar karna

ma zaroor loat aayon gaa sirf mera intezar karna

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 

درد دیتا ہے اس کا کہـیں اور مصروف رہنا

intezar karna lakh muskil sahi

dard deya hay is ka kahi or masroof rehna

………………….

انتظار ہمیشہ رہے گا 

لیکن

آواز کبھی نہیں دوں گا

intezar hamasha rahy gaa

lakin

awaz kabi nahi don gaa

………………….

بس ایک شام کا ہر شام انتظار رہا 

مگر وہ شام کسی شام بھی نہیں آئی 

Bass ak sham ka har sham intezar raha

magar wo sham kisi sham be nahi aaie

………………….

شدید اتنا رہا تیرا انتظار مجھے 

کہ وقت منتیں کرتا رہا گزار مجھے

Shadeed itna raha tera intezar mujhy

kay waqt mintay karta raha guzara mujhay

………………….

انتظار تو ہم ساری عمر کر لیں گے تیرا 

بس خدا کرے کہ تو بیوفا نہ نکلے

intezar to ham sari umar kar lain gay tera

bass khuda karay tu baywafa naa nikaly

………………….

کاش تو بھی انتظار کرے میری طرح 

اور میں نہ آؤں تیری طرح

kash tu be intezar karay mari tarah

or ma na aayon tari tarah

………………….

برسوں بعد اس نے پوچھا کیا کرتے ہو 

میں نے کہا تمہارا لوٹ کر آنے کا انتظار

Barsoo bad is nay pocha kya karty ho

many kaha tumara loat kar aany ka intezar

………………….

کتنے نایاب ہوتے ہیں یہ محبتوں کے رشتے 

کوئی یاد نہ بھی کرے تو انتظار پھر بھی رہتا ہے 

Kitnay nayab hotay hain ya Mohabaton kay ristay

koi yad na b karay to intezar phir be rehta hay

………………….

اے رات چلی جا 

کیوں آئی ہے میری چوکٹ پر 

چھوڑ گئے وه لوگ جن کی یاد 

میں ہم تیرے آنے کا انتظار کرتے تھے

aay rat chali jaa

kuy aaie hay mari chokhat par

chor gay  wo log jin ki yad

may ham taray aany ka intezar karty thay

………………….

اپنی عمر گنوا دی میں نے 

اک تیرے انتظار میں

apni umar ghawa dii ma nay

ak taray intezar ma

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 



درد دیتا ہے اس کا کہی اور مصروف رہنا

intezar karna lakh muskil sahi

dard deta hay us ka kahi or masroof rehna

………………….

کہتے ہیں لوگ موت سے بدترین ہے انتظار

اپنی تو ساری عمر کٹی انتظار میں

kehtay hain log moat say battreen hay intezar

apni to sari umar katii intezar ma

………………….

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ

اور ہم انتظار کریں مسلسل

Zanii tum nazar andaz karo hamasha

or ham intezar karain musalsal

………………….

انتظار طویل ہو جائیں تو آنکھوں میں 

موجود رنگ پھیکے پڑنے لگتے ہیں

intezar taweel ho jayin to ankhon ma

majood rang pheekay parny lagtay hain

………………….

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو

intezar in ka keya jata hay

jis kay any ki koi uneed ho

………………….

میں نے رات ساری اس کی انتظار میں گزاری 

اور جب صبح وہ ملا تو سرخ آنکھوں کا سبب پوچھنے لگا

ma nay rat sari us ki intezar ma guzarii

or jab shuba wo mila to surkh ankhon ka sabab pochnay laga

………………….

اس نے ایک پل بھی رکنا گوارا نہیں کیا 

ہم ساری زندگی انتظار میں کھڑے رہے

is nay ak pal be rukna gawara nahi keya

ham sari zindagi intezar ma kharay rahy

………………….

آج وعدہ ہے اس کے آنے کا 

آج اٹکی ہے جان دستک پر

aj wada hay kisi kay any ka

aj atkaii hay jan dastak par

………………….

اے رات چلی جا 

کیوں آئی ہے میری چوکٹ پر 

چھوڑ گئے وه لوگ جن کی یاد 

میں ہم تیرے آنے کا انتظار کرتے تھے

aay rat chali jaa

kuy aaie hay mari chokhat par

chor gay  wo log jin ki yad

may ham taray aany ka intezar karty thay

………………….

اپنی عمر گنوا دی میں نے 

اک تیرے انتظار میں

apni unar ghawa di ma nay

ak taray intezar ma

………………….

انتظار کرنا لاکھ مشکل سہی 

درد دیتا ہے اس کا کہی اور مصروف رہنا

Intezar karna lakh muskil sahi

dard deta hay is ka kahi or musroof rehna

………………….

کہتے ہیں لوگ موت سے بدترین ہے انتظار

اپنی تو ساری عمر کٹی انتظار میں

kehtay hain log moat say battreen hay Intezar

apni to sari umar katii intezar may

………………….

یعنی تم نظر انداز کرو ہمیشہ

اور ہم انتظار کریں مسلسل

zanii tum nazar andaz karo hamasha

or ham intezar karain musalsal

………………….

انتظار طویل ہو جائیں تو آنکھوں میں 

موجود رنگ پھیکے پڑنے لگتے ہیں



Intezar taweel ho jayin to ankhon ma

majood rang phekay parny lagtay hain

………………….

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو

intezar in ka keya jata hay

jis kay any ka koi umeed ho

………………….

میں نے رات ساری اس کی انتظار میں گزاری 

اور جب صبح وہ ملا تو سرخ آنکھوں کا سبب پوچھنے لگا

ma nay rat sari is ki intezar ma guzarii

or jab shubawo mila to surkh ankhon ka sabab pochnay laga

………………….

اس نے ایک پل بھی رکنا گوارا نہیں کیا 

ہم ساری زندگی انتظار میں کھڑے رہے

Us nay aik pal be rukna gawara nahi keya

ham sari zindagi Intezar ma kharay rahy

………………….

آج وعدہ ہے اس کے آنے کا 

آج اٹکی ہے جان دستک پر

انتظار ان کا کیا جاتا ہے 

جس کے آنے کی کوئی امید ہو



aj wada hay us kay aany ka

aj atkii hay jan dastak par

intezar in ka keya jata hay

jis kay aany ki koi umeed ho

………………….

صبر اور انتظار میں پتہ کیا فرق ہے 

صبر خود کیا جاتا ہے اور انتظار کوئی کروا رہا ہوتا ہے

Sabar or intezar may pata kya farq hay

sabar khud kya jata hay or intezar koi karwa raha hota hay

………………….

Ansoo Poetry in Urdu

 

صبر کی حد بھی ہوتی ہے

کتنا کوئی پلکوں پے سنبھالے پانی

Saber ki b had hoti ha 

Kitna koi palkon pay sambhaly pani 

………………….

 

تمہیں کیا خبر آنکھوں میں بھرے آنسؤں کو وآپس حلق تک اتارنا اور پھر مسکرانا کس قدر اذیت دیتا ہے

Tumhay kiy akhaber ankhin mai bhary ansoyon ko wapas 

Halaq tak otarnay or phir muskrana kis qader aziyat deta h

………………….



آنسو کے بوجھ سے کہیں کشتی نہ ڈوب جائے

یہ سوچ کر کبھی روتا نہیں ہوں میں

Anso kay boaj say kahyin kashti na doob jaya 

Ya soch kar kbhi rota nae hon ma

………………….

تم تو لکھتے رہے میری آنکھوں پہ غزلیں

تم نے کبھی پوچھا نہیں کہ روتے کیوں ہو

Tum likhty rahy mari ankhon py gazlyin 

Tum ny kabhi pocha nae ky rotay kun ho 

………………….

جن کی قسمت میں رونا لکھا ہو

وہ مسکرائیں بھی تو آنسو نکل آتے ہیں

Jin ki qisamt ma rona likha ho 

Wo muskarayin bhi to anso nikal atay hn

………………….

جن ﺁنسوؤں کو ﺁنکھـوں سے بہنـے کـا رﺍستـہ نہیں ملتا 

وہ حلق میں کڑواہٹ گھول دیتـے ہیں

Jo ansoyon ko ankhon say bhanay ka rasta nae milta 

Wo halaq mau karwahat ghool detay hain

………………….

کتنی خاموش اس کی مسکراہٹ تھی 

شور بس آنکھ کی نمی میں تھا

Kitni khamoshi is ki muskaraht thi 

Shore bus ankh ki nami ma tha

………………….

کاش کوئی ہوتا جو ہمارے آنسوؤں کا بھرم رکھتا

یہاں تو ہر شخص نے رولانے کی قسم کھا رکھی ہے

Kasah koi hota jo hamary ansoyon ka bharm rakta 

Yahan to har shakas nay rolanay ki qasim kha rakhi ha

………………….

پانی سے بھری آنکھیں لے کر مجھے گھورتا رہا

وہ آئینے میں شخص پریشان بہت تھا

Pani say bahi ankhayin lay kar muja ghorta raha 

Wo ainay mai shakash preshan tha  

………………….

رات بھر سسکیاں لیتا ہے کوٸی شخص یہاں

کبھی دیوار سے لگ کر کبھی دروازے سے

Rat bahi siskiyan leta hai koi skhash yahan 

Kabhi dewar say lag kr kabhi darwazay say

……………….

آنسو میرے تھم جائیں تو پھر شوق سے جانا 

ایسے میں کہاں جاؤ گے برسات بہت ہے

Anso meray tham jayin to phir shoq say jana 

Isay ma kahan jayo gay barsat buht ha

………………….

تجھے بھلانا نہیں ممکن اس کا تقاضا نہ کیا کر 

آنکھیں اندھی بھی ہو جائیں تو آنسو رکا نہیں کرتے 

Tujay bhoolna nae mumkin isy taqazay na kiya kar 

Ankahyin andhi bhi ho jayin to anso tuka nae karty

………………….



ہم نے محبت میں ایسی بھی گزاری راتیں

جب تک آنسو نہ بہے دل کو آرام نہ آیا.

Hum nay muhabat ma asi bhi guzari ratayin 

Jab tak anso na bahay dill. Ko aram na aya

………………….

بہت جی چاہتا ہے شانوں پہ تیرے سر رکھ کر 

بہا ڈالوں وہ سب آنسو جو میرے دل میں چھبتے ہیں

Jab jee chata ha shano pay teray sir karh kar 

Baha dalin wo sab anso jo meray dill. Ma chubhaty hain 

………………….

خدا گواہ ہے ہم جب بھی محبوب کی یاد میں رو ئے 

نئے انداز سے تڑپتے نئے انداز سے روئے 

Khudha gawa hai hum jab bahi mahbob ki yad mai roya 

Naya andaz say yarpay naya andaz sy roya

………………….

مزا برسات کا لینا ہے تو ان پلکوں کے نیچے آ بیٹھو

وہ برسوں میں برستی ہے یہ برسوں سے برس رہی ہے

Maza betsat ka lena h to i. Palkon kay nechay a betjo 

Wo barson mai barsati hai ya barson say baras rai ha

 

………………….

کچھ لوگ ہوتے ہیں آنسوؤں کی طرح زندگی میں

پتہ ہی نہیں لگتا کہ ساتھ دے رہے ہیں یا ساتھ چھوڑ رہے ہیں

Kuch loag hoty hain ansoyon ki tarha zindagi mai 

Pata hi nae lagta kay djat day rahay hain ya sahat chore rahy hn

………………….

یوں حسرتوں کے داغ محبت میں دھو لیے

خود دل سے دل کی بات کہی اور رو لیے

Yoon hasraton kay daag muhabat mai dho liya 

Khud dill say dill ki bat khahi or ro liya

………………….

رونا تو ختم ہی نہیں ہوتا زندگی بھر 

آنسو سارے بہا کے بھی دیکھے ہیں 

Rona to khatm hi nae hota zindagi bhar 

Anso sary bha kay bhi dekahy hain

………………….

یہ ضروری تو نہیں ہر کوئی رو کے دیکھائے

خشک آنکھوں میں بھی سمندر ہوا کرتے ہیں

Ya zarori to nae har koi ro kay dekhaya 

Khushk ankhon mai bhi samander hoa karaty hn

………………….

لگتا ہے تعلق نہیں توڑا ابھی دل نے

یہ آنکھ تیرے نام سے بھر آتی ہے

Lagta hai taluq tora abhi dill nay 

Ya ankah teray naam say bhar ati hai

………………….

ہم بھی دنیا میں امیر ہوتے

اگر ہمارے آنسوں کی کوئی قیمت ہوتی

Hum bhi duniya mai ameer hotay 

Ager hamray anso ki koi qimat hoti

………………….

آنسوں کی ضمانت بھی جہاں کام نہ آئی

وہ شخص لفظوں کا یقین کیا خاک کرے گا؟

Ansoyon ki zamanat bhi jahna kam na ayi 

Wo shkahs lafzon ka yaqeen kiya khak kary ga

………………….

میں تو اس وقت سے ڈرتا ہوں کہ وہ پوچھ نہ لے

یہ اگر ضبط کا آنسو ہے تو ٹپکا کیسے

Mai to is waqat say darta hon ky wo poch na lay 

Ya ager zabat ka anso hai to tapkata kesay

………………….

کبھی تمہارے سامنے رو پڑوں تو سمجھ لینا

یہ میری بے بسی کی آخری حد تھی

Kabhi tumhary smany ro paron to smja lena 

Ya mari bay basi ki akhari hd thi

………………….

ہزاروں غم سہے لیکن نا آیا آنکھ میں آنسو 



ہم اہل ظرف ہیں پیتے ہیں چھلکایا نہیں کرتے

Hazaron ghum sahhay laki na aya ankh ma anso 

Hum ahle zaraf hi. Petay hin chalkya nae karty

………………….

راہ تکتے ہوئے جب تھک گئیں آنکھیں میری 

پھر تجھے ڈھونڈنے میری آنکھ سے آنسو نکلے

Rah taktay jab thaq gayin ankahyi mari 

Phir tujay dhondaty mari ankh say anso niklay

………………….

کبھی کبھی انسان اتنا بےبس ہو جاتا ہے کہ 

امیدیں دعائیں یقین اور ہمت سب آنکھوں کے راستے بہنے لگتے ہیں 

Kabhi kabhi insan itna bybus ho jata h kay omeedyin duayin or himat sba ankhon kay rsaty bhany laghty hain

………………….

میں آنسو ہوں تم پتھر ہو تم آب کی طاقت کیا 

میں قطرہ قطرہ ٹپکوں گا تم ذرہ ذرہ بکھرو گے

Mai anso hon tum phater ho tum ab ki taqat kiya 

Mai qatra qatra tapkon ga tum zara zara bikro gay

………………….

بےشک رونے سے حالات بہتر نہیں ہوتے

مگر دل ضرور ہلکا ہو جاتا ہے

Beshak ronay say halat bhatter nae hoty 

Mager dill zaror halka ho jata ha

………………….

کتنے غرور میں ہے وہ مجھے چھوڑ کے

انہیں معلوم نہیں میرے آنسو مجھے تنھا ہونے نہیں دیتے

Kitnay garoor mai hai wo muja chore kay 

Inhinyin mallom nae meray aonso muja tanha hony nae detay

………………….

رونے سے اگر سنور جاتے حالات کسی کے 

تو ہم سے زیادہ کوئی خوش نصیب نہیں ہوتا

Ronay say ager sanwar jaty hlat kisi kay 

To hum say zayda koi khush naseeb nae hota

………………….

شکر ہے کہ آنسوں کا کوئی رنگ نہیں ہوتا ورنہ

صبح کہ اجالوں میں رنگین تکیے سب کے راز کھول دیا کرتے

Sukar hai kay ansonyon ka koi rang nae hota warna 

Subha ky ojalon mai rangeen takiya sab ky raz khol deiya karty

………………….

‏ٹھنڈے پانی میں پھینک کر آنسو

ہم نے دریا جلا دیے صاحب

Thanday pani mai ohank kar anso 

Hum ny darya jalla dia sahib

………………….

جانتے ہو روتے وقت آنسوں کیوں رم ہوتے ہیں 

کیونکہ اس وقت دل جل رہا ہوتا ہے

‏ٹھنڈے پانی میں پھینک کر آنسو

ہم نے دریا جلا دیے صاحب

Jnaty ho rotay waqat anson kun kam ho jaty han 

Kun kay is waqat dill jall raha hota hai 

Thanday pani mai phank kar anso 

Hum nay darya jalla diya sahib

 

………………….

تم نے چھوڑا جب سے آنسو پوچھنا

ہم کو رونے کا مزہ آتا نہیں

Tum ny chora jab say anso pochna 

Hum ko ronay ka maza ata nae

………………….

سچے پیار میں نکلے آنسو اور روتے ہوئے بچے کے آنسو ایک جیسے ہوتے ہیں 

کیونکہ دونوں کو پتا تو ہے کہ درد کیا ہے پر کسی کو بتا نہیں سکتے

 

Suchay payar mai niklay anso or rotay hoya bachay kau anso ak jesay hoty hain

Kun kay dono ko pata hi kay dard kiya ha par kisi ko bata nae skaty

………………….

‏موتی تو نہیں تھے کوئی پلکوں سے جو چنتا

ہم آنکھ سے ٹپکے ہوئے آنسو کی طرح تھے

Moti to nae thy koi palkon say jo chunta

Hum ankah say taptaky hoya anso ki tarha thay

………………….

مسکان بنائے رکھو تو سب ساتھ ہیں

ورنہ آنسو کو تو آنکھوں میں بھی پناہ نہیں ملتی

Muskan banya rakho to sav shat hain

Warna anso ko to ankhon mai bhi panah nae milti

………………….



کسی کو دیا گیا ایک آنسو عمر بھر کی عبادتوں پہ پانی پھیر سکتا ہے

Kisi ko dia gaya ak amso umar bhar ki ibadaton pay pani pair sakta ha

………………….

کتنے غرور میں ہے وہ مجھے چھوڑ کے

انہیں معلوم نہیں میرے آنسو مجھے تنھا ہونے نہیں دیتے

Kitnay garor mai hai wo mujay chore kay 

Inhhayin maloom nae meray anso muja tanha honay nae detay

 

………………….

رونے سے اگر سنور جاتے حالات کسی کے 

تو ہم سے زیادہ کوئی خوش نصیب نہیں ہوتا

Ronay say ager sanwar jaty halat kisi kay 

To hum say zayda koi khush naseeb nae hotay

………………….

شکر ہے کہ آنسوں کا کوئی رنگ نہیں ہوتا ورنہ

صبح کہ اجالوں میں رنگین تکیے سب کے راز کھول دیا کرتے

Sukar hai ky  anso ka koi rang nae hota warna 

Subha kay ojalaon mi rangeen takiyay sab kay raz khol diya karta

………………….

‏ٹھنڈے پانی میں پھینک کر آنسو

ہم نے دریا جلا دیے صاحب

Thanday pani mai phank kar anso 

Hum nay darya jala diya sahib 

 

………………….

جانتے ہو روتے وقت آنسوں کیوں گرم ہوتے ہیں 

کیونکہ اس وقت دل جل رہا ہوتا ہے

Janty ho waqat ansoyon kun garam hoty hain

Kunky is waqat dill jall raha hota hai

………………….

تم نے چھوڑا جب سے آنسو پوچھنا

ہم کو رونے کا مزہ آتا نہیں

Tum ny chora jab say anso pochna 

Hum ko ronay ka maza ata nae

………………….

سچے پیار میں نکلے آنسو اور روتے ہوئے بچے کے آنسو ایک جیسے ہوتے ہیں 

کیونکہ دونوں کو پتا تو ہے کہ درد کیا ہے پر کسی کو بتا نہیں سکتے

Suchay payar mai niklay anso or rotay hoya bachay kau anso ak jesay hoty hain

Kun kay dono ko pata hi kay dard kiya ha par kisi ko bata nae skaty

………………….

‏موتی تو نہیں تھے کوئی پلکوں سے جو چنتا

ہم آنکھ سے ٹپکے ہوئے آنسو کی طرح تھے

Moti to nae thay koi palkon say ho chunta 

Hum ankah say tapkaty hoa anso ki tarha tahy

………………….

مسکان بنائے رکھو تو سب ساتھ ہیں

ورنہ آنسو کو تو آنکھوں میں بھی پناہ نہیں ملتی

Muskan banaya raho to sab sajat hain 

Warna anso ko to anhokon mai bahi pana nae milati

………………….

کسی کو دیا گیا ایک آنسو عمر بھر کی عبادتوں پہ پانی پھیر سکتا ہے

Kisi ko dia gaya ak anso umar bhar ki Abadton pay pani phair skta hai

………………….

ضبط غم اتنا آسان نہیں 

آگ ہوتے ہیں وہ آنسوں جو پئیے جاتے ہیں

Zabat ghum. Itna asan nae 

Aag hoty hn wo anso jo piya jatay hain

………………….

آج آنسو تم نے پونچھے بھی تو کیا 

یہ تو اپنا عمر بھر کا کام ہے

Aj anso tum ny ponchy bhi to kiya 

Ya to apna umar bhar ka kam hai

 

………………….

محبت میں ایسی چوٹ کھائی ہم نے 

کہ اب درد بھی ہو تو آنسو نہیں نکلتے 

Muhabat mai asi chote kahyi hum nay 

Ky ab dard bhi ho to anso nae niklty

………………….



جی بھر کر اسے جاتے ہوئے دیکھنے تو دے 

اے آنکھ ٹھہر جا؟ تجھے رونے کی پڑی ہے

Jee bhar kar isay jatau hoya dekhny to day 

Ay ankah thahar ja tujay rony ki pari ha

 

………………….

خاموش رہنے پر بھی انہیں ہو جاتی تھی فکر میری

اب تو آنسو بہانے پر بھی کوئی ذکر نہیں ہوتا

Khamosh rahany par bhi inhinyin ho jati tji fikar mari 

Ab to anso bahnay par bhao koi zikar nae karta 

………………….

جب انسان تقدیر سے ہارتا ہے تو

اس کا بس صرف آنسوؤں پر چلتا ہے

Jab Insnn taqdeer say harta hai to 

Is ka bus sirf ansonyon par chalta ha

………………….

آ کے دیکھے جو کسی صبح وہ تکیہ میرا

جو سمجھتا ہے مجھے رونا نہیں آتا

Aa ky deakh jo kisi subha wo takiya mrra 

Jo smjata hi muja rona nae ata

………………….

مدتوں بعد جو دیکھی اس نے میری خشک آنکھیں

پھر یہ کہہ کے رلا گیا کہ لگتا ہے سنبھل گئے ہو

Mudaton bad jo dekahi is ny mari khusk ankahyin 

Phir ya kha kay rula gaya kay lagta hai sumbhal gaya ho

………………….

صبح جب اٹھوں تو آنکھ میں ایک آنسو ضرور ہوتا ہے

تمہاری یاد کا تمھارے خواب کا تمھارے انتظار کا

Subha jb otho to ankah ma ak anso zaror hota hai 

Tumhari yad ka timhary khawab ka tumhary inzar ka

………………….

بادل تو بہت ہیں مگر اس شہر میں ہم نے 

آنکھوں کے سوا کچھ بھی برستے نہیں دیکھا

Badal to buht hain magaer is shahar mai hum nay 

Ankhon ky siwa kuch bhi bardaty nae dekha 

………………….

برسوں گزر گئے رو کر نہیں دیکھا 

آنکھوں میں نیند تھی سو کر نہیں دیکھا 

وہ کیا جانے درد محبت کا 

جس نے کسی کا ہو کر نہیں دیکھا

Berson guzar gaya ro kar nae dekha 

Ankhon mai neend tji so kar nae dekha

Wo kiya janay dard muhabt 

Jis nay kisi ka ho kar nae dekha 

………………….

کتنے معصوم ہوتے ہیں یہ آنکھوں کے آنسو بھی 

یہ نکلتے بھی ان کے لیے ہیں جنہیں پرواہ تک نہیں ہوتی

Kitnay masoom hoty hai. Ya ankhon ky anso bhi 

Ya na niklhty bhi inky liya hin jinhayin parwa tak nae hoti

………………….

یہ ہچکیاں تو محبت کی دین ہوتی ہیں 

اور وہ جھوٹ بولتی ہے کھڑکی میں ہاتھ آیا تھا

Ya hickiyan to muhabat ki deen hoti hain 

Or wo jhoor bolti hai khirki mai hat aya tha

 

………………….

جنہیں ہم پلکوں پر بٹھاتے ہیں 

وہی اکثر پلکوں کو بهگا دیتے ہیں

Jinhayin hum palkon par bethaty hain 

Wohi akser palkon ko bhega detay hain

………………….

اس نے کہا تمہاری آنکھیں بہت پیاری ہیں 

ہم نے کہا تیز بارش کے بعد موسم اکثر پیارا ہی لگتا ہے

Is nay kaha tumhari ankhiyn buht payari hain

Hum nay kaha taiz barish kay bad mosma akser paya hi lagta ha

……………….

سجا رکھی تھی ہونٹوں پر ہنسی بہت 

بے لگام درد مگر آنکھوں سے بہہ نکلا

Saja rakhi thi honton par hunsi buht 

By lagam dard mager ankhon say bha nikla

………………….

کتنا روتی تھی میں تیری خاطر 

اب جو سوچوں تو ہنسی آتی ہے

Kitna roti thi mai tari khatir 

Ab jo shachon to hunsi ato ha

………………….

مسکراہٹ جھوٹی ہو سکتی ہے مگر 

آنکھ سے گرتا ہوا آنسو نہیں

Muskarhat jhooti hp skati ha magaer

Ankh say girta hoa ansko nae

………………….



آنسوؤں سے عقیدت یونہی تو نہیں مجھ کو 

یہی ساتھ نبھاتے ہیں جب کوئی نہیں ہوتا

Ansoyon say aqidat yoon hi to nae muja 

Yahi shat nabhaty hin jab koi nae hota

……………….

ان آنسوں میں سمندر کی گہرائی ہے

اترنے کی کوشش مت کرو ڈوب جاو گے

In ansoyon ma smander ki gharayi hai 

Orathy ki koses mat karo doob jayo gay

………………….

الوداع کہہ چکے ہیں تمہیں

جاو آنکھوں پہ دھیان نہ دو

Alvida kha chukay hain tumhay 

Jayo anhokon pay dehan na do

………………….

ہنسنے پہ بھی آجاتے ہیں بے ساختہ آنسو 

کچھ لوگ مجھے ایسی دعا دے کے گئے ہیں

Hunsanay pay bhi ajatu hain bay sakhta anso 

Kuch log muja aisi dua day gaya hin

 

………………….

پلٹ کر دیکھا تھا جس طرح اس نے مجھے 

میں آنکھوں پہ ہاتھ نہ رکھتا تو دریا بہہ جاتا

Palat kar dekha jis tarha muja 

Mai ankhon pay har na rkahta to darua bha jata

………………….

 انکار سا کر دیا آنسوں نے آنکھوں میں آنے سے پہلے 

کہ کیوں گراتے ہو ہمیں اتنا اک گرے ہوئے شخص کی خاطر

Inkar sa kar dia ansoyon ny ankhon mae anay say phlay 

Kau kun girtay ho hamay itna ik girau hoya shalhas ki khatir

………………….

کتنی خاموش سی مسکراہٹ

تھی 

شور بس آنکھ کی نمی میں تھا

Kitni khamosh si muskaraht thi 

Shore bus ankh ki nami mai tha

 

………………….

پانی دریا میں ہو یا آنکھوں میں 

گہرائی اور راز دونوں میں ہوتے ہیں.

Pani darya mai ho ya ankhon mai 

Gharayi or raaz dono mai hotay hain

………………….

مسکراتی آنکھوں سے افسانہ لکھا تھا

شاید آپ کا میری زندگی میں آنا لکھا تھا

تقدیر تو دیکھو میرے آنسوؤں کی

ان کا بھی آپ کی یاد میں بہہ جانا لکھا تھا

Muskarati ankhon sy afsana likha tha 

Shayed ap ka mari zindgai mai ana likha tha 

Taqdeer to dekho meray ansoyon ki 

In ka bhi ap ki yad ma bha jana likha tha

………………….

‏پوچھا تھا اس نے حال بڑی مدتوں کے بعد 

‏کچھ پڑ گیا ہے آنکھ میں یہ کہہ کے رو پڑے

Pocha tha is nay hall bari mudaton ky bad 

Kuch parh gaya hai ankh mai ya kha kay ro paray

………………….

آنسو ٹپکے تو چل دیا اٹھ کر 

بات ساری نہیں سنی اس نے

Anso tapkay to chal dia oth kar bat sari nae suni is nay

……………….

بار بار آنسو صاف کرنے کے بجاۓ اپنی زندگی سے اس کو ہی صاف کر دے جو اپ کو آنسوؤں کی وجہ بنتا ہے

Bar bar anso saaff karany kay bajaya apni zindagi say is ko hi saff kar day jo ap ko ansoyon ki waja banta ha

………………….

الوداع کہہ چکے ہیں تمہیں

جاو آنکھوں پہ دھیان نہ دو.

Alvida kha chukay hain tumhay 

Jayo ankhon pay dehan na do

 

………………….



ہنسنے پہ بھی آجاتے ہیں بے ساختہ آنسو 

کچھ لوگ مجھے ایسی دعا دے کے گئے ہیں

Hunsanay pay bhi ajaty hain bay sakhta anso 

Kuch log muja asi dua kay gaya han

………………….

پلٹ کر دیکھا تھا جس طرح اس نے مجھے 

میں آنکھوں پہ ہاتھ نہ رکھتا تو دریا بہہ جاتا

Palat kar dekha tha jis tarha is nay muja 

Mai ankho pay hat na rkhta to darya bha jatay

………………….

 انکار سا کر دیا آنسوں نے آنکھوں میں آنے سے پہلے 

کہ کیوں گراتے ہو ہمیں اتنا اک گرے ہوئے شخص کی خاطر.

Inkar sa kar dia ansoyon nay ankhon mai anay say phaly 

Kay kun giraty ho humay itna ik girau hoay shakhas ki khatir

………………….

کتنی خاموش سی مسکراہٹ تھی 

شور بس آنکھ کی نمی میں تھا

Kitni khamosh si muskaraht 

Shore bus ankah ki nammi mai tha 

………………….

پانی دریا میں ہو یا آنکھوں میں 

گہرائی اور راز دونوں میں ہوتے ہیں.

Pani darya mai ho ya ankho ma 

Gharayi or raaz dono mai hotay hain

………………….

مسکراتی آنکھوں سے افسانہ لکھا تھا

شاید آپ کا میری زندگی میں آنا لکھا تھا

تقدیر تو دیکھو میرے آنسوؤں کی

ان کا بھی آپ کی یاد میں بہہ جانا لکھا تھا

 

Shaayed ap ka mari zindgai mai ana likha tha 

Taqdeer to dekho meray ansonyon ki 

In ka bhi ap ki yad mai bha jana likha tha

………………….

‏پوچھا تھا اس نے حال بڑی مدتوں کے بعد 

‏کچھ پڑ گیا ہے آنکھ میں یہ کہہ کے رو پڑے

Pocha tha is nay hall bari mudaton kay bad

Kuch parh gaya hai mai anhon ma ya kaha kau ro paray

.………………….



آنسو ٹپکے تو چل دیا اٹھ کر 

بات ساری نہیں سنی اس نے

Anso tapkaty to chal dia oth kar 

Bat sari nae suni is nay 

 

………………….

بار بار آنسو صاف کرنے کے بجاۓ اپنی زندگی سے اس کو ہی صاف کر دے جو اپ کو آنسوؤں کی وجہ بنتا ہے

Bar bar anso saaff karny kay bajaya apni zindagi say is ko hi saaf kar day jo ap ko anso ki waja banta hai

………………….

روتے روتے تھک گئی ہیں آنکھیں 

اب بس آ جاو لوٹ کر

Rotay rotay thaq gayk hain ankayin 

Ab bus ajayo loat kar

………………….

وہ تو ہنستا ہے روبرو میرے

کوئی روتا ہے اس کی آنکھوں میں .

Wo to hunsta hai hai robaro meray 

Koi rota hai is ki ankhon mai

………………….

یاد آتی ہے تو نم ہو جاتی ہیں آنکھیں

کیا تصور میں ستانے کی قسم کھائی ہے تم نے

Yad ati hai to num ho jati hain ankhyin

Kiya taswar mai satany ki qasim kahyi hai tum nay

………………….

روٹھی ہوٸی آنکهيں کبھی جھوٹ نہیں بولتیں

کیونکہ آنسو تب ہی آتے ہیں جب اپنا کوٸی درد دیتا ہے

Rothi hoi ankhyin kabhi jhoot nae bolti 

Kun kay anso tab hi atay hain jab apna koi dard deta hai

 

………………….



 آنسو سے عقیدت یونہی نہیں مجھ کو 

یہ تب ساتھ نبھاتے ہیں جب ساتھ کوئی نہیں ہوتا

Anso say aqidat yoonhi nae muj ko 

Ya tab shat nibathy hain jab sahat koi nae hota 

………………….

Udas Poetry in Urdu

میں تو چپ ہوں کہ اندر سے بہت خالی ہوں 

اور کچھ لوگ پرسرار سمجھتے ہیں مجھے 

میں بدلتے ہوئے حالات میں ڈھل جاتی ہوں 

دیکھنے والے فنکار سمجھتے ہیں مجھے   

 

Main to chup hon kay andar say bohat khali hon

or kuch log pur israr samajhty hain

main badlay hovy halat main dhal jata hon

dakhnay walay Funkar samajhtay hain

………………….

اگر مگر اور کاش میں ہوں

میں خود بھی اپنی تلاش میں ہوں

 

Agar Magar or Kash main hon

Main khud be apni talash main hon

 

………………….

میری منتظر نگاہ کو تیری تلاش ہے

میں ہنس رہا ہوں پھر بھی دل اداس ہے

 

Mari muntazir nigah ko tari talash hay

main hans raha hin phir be dill udass hay

 

………………….

تتلی کے جیسی ہے میری ہر خواہش 

ہاتھ لگانے سے پہلے اڑ جاتی ہے

 

Tatlii kay jasi hay mari har khawush

hath lagany say pehlay urr jati hay

 

………………….

ﮐﻮﺋﯽ ﺗﻮ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺟﺲ ﮐﯽ ﺧﺎﻃﺮ

ﺍﺩﺍﺱ ﺭہنے ﮐﺎ ﺷﻮﻕ ﺳﺎ ﮨﮯ

 

koi to hay kay jus ki khatir

udass rehny ka shoq saa hay

………………….

بتاؤں تمہیں اداس لوگوں کی نشانی وہ لوگ مسکراتے بہت ہیں

 

Bataon tumay udass logo ki nishani

wo lig muskuraty bohat hain

 

………………….

پڑ چکا ہے فرق اتنا 

کہ اب فرق ہی نہیں پڑتا

 

Par chuka ha farq itna

kay ab farq he nahi parta

 

………………….

کبھی کبھی یہ دل اداس ہوتا ہے 

ہلکا سا احساس ہوتا ہے

جھلکتے ہیں میرے بھی آنسوں 



جب آپ سے دور ہونے کا احساس ہوتا ہے

 

Kabi kabi ya dill udas hota ha

halka sa ehsas hota hay

jhalaktay hain maray be ansoo

jab ap say dour honay ka ehsas hota ha

💔💔💔

………………….

میں یہ ہنسنے والوں کے ساتھ ہنس تو رہا ہوں 

مگر اداسی میرے حلق تک بھری ہوئی ہے

 

Main ya hasnay walin kay sath hans to raha hon

Magar udasi maray halq tak bharii hoie hay

………………….

کاش کہ میں پلٹ جاؤں اسی بچپن کی وادی میں

جہاں نہ کوئی ضرورت تھی نہ کوئی ضروری تھا

 

Kash kay main palat jayon usi bachpan ki wadii main

jahan naa koi zaroort thii na koi zaroori tha

 

………………….

میرے چہرے سے ٹکراتے ہوئے سرد ہوا کے جھونکھے

اپنے ہونے سے زیادہ تمہارے نہ ہونے کا احساس دلاتے ہیں

 

Maray chahray say takratay hovay sard hawa kay jhonkay

apnay honay say zayada tumaray naa honay ka ehsas dilatay hain

 

………………….

جتنا زیادہ سوچو گے اتنی زیادہ اذیت میں رہو گے

یا تو اپنے آپ کو مضبوط کر لو یا مصروف کر لو

 

jitna zayda socho gay itnii zayada azeyat main raho gay💔

yaa to apnay aap ko mazboOot kar lo ya Masroof kar lo😊

 

………………….

میں یہ ہنسنے والوں کے ساتھ ہنس تو رہا ہوں 

مگر اداسی میرے حلق تک بھری ہوئی ہے

 

Main ya hansnay walaon kay sath habs to raha hon 🙂

Magar

Mari udasii maray halaq tak bharii hoie hay

 

………………….

تمہیں خیال نہیں کس طرح بتائیں تمہیں 

کہ سانس چلتی ہے لیکن اداس چلتی ہے

Tumain khayal nahi kis tarah batain tumay..!

kay Sans chaltii hay lakin udass chaltii ha…!💔

………………….

ایک بھی کام کی نہیں نکلی 

ہاتھ بھرا پڑا ہے لکیروں سے

 

aik be kam ki nahi niklii,,!

hath bhara para ha lakeeron say,,!🥀

 

………………….



میں ان پرندوں میں سے ہوں 

جو پنجرہ کھلا دیکھ اڑا نہیں کرتے

 

 

Main in parindon ma say hoon🕊

Jo Pinjara khula dakh uraa nahi karty

 

………………….

انسان کو اپنے بے بس ہونے کا احساس تب ہوتا ہے

جب وہ کسی کو دیکھنے کے لیے اس سے بات کرنے کے لیے ترس جاتا ہے


Insan ko apnay bay bass honay ka ehsas tab hota hay

Jab wo kisi ko dakhnay kay leya us say bat karny kay leya tarass jata hay

💔💔💯


………………….

اپنے اندر کے بچے کو ہمیشہ زندہ رکھیں

حد سے زیادہ سمجھداری زندگی کو بور کر دیتی ہے

 

Apnay andar ky bachpan ko hamasha zinda rakhain💕

had say zayda samajhdari zindagii ko bore kar dati ha💯

 

………………….

ﮨﺰﺍﺭﻭﮞ ﮨﯿﮟ یہاں ﻣﯿﺮﮮ ﻟﻔﻈﻮﮞ ﮐﮯ ﺩﯾﻮﺍنے

ﻣﯿﺮﯼ ﺧﺎﻣﻮﺷﯽ ﺳﻨﻨﮯ ﻭﺍﻻ ﮐﻮئی ﮨﻮﺗﺎ ﺗﻮ ﮐﯿﺎ ﺑﺎﺕ ﺗﮭﯽ


Hazaron hain yahan maray lafzon kay dewany💕

Marii khamoshii sun’nay wala koi hota to kya bat thii🔥

………………….

میں خود بھی تو ہوں اپنے آپ کے پیچھے پڑا ہوا 

میرا شمار بھی تو میرے دشمنوں میں ہے

Main khud be to hoon apnay aap kay peechay para hova

Mera Shumar be to maray dushmanoo ma hay🥀

 

………………….

تم تنہا رہنے کا سوچنا بھی مت 

تمھارا وقت ہوں ساتھ ساتھ چلوں گا

 

Tum tanha rehnay ka sochna be mat

Tumara waqt hoon sath sath chalon gaa

❤️❤️

………………….

ہم سے کیا پوچھتے ہو ہم کو کدھر جانا ہے 

ہم تو خوشبو ہیں بہرحال بکھر جانا ہے

 

Ham say kya pochtay ho ham ko kidar jana hay..!

Ham to khushbu hain bara hal bikhar jana hay..!

………………….

خواب تیرے ہی رہینگے ہمیشہ 

مجھے بھروسہ ہے اپنی آنکھوں پر

khawb taray he rahain gay hamasha😍

mujhay bharosa hay apni ankhon par💕😌

………………….



ساری باتیں دل کی ہوتی ہیں

اگر انسان کا دل ہی مر جائے 

تو لاکھ بہترین چیز عطا کردی جائیں 

لبوں پر مسکراہٹوں کے پھول نہیں کھلتے

 

Sari batain dill ki hoti hain

Agar insan ka dill he mar jay

too lakh behtreen cheez ataa kar di jayin

Labon par muskarahton kay phool nahi kheltay

 

………………….

جب مان ٹوٹ جائے 

تو انسان خاموش ہو جاتا ہے

پھر نہ تو کوئی گلہ کرنے کو دل کرتا ہے 

نہ کوئی شکوہ کرنے کو دل کرتا ہے

 

Jab maan toot jain

Too insan khamosh ho jata hay

Phir naa to koi gilaa karny ko dill karta hay

na koi Shikwa karny ko dill karta hay💯💯

………………….

جب مان ٹوٹ جائے 

تو انسان خاموش ہو جاتا ہے

پھر نہ تو کوئی گلہ کرنے کو دل کرتا ہے 

نہ کوئی شکوہ کرنے کو دل کرتا ہے


Jab maan toot jain

Too insan khamosh ho jata hay

Phir naa to koi gilaa karny ko dill karta hay

na koi Shikwa karny ko dill karta hay💯💯


………………….

خود سے ناراض زمانے سے خفا رہتے ہیں

جانے کیا سوچ کے ہم سب سے جدا رہتے ہیں

 

khud say naraz zamany say khafa rehtay hain 

janay kya soch kay ham sab say Judaa rehtay hain 


………………….

وہ لڑکی تنکا تنکا بکھر گئی

جسے مان تھا اپنے صبر پر

 

Wo larkii tinka tinka bikhar gai

jisay maan tha apnay sabar par

 

………………….

ہم لکھ نہیں پاتے اب اپنے الفاظ

لوگوں نے اندر سے بہت جلا دیا ہے

 

Ham lakh nahi patay ab apnay alfaz

logo nay andar say bohat jala deya ha

 

………………….

حالات نے چہرے کی چمک چھین لی ورنہ

دو چار برس میں یوں بڑھاپے نہیں آتے


Halat nay chahray ki chamak cheen lii

warna doo char bars main yoon barhapay nahi aatay

 

………………….

عمروں نے کی ہے کیلنڈروں سے چھیڑ خانی 

وہ کھیلنے والا اتوار اب فکروں میں گزر جاتا ہے

 

Umaron nay ki hay  Qalander say chair khanii

wo khalnay wala Itwar ab fikron ma guzar jata hay


………………….

مایوسی ایک دھوپ ہے جو سخت سے سخت وجود کو بھی جلا کر راکھ کر دیتی ہے

 

Mayosii aik dhoop hay jo sakht say sakht wajood ko bee jala kar rakhh kar datii hay…! 🔥💔💔

………………….

میں وہ لکھتے ہوئے بہت رویا

تم جسے پڑھ کے مسکرائے ہو

 

Main wo likhtay hovay bohat royaa

Tum jisay  parh kar muskuray hoo🥀

………………….

تمہاری سب اناؤں کے بھرم تم کو مبارک ہوں 

تمہارے بعد ہم ہر فکر سے آزاد بیٹھے ہیں

 

Tumari sab anaoy kay bharam tum ko Mubarak hon

Tumaray bad ham har fikar say Azad bathay hain

………………….

 ‏آنکھیں خالی رکھ لیں گے ہم 

سارے خواب جلا ڈالیں گے

 

Ankhain khalii rakha lain gay ham

Saray khawab jala dalain gain

………………….

یہ کیفیت بھی اچھی ہے

کہنے کو بہت کچھ ہے کہنا کچھ بھی نہیں

 

Ya kafiyat be achi hay

kehnay ko be kuch hay kehna kuch be nahi

………………….

کوئی آیت پڑھ کے بھیج اِدھر

میری آنکھیں نیند سے خالی ہیں

 

Koi ayat parah kay bhaj idar

Mari ankhain neend say khali hain

………………….

کہاں ہے زندہ لاشوں کا قبرستان 

مجھے خود کی تدفین کرنی ہے

 

Kahan hay zinda lashon ka Qabarstan

Mujhay khud ki tadfeen karni hay

………………….

میری خواہشات تو کب کی مر گئ ہیں 

اب کچھ ذمداریوں نے زندہ رکھا ہوا ہے

 

Mari khawishshat to kab ki mar gai hain

Ab kuch zimaydariyon nay zinda rakha hova hay

 

………………….



میری خوشیاں تمہیں بہت عزیز تھی نا 

جب ہی انہیں بھی اپنے ساتھ لے گئے ہو

 

Mari khushyan tumay bohat azeez thi naaw💕

jab he inay be apnay sath lay gayy ho💔

………………….

ان سے بچھڑ کر کچھ یوں وقت گزرا 

کبھی زندگی کو ترسے کبھی موت کو پکارا

 

Un say bichar kar kuch yun waqt guzara

kabi zibdagi ko tarsy kabi moat ko pukara🖤

 

………………….

میری اداسیاں تمہیں کیسے نظر آئینگی 

تمہیں دیکھ کر تو ہم مسکرانے لگتے ہیں

 

Mari udasiyn tumay kasay nazar aagn gii

tumay dakh kar to ham muskurany lagtay hain😊

 

………………….

ہماری مثال ان پھولوں جیسی ہے 

جو کھلتے ہی نہیں مرجھانے کے خوف سے

 

Hamari masal in phoolon jasi hay💔

Jo kheltay he nahi mujhanay kay khoof say🥀

………………….

کبھی کبھی انسان نا ٹوٹا ہے 

نا بکھرتا ہے بس تھک سا جاتا ہے

کبھی خود سے کبھی قسمت سے 

اور کبھی اپنوں سے


kabi kabi insan na toot’ta hay

Na bikhrata hay bas thak saa jata hay

kabi khud say kabi kismat say

Or kabi apno say….!💔

 

………………….

نہ کھول میرے مکان کے اداس دروازے 

ہوا کا شور میری الجھنیں بڑھا دیگا 

 

Na khool maray makan kay udass darwazy ..’🚪

Hawa ka shoor mari Uljanahin barha day gaa..’ 💔


………………….

ﭼﮍﯾﻮﮞ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﮨﻢ ﺑﮭﯽ ﺷﺠﺮ ﭼﮭﻮﮌ ﺟﺎﺋﯿﮟ ﮔﮯ

ﺗﺮﺳﯿﮟ ﮔﮯ ﻟﻮﮒ ﭘﮭﺮ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺷﻮﺭ ﮐﻮ

 

Chriyon ki tarah ham be shajar chor jain gayin 

Tarsain gay log phir hamaray shor ko

………………….

اداس رہنے کا مجھے کوئی شوق نہیں 



بس تیرے ساتھ بتائیں ہوئے پل میں بھول نہیں پاتا


Udass rehny ka mujhy koi shoq nahi

bass taray sath betain hovy pal main bhool nahi pata💔💔

 

………………….

وہ اتفاق سے راستے میں مل جائے کہیں 

بس اسی شوق نے ہمیں آوارا بنا دیا

 

Wo itfaq say rastay main mil jay kahin

Bass isii shoq nay hamay awara bana deya..,🥀

 

………………….

چہرے پر خوشی کی کوئی انتہا ہی نہیں

اور زخموں کو دلوں میں چھپائے بیٹھے ہیں

 

Chehray par khushi ki koi Inteha he nahi**_

or zakhmon ko dilon main chupay bathay hain**_

………………….

اداس رہنے کا مجھے کوئی شوق نہیں 

بس تیرے ساتھ بتائیں ہوئے پل میں بھول نہیں پاتا

 

Udass rehnay ka mujhay koi shoq nahi

Bass

Taray sath betain hovay pal main bhool nahi pata

………………….

چہرے پر خوشی کی کوئی انتہا ہی نہیں

اور زخموں کو دلوں میں چھپائے بیٹھے ہیں

 

Chehray par khushi ki koi inteha he nahi

Or Zakhmon ko dilon ma chupay bathay hain

 

………………….

میں آخر کون سا موسم تمہارے نام کر دیتا؟ 

یہاں ہر ایک موسم کو گزر جانے کی جلدی تھی

 

Main Aakhir kon sa mosam tumray nam kar deya ?

Yahan har ak mosam ko guzar janay ki jhaldi thii

 

………………….

ہونٹوں کی ہنسی کو نہ سمجھ حقیقت زندگی 

دل میں اتر کے دیکھ کتنے ٹوٹے ہوئے ہیں ہم

Honton ki hansi ko naa samjh haqeqat zindagi

Dill ma utar kay dakh kitnay tootay hovay hain ham

 

………………….

آ پھر سے رو برو کہ آئے مجھے قرار 

اب کے اداس یوں ہوں کہ جینا محال ہے

 

Aa Phir say rubaru kay Ayn mujhay qarar

Ab kay udass yun hon kay jeena muhal hay💔


………………….

وہ پوچھے جو میری اداسی کا سبب 

میں اداس رہنا چھوڑ دوں گی

 

Wo pochay jo mari udasi ka sabab

Ma udass rehna chorr don gi

………………….

آؤ آنکھیں ملا کے دیکھتے ہیں 

کون کتنا اداس رہتا ہے

 

Aayo Ankhain mila kay dakhtay hain

kon kitna udass rehta hay

 

………………….

کون جھانکے گا میری روح کی گہرائی ‏میں 

‏کون دیکھے گا میرے جسم میں ٹوٹا ‏کیا ہے

 

Kon jhanakay gaa mari rooh ki gehrai ma

kon dakhay gaa maray jism ma toota kya hay

………………….

میری آنکھوں میں چھپی اداسی کو محسوس تو کر 

میں سب کو ہنسا کر خود رات بھر نہیں سوتا

 

Mari ankhon ma chupii udasi ko mehsoos to kar

Ma sab ko hansa kar khud rat bhar nahi sotaa

 

………………….

زیادہ بولنے والے زیادہ ہنسنے والے اور زیادہ رونے والے 

دل کے بہت صاف اور اندر سے بہت اکیلے ہوتے ہیں 

 

Zayda bolany walay zayada hansnay walay or zayada ronay walay

Dil kay bohat saaf or andar say bohat aklay hotay hain

 

………………….

پرانی تصویریں دیکھتے ہوئے اکثر مسکراہٹ

اور کبھی کبھی آنکھوں میں نمی سی آجاتی ہے


Purani Tasweerin dakhtay hovay aksar muskurahat

Or kabi kabi ankhon ma nami si aa jati hay

………………….

وہ جو غم سن کر بھی ہنستے اور ہنساتے تھے 

ان یاروں کو ڈھونڈ لا آج دل اداس ہے بہت

 

Wo jo Gham sun kar be hanstay or hansatay thay..’!

In yaron ko dhond laa aj dill udass hay bohat..’!

 

………………….

ہائے وہ پوچھ بیٹھے ہیں سبب اداسی کا 

خدارا ہمیں تو بہانے بنانا بھی نہیں آتے

 

Hayee.! Wo poch bathay hain sabab udasi ka

Khudara hamay to bahany banany be nahi aatay

 

………………….

تلاش میں بیت گئی ساری زندگی؟ 

اب پتہ چلا کہ خود سے بڑا کوئی ہمسفر نہیں؟

 

Talash may beet gain sari Zindagi

Ab pata Chala kay khud say bara koi hamsafar nahi

 

………………….

کل آئینوں کے شہر میں گم ہوگئی تھی میں 



چہرے کو اپنے ڈھونڈ کر لانا پڑا مجھے

 

kal Ainayon kay sehar ma gum ho gai thi ma

Chehray ko apnay dhond kar lana para mujhay

………………….

ہو سکے تو دور ہی رہو مجھ سے

ٹوٹا ہوا ہوں کہیں چبھ نہ جاؤں


Ho sakay to dour hi raho mujh say

toota hova hoon kahi chub naa joyn

………………….

اداکاری بڑا دکھ دے رہی ہے 

ہم سچ مچ مسکرانا چاہتے ہیں

 

Adakarii bara dukh day rahi hay

Ham sach much muskurana chahtay hain

………………….

خوبصورت سا وه اک پل تھا

پر وه میرا کل تھا


Khoobsurat  saa wo ak pal tha

Par wo mera kal tha

………………….

زندگی کا سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ 

شوق کی عمر میں صبر سیکھ لیا جاۓ 

 

Zindagi ka sab say bara Almiya ya hay kay

Shoq ki umar ma sabar seekh leya jay

 

………………….

لگی جو چوٹ تو خیال آیا

کہاں گئے میرا صدقہ اتارنے والے

 

Lagi jo choot to khayal aaya

kahan gayn mera Sadqa utarnay walay

 

………………….

کچھ لوگ سفر کے لئے موضوع نہیں ہوتے

کچھ سفر اکیلے بھی نہیں کٹتے اسے کہنا

 

Kuch loog safar kay leya mozuh nahi hotay

kuch safar aklay be nahi  kat’tay usay kehna

………………….

اچھی لگتی ہے مجھے اس کی بس یہی عادت

اداس کر کے مجھے خود بھی خوش نہیں رہتی


Achi lagti hay mujhy us ki bass yahi adat

udass kar kay mujhy khud be khush nahi rehti

 

………………….

جو ذرا کسی نے چھیڑا تو چھلک پڑیں گے آنسو 

کوئی مجھ سے یہ نہ پوچھے میرا دل اداس کیوں ہے


Jo zara kisi nay chaira to jhalak parain gay Ansoo

Koi mujh say ya naa pochay mera dill udass kuy hay

………………….

خود سے بھی روٹھ گیا ہوں 

کہ اب اتنا ٹوٹ گیا ہوں

 

khud say be rooth gaya hoon

kay ab itna toot gaya hoon

 

………………….

پہلے خواہشات پوری کرنے کے لیے ضد کیا کرتے تھے 

اب ضرورتوں کا بھی اظہار نہیں کرتے

 

pehlay khawishat puri karny kay keya zid kya karty thay

ab Zaroraton ka be izhar nahi karty

………………….

ﻣﯿﺮﮮ ﺧﻮﺍﺑﻮﮞ ﮐﯽ ﺑﺴﺘﯽ ﺳﮯ ﺟﻨﺎﺯﮮ ﺭﻭﺯ ﺍﭨﮭﺘﮯ ہیں 

ﻣﯿﺮﯼ ﺁﻧﮑﮭﯿﮟ ﺟﺴﮯ ﭼﮭﻮ ﻟﯿﮟ ﻭﮦ ﺳﭙﻨﺎ ﻣﺮ ﮨﯽ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ

 

maray khawabon ki basti say janazay roz uthtay hain

mari ankhain jisa chuu lain wo sapna mar hi jata hay

………………….

مسکراتا ہوں تو اندر ہی مر جاتا ہوں 

کیا سمجھتے ہیں لوگ بہت خوش رہتا ہوں

 

Muskurata hoon to andar hi mar jata hoon

kya samjhtay hain log bohat khush rehta hoon

 

………………….

کالی رات کی تنہائی دل کو سکون دیتی ہے

دل نہیں لگتا اب میرا روشن دن کی محفلوں میں

 

Kalii rat tanhai dill ko sakoon dati hay

dill nahi lagta ab nera rishan din ki mehfilon main

 

………………….

کسی کی معصوم ہنسی کے پیچھے درد کو محسوس تو کرو

سنا ہے ہنس ہنس کے لوگ خود کو سزا دیتے ہیں

kisi ki masoom hansii kay peechay dard ko mehsoos to karo

suna hay hans hans kay log khud ko saza datay hain

 

………………….

وہ ہمیں خود ہی اداس کرکے چلا گیا 

جس نے قسم دی تھی ہمیں خوش رکھنے کی

 

Wo hamain khud he udass kar kay chala gaya

jis nay qasam di thi hamain khush rakhnay kii

 

………………….

حسرتوں کے دفن کا سامان ہونا چاہئیے 

دل کے ایک کونے میں قبرستان ہونا چاہئیے 


Hasraton kay  dafan ka saman hona cheya

dill kay aik konay main Qabarstan hona cheya

 

………………….

بن بات کے ہی روٹھنے کی عادت ہے

کسی اپنے کا ساتھ پانے کی چاہت ہے

آپ خوش رہیں میرا کیا ہے 

میں تو آئینہ ہوں مجھے ٹوٹ جانے کی عادت ہے

Bin bat kay hi ruthany ki adat hay

kusi apnay ka sath panay ki chahat hay

ab khush rahain mera kya hay

main to ayna hoon mujhu toot jany ki adat hay💔💔

………………….

کاش میں لوٹ جاؤں بچپن کی وادی میں 



نہ کوئی ضرورت تھا نہ کوئی ضرورت تھی

 Kasy main lout jayon bachpan ki wadii ma

naa koi zaroori tha naa koi zaroort thii

 

……………….

آنکھ سے کھینچ کر نکالے ہیں

خواب ویسے بھی مرنے والے تھے

 

Ankh say khench kar nikaly hain

khawab wasay be marany walay thay

 

………………….

کبھی کبھی ہمیں کسی دوا کی ضرورت نہیں ہوتی 

بلکہ کسی کے الفاظ کی ضرورت ہوتی یے

kabi kabi hamay kisi dawa ki zaroort nahi hoti

balkay

kisi kay alfaz ki zaroort hoti hay

………………….

کوئی دیکھے گا نہیں کتنا خلا ہے دل میں

لوگ ہنستا ہوا دیکھیں گے چلے جائیں گے

koi dakhay gaa nahu kitna khala hay dill ma

log hansta hova dakhain gay chaly jain gain

………………….

ویرانی میرے اندر کی لگتا ہے یوں جائے گی 

کلمہ پڑھا جائے گا دل کی دھڑکن رک جائے گی

Warani maray andar ki lagta hay yon jay gii

Kalma Parha jay ga dill ki dharkan ruk jay gii

 

………………….

ذمہ داریوں کے ہجوم میں

جو چیز سب سے پہلے گم ہوتی ہے

وہ بس اپنی شخصیت ہوتی ہے

 

zimaydariyon ki hajoom main

jo cheez sab say pehlay gum hoti hay

wo bas apni sakhsiyat hoti hay

 

………………….

کبھی کبھی پتھر کے ٹکرانے سے آتی نہیں خراش

کبھی اک ذرا سی بات سے بھی انسان بکھر جاتا ہے

 

kabi kabi pathar kay takrany say aati nahi kharas

kabi ak zara sii bat say be insan bikhar jata hay

 

………………….

میں اب خدا کو سناتا ہوں اپنا حال دل

میں اب زمین والوں پر بھروسہ نہیں کرتا

 

Ma ab Khuda ko sunata hoon apna haal e Dill

Ma ab zameen walon par bharosa nahi karty

 

………………….

‏ﻭﮦ ﺟﻮ ﺗﻠﺦ ﺑﺎﺗﻮﮞ ﭘﮧ ﻗﮩﻘﮩﮯ ﻟﮕﺎﺗﺎ ﮨﮯ

ﺳﺎﺭﮮ ﺁﻧﺴﻮ ﮨﯽ ﺭﻭ ﭼﮑﺎ ﮨﻮ ﮔﺎ

 

Wo jo talkh baton pay kehkay lagata hay

saray ansoo he reh chuka ho gaa

………………….

 کتنا نادان ہے وہ مجھ سے پوچھتا میری اداسی کا سبب

مجھے اداس کر کے بھی خود بھی اداس رہتا ہے

 

kitna nadan hay wo mujh say pochta mari udasi ka sabab

mujhay udass kar kay be khud be udass rehta hay

 

………………….

ہر روز دل اداس ہوتا ہے اور شام گزر جاتی ہے 

ایک روز شام اداس ہوگی اور ہم گزر جائینگے

Har roz dill udass hota hay or shaam guzar jati hay

ak roz shaam udass ho gi or ham guzar jain gay

 

………………….

تھی اس قدر عجیب مسافت کہ کچھ نہ پوچھ

آنکھیں ابھی سفر میں تھیں اور خواب تھک گئے

Thi is qadar ajeeb masafat kay kuch na poch

ankhain abi safar main thin or khawab thak gay

 

………………….

نظر انداز کرتے ہو تو لو ہٹ جاتے ہیں نظروں سے

ان ہی نظروں سے ڈھونڈو گے نظر جب ہم نہ آئیں گے

 

Nazar andar karty ho to lo hat jatay hain nazron say

un he nazron say dhondo gay nazar jab ham na aayn gain

………………….

ہوا کچھ نہیں بس

وہ چپ ہے میں اداس ہوں

 

Hova kuch nahi bass

wo chup kay ma udass hon

 

………………….

میں سب کو ہنسنانے والا لڑکا 

جب خدا سے اپنی باتیں کرتا ہوں تو رو پڑتا ہوں 


Masab ko hansany wala larka

jab Khuda say apni batain karta hoon to roo parta hon

 

………………….

دیکھنے میں تو سب خوش نظر آتے ہیں 

مگر دلوں کا حال صرف اللہ جانتا ہے 

dakhnay ma to sab khush nazar aatay hain

Magar dillon ka hal sirf Allah janta hay

 

………………….

میری خاموشی سے تم ناراض مت ہوا کرو

حالات سے ہارے ہوئے لوگ اکثر خاموش رہتے ہیں

 

Mari khamoshii say tum naraz mat hova karo

halat say haray hovay lig aksar khamosh rehtay hain

………………….

مسکرائیے دنیا کے سارے دکھ آپ کی مالکیت تھوڑی ہیں

Muskurain duniya kay saray dukh aap ki malkiyat thori hain

 

………………….

مسکراہٹ تبسم ہنسی قہقہے سب کے سب کھو گئے ہم بڑے ہو گئے

Muskurahat Tabasum hansii kehkay sab kay sab khoo gay

ham baray ho gay

………………….

زندگی مشکل تب لگتی ہے

 جب کہنے کو بہت کچھ ہو

 اور انسان کچھ نہ کہہ پائے

Zindagii muskil tab lagti hay

jab kehny ko bohat kuch ho

or insan kuch na keh pay

 

………………….

میرا کیا حال ہے تیرے بنا کبھی دیکھ تو لے



جی رہا ہوں تیرا بھولا ہوا وعدہ بن کر 

 

 

Mera kya hal hay taray bina kabi dakh to lay

jii raha hoon tera bhoola hova wada ban kar

………………….

آج کل وہ بہت خوش مجھے اداس دیکھ کر 

اس کے خوشی دیکھ کر میں خوش ہو جاتا ہوں 

Aj kal wo bohat khush mujhy udass dakh kar

us kay khushi dakh kar main khush ho jata hoon

………………….

تم پرندے کا دکھ نہیں سمجھے 

پیڑ پر گھونسلا نہیں گھر تھا 

Tum parinday ka dukh nahi samjhtay

pair par ghonsala nahi ghar tha

………………….

یہ ہمدردیاں اب مجھے کاٹتی ہے

یوں خوامخواح مزاج نا پوچھا کرے کوئی 

ya hamdardiyan ab mujhu katti hay

youn khamkhaa mejiz naa pocha karay koi

………………….

چاہنے والوں کی تو زندگی میں کوئی کمی نہ تھی

چاہا جس کو بھی ہم نے وہ ہمارا نہ ہوا

chahnay walon ki to zindagi ma koi kami naa thii

chaha jis ko be ham nay wo hamara na hova

………………….

آنکھیں کھلی تو جاگ اٹھی حسرتیں تمام

اس کو بھی کھو دیا جس کو پایا تھا خواب میں 

Ankhain khuli to jhag uthi hasratin tamam

us ko be kha deya jis ko paya tha khawab ma

………………….

ﮐﮭﻮ ﺟﺎﺅ ﺗﻮ ﻭﯾﺮﺍﻥ ﺳﯽ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ ﺭﺍﮨﯿﮟ 

ﻣﻞ ﺟﺎﺅ ﺗﻮ ﭘﮭﺮ ﺟﯿﻨﮯ ﮐﺎ ﺍﺣﺴﺎﺱ ﺑﮭﯽ ﺗﻢ ﮨﻮ

khoo joy to weran si ho jati hay rahain

mil joy too phir jeenay ka ehsas be tum ho

………………….

تیری غفلتوں کو خبر کہاں 

میری اداسیاں ہیں عروج پر

Tari ghaflaton ko khabar kahan

mari udasiyn hain arooj par

………………….

مجھ سے پوچھے نہ کوئی میری اداسی کا سبب

لگا کے سینے سے مجھے کاش رلا دے کوئی

mujh say poochay na koi mari udasi ka sabab

laga kay seenay say mujhay kash rula day koi

………………….

جب تم کسی کی آنکھوں میں نمی اور لبوں پہ ہنسی دیکھوں 

تو سمجھ لینا وہ شخص اندر سے بہت گہرا ٹوٹا ہے

Jab tum kisi ki ankhon ma nami or labon pay hansi dakhon

Too samjh lena wo sakhs andar say bohat gehra toota hay

………………….

کیسے تحریر کر پاؤنگا آج احوال اپنا

لفظ افسردہ سے ذہن الجھا سا اور لہجہ بیزار سا

kasay tehreer kar payon ga aj ahwal apna

lafz afsurda say zehan uljha saa or lehjaa bayzar saa

………………….

نہیں ہم کو شکایت اب کسی سے بس اپنے آپ سے روٹھے ہوئے ہیں

بظاہر خوش ہیں لیکن سچ بتائیں ہم اندر سے بہت ٹوٹے ہوئے ہیں

Nahi ham ko shikayat ab kisi say bass apnay aap say ruthay hovay hain

bazahir khush hain lakin sach batain ham andar say bohat tootay hovay hain

 

………………….

تمہیں تو لاکھ تک آتی ہے گنتی

کروڑوں خامیاں ہیں مجھ میں

tumay to lakh tak aati hay gentii

karorr khamiya hain mujh ma

………………….

ڈھیر باتیں ہیں ڈھیر شکوے ہیں

خود سے کرتا ہوں خود سے لڑتا ہوں.

 

Dhairr batain hain dhairr shikway hain

khud say karta hon khud say larta hon

………………….

چلی گئی تو لوٹ کر نہیں آونگی

اس قدر نہ ستاو بہت اداس ہوں آج کل

 

Chalii gai to lout kar nahi aayon gii

is qadar naa satoyy bohat udas hon ajkal

………………….

روح میں کوئی غم ہے پوشیدہ

زندگی بے سبب اداس نہیں

 

Rooh ma koi zakhm hay posheda

Zindagii bay sabab udass hay

………………….

بچپن میں جہاں چاہے ہنس لیتے تھے 

جہاں چاہے رولیتے تھے

اب ہنسنے کیلئے تمیز چاہیے

اور رونے کیلئے تنہائی 

 

Bachpan ma jahan chahy hans latay thay

jahan chahay roo latay thay

Ab hansy kay keya Tameez cheya

or ronay kay keya Tanhaii

 

………………….

یہ تیرا ظلم ہے یا تقدیر کا ستم 

کیسے کہیں کتنے اداس ہیں ہم

Ya tera Zulm hay ya taqdeer ka sitam

kasay kahain kitny udass hain ham

………………….

نیند آتی تھی جس کو تیرے سو جانے سے 

سوچ ذرا کیسے سویا ہو گا تیرے دور جانے سے

 

Neend aati thi jus ko taray soo jany say

soch zara kasay soya ho gaa taray dour janay say

………………….

حالات میرے مجھ سے نہ معلوم کیجئے

مدت ہوئی ہے مجھ سے میرا واسطہ نہیں




Halat  maray mujh say na maloom Kejeya

Mudat hoie hay mujh say mara wasta nahi

 

………………….

ہوا کے ساتھ اُڑ گیا گھر پرندوں کا

کیسے بنا تھا گھونسلہ یہ طوفان کیا جانے

 

 

Hawa kay sath urr gaya ghar parindon ka

kasay bana tha ghonslaa ya thofan kya janay

………………….

عجیب بے بسی کا موسم ہے دل کے آنگن میں 

ترس گئے ہیں تیرے ساتھ گفتگو کے لئے

 

Ajeeb bay basii ka mosa hay dill ka angan ma

tars gay taray sath ghuftaguu kay leya

………………….

اجنبی راستہ انجان منزل ہے

کڑی دھوپ ہے کوئی سایہ نہیں ہے

Ajnabii rasta anjan munzil hay karii dhoop hay koi saya nahi hay

 

………………….

گمان ہے تیرے لوٹ آنے کا 

دیکھ کتنا بدگمان ہوں میں.

 

Ghuman hay tera lot aanay ka dakh kitna badguman hon ma

………………….

اب کوئی آئے چلا جائے میں خوش رہتا ہوں 

اب کسی شخص کی عادت نہیں ہوتی مجھ کو


Ab koi aayn chala jay ma khush rehta hon

ab kusi sakhs ki adat nahi hoti mujh ko

………………….

میں تمہیں ڈھونڈنے یادوں کی کھلی راہوں پر

خشک پتوں کی طرح روز بکھر جاتا ہوں

 

ma tumay dhondnay yadaon ki khulii rahon parr

khushk paton ki tarah roz bikhar jata hon

………………….

وہ دور بیت گیا جب تیرے بغیر ہمیں 

تمام شہر کے رستے اداس لگتے تھے

 

wo doour beet gaya jab taray begir hamain

tamam sehar kay rasty udass lagtay thay

………………….

‏نازک مزاج کے لوگ ہیں ہم 

باتوں سے ہی ٹوٹ جاتے ہیں

 

Nazak mejaz kay log hain ham

baton say hee toot jatay hain

………………….

 وقت کی روانی بدل دیتی ہے زندگی کے سبھی رنگ 

کوئی چاہ کر خود کے لئے اداسیاں نہیں خریدتا

 

waqt ki rawanii badal dati ha zindagi kay sabi rang

koi chaa kar khud kay leya udasiyan nahi kharedata

 

………………….

میں وہ تصویر ہوں جس کو مصور 

ادھورا چھوڑ کے خود رو پڑا

 

ma wo tasweer hoon jis ko Musawer

udhera chor kay khud roo para

………………….

گزر رہی ہے بے لطف سی زندگی 

نا دل لگی میں مزہ نا دل لگانے میں

 

Guzar rahi hay bay luft sii zindagii

naa dill lagi ma maza na dill lagany maa

………………….

میری آنکھوں کو دیکھ کر ایک صاحب علم بولا 

تیری سنجیدگی بتاتی ہے تجھے ہنسنے کا شوق تھا

 

mari ankhon ko dakh kar aik Sahib ilm bola

tari sanjedgii batati hay tujhay hansna ka shok tha

………………….

نہ دل سے آہ نہ لب سے صدا نکلتی ہے 

مگر یہ بات بڑی دور جا نکلتی ہے 

 

Naa dill say aaah naa lab say sada nikaltii hay

magar ya bat bari door jaa niklii ha

………………….

جس کو خوش رہنے کے سامان میسر سب ہوں 

اس کو خوش رہنا بھی آۓ یہ ضروری تو نہیں

 Jis ko khush rahny ka saman mayasar sab hoo

is ko khush rehny be aayn ya zaroori to nahi

………………….

تم پوچھتے ہی نہیں پریشانی کی وجہ 

کچھ اس وجہ سے بھی پریشان ہوں میں

 Tum pochtay he nahi parshanii ki wajaa

kuch is waja say be parshan hon ma

………………….

یہاں اداس ہے ہر ایک شخص 

کوئی اندر سے کوئی باہر سے

 

Yahan udass hay har sakhs

koi andar say koi bahir say

………………….

کتنی ویران سی رہ جاتی ہے دل کی بستی 

کتنے چپ چاپ سے چلے جاتے ہیں جانے والے

kitnii weran si rah jati ha dill ki bastii kitnay chup chapp say chaly hatay hain jany walay

 

………………….

اداسیاں ہیں مگر وجہ غم معلوم نہیں 

دل پہ بوجھ سا ہے شاید بکھر گیا ہوں میں 

Udasiyan hain magar  waja gham maloom nahi

dill pay bojh saa hay shyad bikhar gaya hoon ma

………………….

دفن ہیں مجھ میں کتنی رونقیں مت پوچھو

اجڑ اجڑ کر جو بستا رہا وہ شہر ہوں میں

Dafan hain mujh ma kitnii ronakain mat pochoo

ujar ujar kar jo basta raha wo sehar hoon ma

………………….

میں سب کو ہنسانے والی لڑکی 

جب خدا سے اپنی باتیں کرتی ہوں

تو رو پڑتی ہوں

ma sab ko hansana wali larkii

jab khuda say apni batain karti hon too roo parti hon

………………….

اداس زندگی اداس وقت اداس موسم

کتنی چیزوں پہ الزام لگ جاتے ہیں 

ایک اس کے بات نہ کرنے سے

udass zindagi udass waqt udass mosam

kitnii cheezon pay ilzam lag jatay hain

aik is bat kay bat na karnat say

………………….

مجھ سے ملنے لگے ہو جب سے 

الجھنیں بڑھنے لگی ہیں تب سے

 

mujh say milnay lagay ho jab say

uljanay bharnay lagi hain tab say

 

………………….

ویرانیاں اندر کی 

اک قلب جانے اک رب جانے

Weraniyan andar ki

aik qalab jany ak Rab janay

………………….

ہنسنا تو مجبوری بن گئی ہے

صاحب

اداس ہوں گے تو لوگ سمجھیں گے

محبت میں ہار گئے ہیں

Hansna to majborii ban gai hay

Sahibb

udass hoon gay to log samjhay gay

Mohabat ma har gayy Hainn

………………….

کوئی تدبیر کرو وقت کو روکو یارو 

صبح دیکھی ہی نہیں شام ہوئی جاتی ہے

Koi tadbeer karo waqt ko roko

Yarooo

subaa dakhi he nahi sham hoie jati ha

………………….

چبھتی ہے قلب و جاں میں ستاروں کی روشنی 

اے چاند ڈوب جا کہ طبیعت اداس ہے

 

chubii hay qalab e jan ma sitaron ki roshaniii

aay chand doob ja kay tabeyat udass hay

………………….

اداس دیکھ کے  وجہ ملال  پوچھے گا

وہ مہرباں نہیں ایسا کہ حال پوچھے گا

Udas dakh kay waja malal pochay gaa

wo meharban nahi asay kay haal pichay gaa

………………….

ایک معصوم سی خواہش سفید جوڑا چار کاندھے اور مسکراتے ہوئے لوگ 

 

aik masoom sii khawish safeed jora char khanday or muskuraty hovay log

………………….

میرا ظرف سمجھو یا میری ذات کا پردہ 

جب سے ٹوٹی ہوں خاموش رہتی ہوں

 

mera zarf samjhoo ya mari zaat ka parda

jab say tooti hon khamosh rahti hon

………………….

ان کی آنکھوں میں نظر آتا ہے سارا جہاں مجھ کو 

افسوس کہ ان آنکھوں میں کبھی خود کو نہیں دیکھا 

in ki ankhon ma nazar aata ha sara jahan mujh ko

afsos kau in ankhon ma kabi khud ko nahi dakha

………………….

کچھ پانے کی چاہ نہیں

کھو نے کو کچھ رہا نہیں

kuch panay ki chaa nahi

khonay ko kuch raha nahi

………………….

باتیں تو بہت سی ہیں مگر 

دیواروں کے منہ کیا لگنا.

 

Batain to bohat sii hain magar

dewaron kay muh kya lagnaa

………………….

اندھیرے سے کہہ دو کہ بچپن بیت چکا ہے 

اب تجھ سے ڈر نہیں سکون ملتا ہے.

Andharay say keh doo kay bachpan beet chuka hay

ab tujh say darr nahi sakoon milta ha

………………….

ہنستا میں روز ہوں

پر خوش ہوئے اک زمانہ ہو گیا

 

Hansta ma rooz hoon

par khush hovay ak zamana hoo gaya

………………….

میری آنکھوں کو نہ دے آدھی ادھوری بخششیں

یا خواب واپس چھین لے یا خواب کی تعبیر بھیج.


mari ankhon ko naa day aakhi adhori  bakhsish

yaa khawab wapiss cheen lay ya khawab ki tabeer bhajj

 

………………….

چھین لی میری مسکراہٹیں میرے اپنوں نے 

ورنہ رونق تو میں بھی بڑی کمال کی لگاتا تھا.

 

cheen li mari muskurahatin maray apno nay

warna

ronak to ma be bari kamal ki lagata tha

………………….

آنکھوں کی عدت ابھی پوری نہیں ہوتی 

کہ اک اور خواب کفن اوڑھ لیتا ہے

 

Ankhon ki edatt abi purii nahi hoti

kay al or khwab kafan oorh leta hay

………………….

چل آ تجھے دیکھا دوں اپنے دل کی ویران گلیاں 

شاید تجھے ترس آجاۓ میری اداس زندگی پر

 Chal aa tujhay dakhaa don apnay dil ki weran galiyan

shyad tujhay tarss aa jay mari udas zindagi par

………………….

ہوا کہ دوش پہ رکھے ہوئے چراغ تھے ہم

جو بجھ گئے تو ہواؤں سے شکایت کیسی

Hawa kay dosh oay rakhy hovy charag thay ham

jo boojh gay to hawaon say sikayat kasi

………………….

خلوص میں لبوں پر مٹھاس رہنے دو 

نہ خود اداس رہو نہ کسی کو اداس رہنے دو

Khaloos ma labo par methas rehny do

naa khud udass raho na kisi ko udass rehny do

………………….

خواب آنکھوں میں سجائے ہوۓ ہم معصوم سے لوگ

زندہ رہنے کی تمناوں میں مر جاتے ہیں

khawab ankhon ma sajay hovay ham masoom say log

zinda rehny ma tamanoy ma mar jatay hain

………………….

چل آ تجھے دیکھا دوں اپنے دل کی ویران گلیاں 

شاید تجھے ترس آجاۓ میری اداس زندگی پر

chal aa tujhy dekha don apnay dill ki weran galiyn

shyad tujhay tarsss aa jay mari udass zindagi par

………………….

خواب آنکھوں میں سجائے ہوۓ ہم معصوم سے لوگ

زندہ رہنے کی تمناوں میں مر جاتے ہیں

khawab ankhon ma sajay hovay ham masoom say log

zinda rehny ma tamanoy ma mar jatay hain

………………….

مسکراہٹیں جھوٹی بھی ہوا کرتی ہیں 

انسان کو دیکھنا نہیں سمجھنا سیکھو

Muskurahatain jhooti be hova karti hain

insan ko dakhna nahi samjhna seekho

………………….

آئینہ وہ واحد ساتھی ہے جو آپ کے ہنسنے پے ہنستا ہے اور آپ کے رونے پے روتا ہے 

Ainaa wo wahid sathi hay jo ap kay hansnay pay

hansta hay or apa kay ronay pay rota hay

………………….

حالات کر دیتے ہیں بھٹکنے پر مجبور

گھر سے نکلا ہوا ہر شخص آوارہ نہیں ہوتا

Halat kar datay hain bathkny par majboor

ghar say nikla hova har sakhs awara nahi hota

………………….

تم ساتھ ہوتے یہ شہر حسین لگتا 

اب شام نہیں ڈھلتی اب دل نہیں لگتا 

tum sath hotay ya sehar haseen lagta

ab sham nahi dhaltii abdil nahi lagta

………………….

بن تیرے باخدا نہیں آتا 

لفظ جس کو قرار کہتے ہیں

bin taray baa khuda nahi aata

lafz jis ko qarar kehtay hain

………………….

مانا کہ ہم ہیں اجڑے ہوئے شہر کی مثال 

آنکھیں بتا رہی ہیں ویران تم بھی ہو

mana kay ham hain ujhrayvhovy seharr ki misal

Ankhainn bata rahi hain weran tum be ho

………………….

شکستہ دل ہوں مگر مسکرا کے ملتی ہوں 

اگر یہ فن ہے تو سیکھا ہے ایک عذاب کے بعد

sakasta dil hon magar muskura kay mikti hon

agar ya fan hay to seekha hay ak azab kay bad

………………….

میری خوشی کے لمحے مختصر ہیں اس قدر 

گزر جاتے ہیں میرے مسکرانے سے پہلے

mari khushi kay lamhay mukhtasir hain is qadar

guzar jatay hain maray muskurany say pehlay

………………….

کچھ اپنوں نے ہمیں اداس کر دیا 

ورنہ لوگ ہم سے مسکرانے کا راز پوچھا کرتے تھے 

kuch apno nay hamain udass kar deya

warna log ham say muskurany ka razz pocha karty thay

………………….

کوئی نہیں جان سکتا کہ مسکراتا ہوا شخص 

اپنے ہی اندر کتنی جنگیں لڑ رہا ہوتا ہے

koi nahi jan sakta kay muskurata hova sakhs

apnay he andar kitnii jhangain lar raha hota hon

………………….

ہر سمت میٹھے پانی کے چشمے تھے اور ہم 

اک شخص کی تلاش میں صحرا کو چل دیے

har simat meethay pani kay chasmay thay or ham

ak sakhs ki talash ma sehra ko chal deyan

………………….

ہم نے چہرے پے مسکراہٹ لا کے 

آئینوں کو ہمیشہ گمراہ رکھا ہے

ham nay chehray pay muskuraht laa kay

aaino ko hamasha ghumra rakha hay

………………….

میں کھوکھلی ہنسی ہنسنے کی کوشش کرو گی 

اداسیوں تم بھی میرا ساتھ دینے

may khokhali hansii hansnay ki koshish karon gi

udasiyon tum be mera sath dena

………………….

اے زندگی مجھے کچھ مسکراہٹ ادھار دے 

عید آنے والی ہے مجھے کچھ رسمیں نبھانی ہے

aay zindagi mujhu kuch muskurahat udhar day

Eid aanay walu ha mujhy kuch rasmain nabhani hay

………………….

بعض اوقات تو ہم حد کر دیتے ہیں 

خود کو دیکھتے ہیں اور رد کردیتے ہیں

bazz okat to ham har kar datay hain

khud ko dakhtay hain or rad kar datay hain

………………….

‏اندر کوئی جهانکے تو ٹکڑوں میں ملوں گا 

‏ہنستا هوا چہرا تو زمانے کے لیے ہے

anadr koi jhankay to tokron ma milon gaa

hansta hova chehra to zamany kay keya hay

………………….

میں بے ساختہ خود بخود ہنس دیتا ہوں

اس قدر بے دردی سے رولایا اس نے

ma bay sakhta khud ba khud hans deta hon

is qadar bay dardii say rolaya us nay

………………….

ساری زندگی اداس رہنا ہے 

سوچتا ہوں تو مسکراتا ہوں

sari zindagi udass rehna hay

sochta hon to muskurata hon

………………….

تمہارے پاس تو پھر بھی تم ہو 

میرے پاس تو میں بھی نہیں.

Tumaray pass to phir be tum ho

maray pass to ma b nahi

………………….

باتیں اگر بول دی جائے تو رشتے مر جاتے ہیں 

اور اگر دل میں رکهی جائے تو انسان مر جاتا ہے.

batain agar bol di jain to rishtay mar jatay hain

or agar dill ma rakhi jay to insan mar jata hay

………………….

بظاہر تو بڑی رنگین ہے آنکھ کی دنیا 

ویرانی اندر کی ایک قلب جانے ایک رب جانے

ba zahir to bari rangeen hay ankh ki duniya

werani andr ki ak qalab jany ak Rab jany

………………….

مسکراتے ہوئے پھولوں کی نزاکت پہ نہ جا



کوئی اندر سے پریشان بھی ہو سکتا ہے

muskuratay hovy pholon ki nazakat pay na jaa

koi andar say parshan be ho sakta hay

………………….

باتیں اگر بول دی جائے تو رشتے مر جاتے ہیں 

اور اگر دل میں رکهی جائے تو انسان مر جاتا ہے

batain agar bol di jain to rishtay mar jatay hain

or agar dill ma rakhi jay to insan mar jata hay

………………….

اکیلے تڑپتا رہا اس تنہائی بھری رات میں 

نہ تم آئی نہ نیند آئی نہ چین آیا نہ موت آئی

aklay tarpata raha is tanhai bhari rat  ma

na tum aaie na neend aaie ma chain aya na moat aaie

………………….

کیسے رہائی ملے؟ ذات کے زندان میں

اس نے کیا قید بھی خود مرے اندر مجھے

kasay rahai milay? Zat kay zindan ma

is nay keya qaid be khud maray andar mujhay

………………….

اب تو بہت خشک ہے موسم بارش ہو تو سوچیں گے

ہم نے ارمانوں کو کسی مٹی میں بونا ہے 

ab to bohat khushk hay mosam barish ho to sochain gayy

ham nay armano ko kisi matti ma bona hay

………………….

خود کلامی عجیب ہوتی ہے

خود سے باتیں اور آپ کی باتیں

khud kalami ajeeb hoti hay

khud batain or ap ki batain

………………….

صبح کے اجالے میں دل ڈھونڈتا ہے تعبیریں

دل کو کون سمجھائے خواب خواب ہی ہوتا ہے

shuba kay ujhaly ma dill dhondta hay tabeerin

dil ko kon samjhay khawab khawab he hota hay

………………….

ہم آسماں سر پہ اٹھانے والے

خاموش رہنے لگے ہیں دیکھو

ham asma ssarvpay uthana waky

khamish rehny lagy hain dakho

………………….

درد کتنا ہی کیوں نہ ہو ہم مسکرانا نہ چھوڑیں گے 

اداسیوں سے کہو ٹھکانا بدل لیں اپنا

dard kitna he kuy na ho ham muskurana na chorain gay

udasiyon say kaho thekana badal lain apna

………………….

اگر شوق سے ڈھونڈو گے تو مل جائیں گے تم کو 

ہم ریت میں کھوئے ہوئے سکے کی طرح ہیں

agar shoq say dhondo gay to mil jay gain tum ko

ham rait ma khoy hovay sakay ki tarah hain

………………….

غموں کی دھوپ میں مسکرا کے چلنا پڑتا ہے 

یہ دنیا ہے یہاں چہرا سجا کے چلنا پڑتا ہے 

ghamo ki dhoop ma muskura kay chalna parta ha

ya duniya hay yahan chehra saja kay chalna parta ha

………………….

وہ شرارتیں وہی شوخیاں میرے عہد طفل کے قہقہے

کہیں کھو گئے میرے رات دن اسی بات کا تو ملال ہے

wo shararatin wohi sokhiynvmaray ehad tofal kay kehkay

kahi khoo gay maray rat di isi bat ka to malal hay

………………….

‏وہ جب آئے گا دیکھے گا تو مجھ سے پوچھے گا 

یہ کس کا ہجر ہے یہ کون کھا گیا تم کو 

wo jab aayn ga dakhy ga to mujh say pochay ga

ya kis ka hijar hay ya lon khaa gaya tum ko

………………….

آج پھر اس کی یاد میں دل اداس ہے 

لگتا ہے میرے بن وہ بھی اداس ہے

Aj phir us ki yad ma dill udass hay

lagta hay mera bin wo be udass hay

………………….

تم سے دور جانے کا ارادہ نہ تھا

ساتھ رہنے کا بھی وعدہ نہ تھا

تم یاد نہ کرو گے جانتے تھے ہم

اتنی جلدی بھول جاو گے اندازہ نہ تھا

tum say dour jany ka irada na tha

sath rehnay ka be wada naa tha

tum yad na karo gay jantay thay ham

itnii jhaldiii bhool joy gay andaza na tha

………………….

میں آئینہ ہوں دکھاؤں گا داغ چہرے کے

جسے خراب لگے وہ سامنے سے ہٹ جائے

ma aina hon dakhon ga dagh cehray kay

jusay kharab lagy wo samnay say hat jay

………………….

طبیعت سے خاموش ہو چکا ہوں 

میں پتا نہیں کہاں کھو چکا ہوں



Tabeyat say khamosh ho chuka hon

ma pata nahi kahan khoo chuka hon

………………….

سلگ رہا ہوں کئی دن سے اپنے ہی اندر میں

اب جو لب کھو لوں گا تو بہت تماشا ہوگا

salaq raha hon kai din say apnay he andar ma

ab ma jo lab kholu ga to bohat tamasha ho ga

………………….

بڑے مشکل دور سے گزرا ہوگا وہ شخص 

جو رونے والی بات پر بھی مسکرا دیتا ہے.

baray muskil door say guzra ho ga wo sakhs

jo ronay wali bat par be muskura deta hay

………………….

ایک فائدہ تو تھا تم سے بات کرنے کا 

میں تھوڑی دیر سہی پر دل سے مسکراتی تھی

aik faida to tha tum say bat karny ka

ma thori dair sahi par dill say muskuratii thi

………………….

چلو کہ آج بچپن کا کوئی کھیل کھیلیں 

بڑی مدت ہوئی بے وجہ ہنس کر نہیں دیکھا

chali kay aj bachpan ka koi khaik khalain

bari mudat hoie bay waja hans kar nahi dakha

………………….

روشن کیے ہوۓ ہیں تیری یاد کے چراغ 

آجا تیرے بغیر طبیعت اداس ہے

roshan keyan hovay hain tari yad kay charag

aa ja taray begir tabeyat udass hay

………………….

کاش وہ آ جاۓ اور لڑ کر یہ کہے

 ہم مر گئے ہیں کیا جو اتنا اداس رہتے ہو

kash wo aa jay or larr kay ya kehy

ham marvgay hain kya jo itna udass rehtay ho

………………….

تیری جستجو تیرا خیال تیری ہی آس ہے

آ دیکھ تو سہی تیرے بغیر کتنا اداس ہے

tari gistagu tara khyal tari he aas hay

aaa dakh to sahi taray begir kitna udass hay

………………….

تیرے بعد اداسی میری روح میں جذب ہو گئی 

پھر رونقیں مجھے زہر لگنے لگی

taray bad udasi mari rooh ma jazab ho gai

phr ronakain mujhy zahar lagnau lagi

………………….

آسیب زده گھر کا وه درد ہوں میں

دیمک کی طرح کھا گئی جسے دستک کی تمنا

asaib zada ghar ka wo dard hon ma

demak ki tarh khaa gai jisay dastak ki tamana

………………….

پرچھائیوں کے ﺷﮩﺮ کی ﺗﻨﮩﺎئیاں نہ پوچھ 

ﺍﭘﻨﺎ شریک ﻏـﻢ کوئی ﺍﭘﻨـــﮯ ﺳﻮﺍ نہ تھـا

Parchayon kay sehar ki tanhai na poch

apna sareek gham koi apnay sawa na thaa

………………….

وہ جو گھٹ گھٹ کے مر رہا ہے 

وہ میں نہیں سایہ ہے میرا

Wo jo khut khut kay mar raha hay

Wo ma nahi saya hay mera

………………….

مجھ کو خود میں جگہ نہیں ملتی 

تو ہے موجود اس قدر مجھ میں

mujh ko khud ma jhaga nahi miltii

to hay majood is qadar mujh ma

………………….

‏ہم نے چہرے پر اطمینان سجا کر 

آئینے کو ہمیشہ گمراہ ہی رکھا

ham nay chehray par etminan saja kar

ainnay ko hamasha ghumra he rakha ha

………………….

گزر جائے گا یہ دور بھی ذرا اطمینان تو رکھ 

خوشی ہی نہ ٹھہری تو غم کی کیا اوقات ہے

guzar jay ga ya dour b zara etmenan to rakh

khushi he na tehrii to gham ki kya okat hay

………………….

اب میں کسی کو برا نہیں کہتا

جو کچھ جی میں آتا ہے خود کو سنا دیتا ہوں



ab ma kidi ko bura nahi kehta

jo kuch jii ma ata hay khud b suna deta hon

………………….

ہنستا تو میں روز ہوں 

پر خوش ہوئے زمانہ ہو گیا

hansta to ma roz hon

par khush hovay zamana ho gaya

………………….

ایک مدت کے بعد مسکرا ئے تو خیال آیا 

کبھی ہم یوں بھی اچھے لگتے تھے

ak mudat kay bad muskuray to khyal aya

kabi ham yon be achy lagtay thay

………………….

چوٹ پے چوٹ کھاتا جا رہا ہوں

زخموں کو دل میں چھپتا جا رہا ہوں

خود کو میں دھوکہ میں رکھا کر لوگوں

 کہ سامنے مسکراتا جا رہا ہوں.

chot pay chot khata jaa raha hon

zakhmonko dill ma chupata ja raha hon

khud ko ma dhokha ma rakh kar logo

kay samnay muskurata jaa raha hon

………………….

‏ایسی منہ زور اداسی ہے میرے کمرے میں

‏جو تیری یاد کا تختہ بھی الٹ سکتی ہے

‏ضبط بھی اپنی جگہ ہے مگر اے خاموشی 

‏اتنا مت چیخ کہ شریان بھی پھٹ سکتی ہے

asi muh roz udasi hay maray kamray ma

jo tari yad ka takhta be ulat sakti hay

zabat be apni jhaga hay magar ayy khamoshii

itna mat cheekh k saryan be phat sakti hay

………………….

میری زندگی بھی اس قبرستان کی طرح ہے 

جہاں لوگ تو بہت ہیں مگر اپنا کوئی نہیں

mari zindagi be is Qabarstan ki tarah hay

jahan log to bohat hain magar apna koi nahi

………………….

جب جب رونے کو من ہوا میرا

تب تب جی بھر کے مسکرایا ہوں میں

jab jab ronay ko man hova mera

tab tab jii bhar kay muskuraya hon ma

………………….

مسکرانے کے زمانے گزر گے صاحب 

کچھ لوگ دفنا گئے 

میرے شوق بھی 

میرے ذوق بھی

muskurany kay zamany guzar gay sahib

kuch log dafna gay

maray shoq be

maray zoq be

………………….

مجھ کو منائے کون 

خود سے خفا ہوں میں 

mujh ko manay kon

khud say khafa hon ma

………………….

ادھورے پن کی اذیت بجا سہی لیکن

میں آئینے میں مکمل دکھائی دیتا ہوں

Adhoray pan ki azyet baja sahi lakin

ma ainay ma mukambal dekhai deta hon

………………….

کب سے اپنی تصویر نہیں بنائی 

عرصہ ہوا خود کو اچھے نہیں لگے ہم

kab say apni tasweer nahi banai

arsa hova khud ko achy nahi lagy ham

………………….

کیا زمانہ تھا وہ بھی 

مرتے تھے 

ہم جینے کے لئے

اب جی رہے ہیں مرنے کے لئے

kya zamana tha wo be

martay thay

ham jeenay kay leya

ab jee rahy hain marny kay leya

………………….

ہمدردیاں جناب مجھے کاٹتی ہیں اب 

یوں خوامخواہ مزاج نہ پوچھا کرے کوئی

Hamdardiyn janab mujhy katti hain ab

yon kham khaa mejaz na pocha karay koi

………………….

مجھ میں احساس جگاتی ہے اداسی میری 

دل ویراں مجھے ظالم نہیں ہونے دیتے

mujh ma ehsas jagati hay udasi mari

dill weran mujhy zulam nahi honay datay

………………….

ہم چپکے سے دبے پاوں 

تیری کہانی سے نکل جائیں گے

ham chupkay say dabay paon

tari kahani say nikal jain gayin

………………….

‏نجانے کون سی گلیوں میں چھوڑ آیا ہوں 

چراغ جلتے ہوئے خواب مسکراتے ہوئے

anjan kon si galiyon ma chor aya hon charag jhaltay hovay khawab muskuraty hovay

………………….

‏نجانے کون سی گلیوں میں چھوڑ آیا ہوں 

چراغ جلتے ہوئے خواب مسکراتے ہوئے



Anjan kon si galiyon ma chor aya hon Charag jhaltay hovay khawab muskuraty hovay 

………………….

تم تو نگاہیں پھیر کر خوشیوں میں کھو گۓ 

ہم نے اداسیوں کو اپنا مقدر بنا لیا ہے

Tum to nighahain phair kar khushyon ma kho gay

ham nay udasiyon ko apna muqadar bana leya hay

………………….

کچھ دنوں سے بڑا پریشان ہوں میں 

خود کے لیے بھی انجان ہوں میں 

دن رات خاموش رہتا ہوں 

کبھی کبھی لگتا ہے قبرستان ہوں میں


kuch dino say bara parshan hon ma

khud kay leya be anjan hon ma

din rat khamosh rehta hon

kabi kabi lagta hay qubarsatan hon ma

………………….

ترس گئی ہیں یہ آنکھیں تیرے دیدار کی خاطر 

اک بار تو آجاؤ ان کے سکوں کی خاطر 

Taras gai hain ankhain taray dedar ki khatir

Ak bar to aa joy  in kay sakoon ki khatir

Islamic Poetry in Urdu

 

گرتے ہیں سجدوں میں ہم اپنی حسرتوں کی خاطر 

اگر گرتے صرف عشق خدا میں کوئی حسرت ادھوری ہی نہ رہتی


Girtay hain sajdon main ham apni hasraton ki khatir 💔

agar gurtay sirf Ishq Khuda main koi hasrat adhori he naa rehtii😇

………………….

جو سجدوں میں روتا ہے 

اسے لوگوں کے سامنے رونا نہیں پڑتا

Jo sajdon main rota hay🌸

usay logo kay samnay rona nahi parta🥀

 

………………….



یاد رکھو نماز پانچ وقت اور اخلاق چوبیس گھنٹے فرض ہیں

 

yad rakhon Nimaz Panch waqt or ikhlaq chobees (24) ghantay farz hain

………………….

جس نے سکھ میں شکر ادا کیا اس نے دکھ میں رب کو بہت قریب پایا

Jis nay sukh main Shukar ada keya

Us nay Dukh ma RAB ko bohat qareeb paya😇😇💯

………………….

خدا سے موت نہیں خدا کا خوف مانگو

دل دھڑکے خدا کی یاد میں بس یہ ہی دعا مانگو

Khuda say moat nahi Khuda ka khoof mangoo

Dill dharkay Khuda ki yad main bas ya he dua mangoo🤲🏻

 

………………….

اے میرے مالک اُس دن کی ذِلت سےب چانا جب تو پکارے 

وَامْتَازُ الْیَوْمَ ایُّھَا الْمُجْرِمُوْن 

اے مُجرموں آج الگ ہو جاؤ


Ayy maray Malik us din ki zilat say bachana jab tu Pukaray

وَامْتَازُ الْیَوْمَ ایُّھَا الْمُجْرِمُوْن

Ay mujramoo Aj alag ho joy ..!

 

………………….

کائنات کا سب سے بڑا سچ یہ ہے کہ رب العالمین تک پہنچنے کے لیے رحمتہ العالمین کی پیروی ضروری ہے

 

Kainat ka sab say bara sach ya hay k Rab-ul-Alameen tak ponchny kay leya Rehnat-Ul- Alameen ki Payvary zaroori ha❤️❤️🔥


………………….

خدا کو منا رہے ہیں لوگ 

خلقِ خدا کا دل دکھا کے

 

Khuda ko mana rahy hain log

Khalaq e Khuda ka dil dhuka kar 💔

………………….

اے آتش دوزخ نہ دیکھ اتنے غصب سے مجھ کو 

وہ بڑا رحیم ہے جس کا گنہگار ہوں میں

 

Ayy Aatish dozakh na dakh itnay ghazab say mujh ko

wo bara Raheem hay jis ka ghunagar hon main

 

………………….

وقت بنانے والے کے ساتھ وقت گزارو 

وقت کبھی برباد نہیں ہو گا

 

Waqt banany walay kay sath waqt guzaroo

waqt kabi barbad nahi ho gaa🌸❤️

 

………………….



جب اللّٰہ تعالیٰ کسی سے ناراض ہوتا ہے 

تو رزق کی دروازے بند نہیں کرتا 

بلکہ سجدوں کی توفیق چھین لیتا ہے

 

jab Allah Tala kisi say nazar hota hay

To rizq kay darwazy band nahi karta

balkay

sajdon ki Tofeeq cheen leta hay🥀💔

 

………………….

کبھی بھی اپنی جسمانی طاقت اور دولت پر بھروسہ نہ کرو 

کیونکہ بیماری اور غربت آنے میں دیر نہیں لگتی 


Kabi be apni jismani taqat or dolat par bharosa na karo

kuy kay

Bemari ir ghurbat aanay ma dair nahi lagtii 💯

 

………………….

کامیابی کا سفر نماز اور تلاوت قرآن کے بناء ادھورا ہے

Kamyabi ka safer namaz or tilawat quran kay bina adhora hai🌸😇🌼 

……………….

پتا نہیں کیا جادو ہے سجدے میں 

جتنا جھکتا ہوں اتنا اوپر جاتا ہوں

Pata nae kiya hai sajday mai

Jitna jukhta hon itna oper jata hon

………………….

دلیل فتح تو دیکھ اے حُسینؑ کے قاتل

کہ جس سر کو جھُکانے آئے تھے اُسی سر کو اُٹھا کر چلے

Daleel fatah to deakh ay Husain kay Qtil 

Kay jis sir ko jhukana aya thy isi sir ko otaha kar chaly

🌸🌸💫

………………….

سجدہ بھی اسی وقت قبول ہوتے ہیں 

جب سر کے ساتھ دل بھی جھکا ہو 

Sajda bhi isi waqat Qabool hoty hain 

Jab sir kay shat dill bhi jhuka ho🌸😇🌸🌼

……………….

نماز میں رو کر جو سکون ملتا ہے

وہ سکون اس لیے ملتا ہے کہ رب تھام چکا ہوتا ہے

Namaz mai ro kar jo sakoon milta 

Wo sakoon is liya milta hai kay Rab tham chuka hota ha🌸🌼💫

……………….

حسین سجدے تو سب نے کیے تیرا نیا انداز ہے

تونے وہ سجدہ کیا جس پہ خدا کو ناز ہے

Hussain Sajday too sab nay kiya tara niya anadaz hai 😇

Tu nay wo sajda kiya jis py ya Khuda ko naaz hai🌸💫🌼

………………….

نانا کو کیوں نہ ناز ہو اپنے نواسے پر

ہر قول مصطفیٰ صَلَّى اللّٰهُ عَلَيْهِ وَسَلَّم کا نبایا حسینؑ نے 

🌸😇🌼Nana ko kun na naaz ho apnay nawasay par 

Har qoal MuSTIFA SALALALLAH ALIHI WA SALAM ka banya Hussain nay

………………….

تو نے صداقتوں کا نہ سودا کیا حسین

باطل کے دل میں رہ گئی حسرت خرید کی

To nay Sadakoton ka na soda kiya Hussain 

Batil kay dill mai rah gayi hasrat khareed ki 🌼😇🌸

………………….

اتنی تو روشنی سورج نا کر سکا 

جتنا اجالا آج ہے نام حضرت امام حسینؓ سے

Itni to roshni soraj na kar saka 💫

Jitna ijala aaj hai Naam HAZRAT IMAM HUSSAIN SAY🌸😇🌼💫

……………….

مومن کی دنیا میں کاش نہیں 

کن فیکون پر یقین ہوتا ہے

MOmin ki duniya mai kasah nae 

KUN FAYAKOON par yaqeen hota hai

💫💫💫💫

………………….

قرآن کو مختلف قراءت سے سنا کریں عجیب لطف آتا ہے

Quran ko mukhtalif Qrayat say suna karin ajeeb lotuf ata hai

💫😇😌😌💫

………………….

جس نے حق کربلا میں ادا کر دیا

اپنے ناناﷺ کا وعدہ وفا کر دیا

سب کچھ امت کے خاطر فدا کر دیا 

گھر کا گھر سب سپرد خدا کر دیا 

اس حسین ابن حیدر پہ لاکھوں سلام

میرے حسین تجھے سلام

Jis ny haq karbala mai ada kar dia 

Apany Nana ka wada wafa kar dia 

Sab kuch omat kay khatir fida kar dia

Ghar ka ghar sab suporday Khuda kar dia

Is Hussain ABNI HAIDERpay lakhon Salam

Meray Hussain tujay salam

🤲🏻🌼😇🌸💞

……………….

رمضان کے بعد افضل روزہ محرم کا

حضرت ابوہریرہ رضی الله عنہ بیان کرتے ہیں

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا

ماہ رمضان کے بعد سب سے افضل روزہ اللہ کے مہینے محرم کا روزہ ہے

جامع ترمذی  

Ramazankay bad Afzal roza muhatm ka 

Hazart ABU  HURAIRA beyan karty hain

RASOOL SALALA ALIHE WASALM ny farmya 

Mah ramzan kay bad sab say afzal roza Allah kay mahinay Muharm ka roza hai 

Jame Tarmizi

……………….

نہ جانے کیوں 

میری آنکھوں میں آگئے آنسو 

سکھا رہا تھا میں 

بچوں کو کربلا لکھنا

Na janay kun 

Meri ankhon mai agaya ansoo

Sekha raha tha mai

Bachon ko Karbala likhna 

🌺🌹💮🌸

………………….

یااللہ جو ہاتھ تیرے آگے پھیلتے ہیں 

انہیں اپنے بندوں کے آگے پھیلانے سے بچا

Ya Allah jo hat teray agay phaltay hain 🤲🏻🙏

Inhayin apnay bandon kay agay phailany

Say bacha😢🙏

………………….

اور حقیقت تو یہ ہے کہ اب ہمیں خدا تب یاد آتا ہے 

جب ہم درد کے مارے ہوئے ہوں 

غرض کے مارے ہوئے ہوں یا پھر مرض کے مارے ہوئے ہوں

Or haqiqat to ya ha kay ab hamayin khudha tab yad ata hai 😢

Jab hum darad kay maray hoya hon 😥

Garz kay maray hoa hon ya phir maraz kay maray hoa hon😪🙏🤐

………………….

پوری کائنات میں کوئی کسی کا اتنا انتظار نہیں کرتا جتنا

رب کریم اپنے بندے کی توبہ کا انتظار کرتا ہے

Pori kainat mai koi kisi ka itna intizar nae karta 🙂😇

Jitna😌

Rab kareem apany banday ki toba ka intzar karta hai🌺🌼💮

………………….

امید کا دامن کبھی مت چھوڑیں

کمزور تمھارے حالات ہوسکتے ہیں

اللہ تعالیٰ کی ذات نہیں

Omeed ka daman kabhi mat chorayin

Kamzore tumhary halat ho saktay hain

Allah Taala ki zaat nae😌🌹❣️

……………….

تم مانگتے وہ ہوں جو تمہیں اچھا لگتا ہے

لیکن اللّٰہ تعالیٰ وہی دیتا ہے جو تمہارے لئے اچھا ہوتا ہے

Tum mangtay wo hon jo tumhay acha lagta hai 🌹❣️

Lakin Allah Taala wohi deta hai jo tumhary liya acha hota hai😇😌

😇😇

………………….

اگر غیر محرم مخلص ہوتا 

تو میرا اللہ پاک کبھی اس سے پردہ کرنے کا حکم نہیں دیتا 

Ager gair mahram muklis hota 🌹❣️

To mera Allah pak kabhi is say parda karny ka hukam nae deta💫💫

……………….

گناہ کو گناہ سمجھتے رہنا چاہیے 

اللہ سے ہر وقت ڈرتے رہنا چاہیے 

نہ جانے کون سے حالات میں زندگی کی شام ہو جائے 

اللہ سے ہر وقت توبہ کرتے رہنا چاہیے 

Gunah ko Gunah samjty rahna chayia🙃

Allah say har waqat darty rahna chayia🙏

Na janay kon say halat mai zindagi ki sham ho jaya 

Allah say har waqt toba kartay rahna chayia

😇❤️🌹

………………….

اللّٰه بہتر کرے گا یہ وہ الفاظ ہیں 

جس سے انسان کی آدھی پرشانی دور ہو جاتی ہے

Allah bhater kary ga ya wo ilfaz hain 

Jis say insann ki adhi preshani door ho jati hai😇❣️🌹

………………….

اگر انسان کو تکبر کے بارے میں اللہ کی ناراضگی اور سزا کا علم ہو جائے تو بندہ صرف فقیروں اور غریبوں سے ملے اور مٹی پر بیٹھا کرے

Ager insan ko taqabur kay baray mai Allah ki naarzgi or saza ka ilam ho jaya to banda sirf faqiron or gareebon say mily or matti par betha karay 🙏

………………….

رات بھر شبنم گرتی ہے فقط اس لئے کہ پتہ پتہ ذکر اللہ کرے با وضو ہو کر

Rat bhar shabnum girti hai faqat is liya kay pata pata zikar Allah kary Ba wazu ho kar🌹🙏💫

………………….

بن مانگے ہی مل جاتی ہیں تابیریں کسی کو 

کوئی خالی ہاتھ رہ جاتا ہے ہزاروں دعاوں کے بعد 

Bin mangay hi mill jatii hain tabeeryin kisi ko ❣️

Koi khali hat rah jata hai hazaron duayon ky bad😞💫😔

………………….

بگڑیاں بنانے والا اولادیں دینے والا رزق دینے والا 

زندگی موت دینے والا عزت ذلت دینے والا 

صرف ایک ہی میرے اللہ کی ذات ہے

Bigriyan bannay wlay Oladyin denay wala rizq denay wla

Zindagi moat denay wala izzat zilat denay wala

  • Sirf aik ji meray Allah ki zatt ha

………………….

مقدر اتنی بار بدلتا ہے جتنی بار بندہ اللہ پاک سے رجوع کرتا ہے

Muqader itni baar badlata hai jitni bar banda Allah pak say Rajoh karta ha

………………….

میرے لیے میرا اللہ اور میرے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہی کافی ہیں

😇💫🌹❤️❣️🌺

………………….



کسی کی غلطیوں کو بے نقاب نہ کرو 

وپر اللہ سب دیکھ رہا ہے تم حساب نہ کرو

Kisi ki galtiyonko bay naqab na karo

Allah sab deakh raha ha tum hissab na karo

………………….

اے خدا مجھ سے نہ لے میرے گناہوں کا حساب

میرے پاس اشک ندامت کے سوا کچھ بھی نہیں

Ay Khuda muj say na lay meray gunahon ka hissab 

Meray pass ashaq nadamat kay siwa kuch bhi nae 

💫😇💫

………………….

لوگ ڈھونڈتے رہے کامیابی کو

مؤذن ساری عمر کہتا رہا حی الفلاح

Loag dhoondtay rahy kamyabi ko

Mozan sari kahta raha Hayi Allah Falah

………………….

خوشی چاہیے عبادت کرو 

سکون چاہیے قرآن پڑھو

 صحت چاہیے روزہ رکھو 

چہرے پہ رونق چاہیے تہجد پڑھ لو 

مشکلات کا حل چاہیے استغفار کرو 

برکت چاہیے درود پڑھو

Khushi chyia ibadat karo 

Sakoon chyia Quran parho

Charay pay ronak chayia tahaujd parh lo

Muskilat ka hall chyia Astegfar kato barqat chyia Darrod parho

………………….

جمعہ مبارک 

یا اللہ ہم سب کے روزے اور ہماری عبادات اپنی بارگاہ میں قبول فرما اور ہمارے گناہ بخش دے

بیشک تو بہت رحم کرنے والا ہے 

آمین

Jumma mubarik 

Ya Allah hum sab kay rozay or hamri ibadat apni bargah mai qabool farma or hamrau gunah bakhas day 

Beshak tk buhy rahm karnay wala ha

Ameen

……………….

کروڑوں سر ہیں جنہیں بچاتی ہیں نمازیں 

جو بچائے نماز کو وہ سر حسین کا ہے

Caroron sir hain jinhayj bachatu hain namzayin 

Jo bachay namz ko wo sir Hussain ka ha

………………….

لوگ نمازے جنازہ پڑھنـے دوسرے ملکوں سے آتـے ہیں 

مگر فرض نماز پڑھنـے محلـے کی مسجد میں نہیں جاتـے

Log namazu janza parhnay dosary mulkon say atay hain 

Mager faraz namaz parhnay muhlay ki Masjid tak nae jatay

………………….

نماز عادت بن جائے تو

کامیابی مقدر بن جاتی ہے

Namaz adat ban jaya to 

Kamyabi muqader ban jati ha

………………….

نماز کب کام آئے گی

فجر مرتے وقت

ظہر قبر میں

عصر منکر نکیر کے وقت

مغرب حساب کتاب کے وقت

عشاہ پل صراط پر

Namaz kab kam aya gi 

Fajar maraty waqat

Zuhar qaber mai

Asar munkir nakeer ky waqat 

Magrib hissab kitab kay waqat 

Isha pull sirat par

………………….

جس کو دھوکے سے کوفہ بلایا گیا جس کو بیٹھے بٹھائے ستایاگیا جس کی گردن پہ خنجر چلایا گیا جس کے بچوں کو پیاسے رلایا گیا جس کے لاشِ پہ گھوڑا دوڑایا گیا

اس حسینؑ ابنِ حیدر پہ لاکھوں سلام

Jis ko dhoky say kofa bulya gyaa jis ko bathay batya sataya gaya jis ki garden pay khanjr chalaya gaya jiz kay bacon ko payasay rulya gaya jiski lash pah Ghora doraya gaya 

Is Hussain Abne Haider pay salam

……………….

‏کمال کا حوصلہ تھا کربلا کے

 شہیدوں کا

وہاں پر شکر کرتے تھے جہاں پر 

صبر مشکل تھا

Kamal ka hosla tha karbala kay 

Shahidon ka 

Wahan sabet par sukar kkarty tahy jahan par 

Sabet muskil tha

………………….

اگر میری زندگی میں دکھ نہ ہوتے تو 

میں اپنے رب کے ساتھ دعا کا رشتہ کیسے نبھاتا

Agrt mari zindgai mai dholm na hotay to 

Mai Rab kay shat Dua ka rista kesay nibhata

 

………………….

وہ اپنی طرف آنے والا راستہ اسی کو دیکھاتا ہے جو اس کی طرف رجوع کرتا ہے

Wo apni tarf anay wala rasta isi ko dekhta hai jo 

Is ki tarf rajoo karta hai

……………….

یہ دنیا فانی ہے اس لئے بس اپنے رب کو یاد کرو جو سب کی سنتا ہے 

بےشک وہ رحمان اور رحیم ہے

اپنے رب سے مدد طلب کیا کرو کیوں کے وہ سب جانتا ہے

Ya duniya fani ha bus isi liya oany rab ko yad karo jo

Sab ki sunta ha 

Beshak wo rahman or raheem hai 

Apny rab say madad talab kiya karo kun kay wo sab janta hai

……………….

میت اور قبر کو دیکھ کر بھی 

ہم اپنے اعمال درست نہیں کرتے

 قبرستان سے واپسی پر ہم یہ سمجھتے ہیں 

کہ بس اسی نے مرنا تھا

Mayet oe Qaber ko deakh kay b hum aonay Amal drust nae karty 

Qabersatn ki wapsi par hum ya smjaty han

Kay bus isi nay marna tha

………………….

آپ اللہ کو اتنا قریب سمجھو کہ وہ آپ کے خاموش الفاظ بھی سنتا ہے

Ap Allah ko itna qareeb smjo ky wo ap ky khamosh alfaz bhi sunta hai

………………….

عشق اگر انتہا پر آ جائے تو

سر نیزے پہ اور قرآن لبوں پہ آجاتاہے۔

Ishq ager intiha par ajya to 

Dir nayzay pay or qurana labon pay ajata  hai

………………….

کربلا انسان کے سینے میں یوں رکھ دیا گیا

ایک منٹ میں دل دھڑکتا ہے بہتّر مرتبہ

Karbala insan kay seenay mai yoon rakh dia gaya 

Ak mint mai dill dharkta hai bhattrr martabah

………………….

کبھی دیکھ اپنے خمیر میں کبھی پوچھ اپنے ضمیر سے

وہ جو مٹ گیا وہ یزید تھا جو نا مٹ سکا وہ حسین ہے

Kabhi deakh apny khameer mai kabhi poch apny zameer say 

Wo jo mit gaya wo yazeed tha jo na mit saka wo Hussain hai

………………….

جس کو دھوکے سے کوفہ بلایا گیا جس کو بیٹھے بٹھائے ستایاگیا جس کی گردن پہ خنجر چلایا گیا جس کے بچوں کو پیاسے رلایا گیا جس کے لاشِ پہ گھوڑا دوڑایا گیا

اس حسینؑ ابنِ حیدر پہ لاکھوں سلام

Jis ko dhokay say Kofah bulya giya jis ko bethay bthya satya gaya jis ki gerdan py khanjer chalya gaya 

Jis ky bacahon ko payasa rulya gaya jis ky lasah pay ghora dorya gaya 

Is Hussain Abne Haider pay lakhon salam

……………….

‏کمال کا حوصلہ تھا کربلا کے

 شہیدوں کا

وہاں پر شکر کرتے تھے جہاں پر 

صبر مشکل تھا

Kamal ka hosla tha karbala kay 

Shahidon ka 

Wahan sukar karaty thy jahan par saber muskil tha

………………….

اگر میری زندگی میں دکھ نہ ہوتے تو 

میں اپنے رب کے ساتھ دعا کا رشتہ کیسے نبھاتا

Ager mari zindgai mai dhook na hotay to 

Mai apnay rab ky shat dua ka rista kesay nibhata

………………….



وہ اپنی طرف آنے والا راستہ اسی کو دیکھاتا ہے جو اس کی طرف رجوع کرتا ہے 

Wo apni tarf anay wala rasta isi ko dekhta hai jo is ki taraf rajoh karta hai

………………….

یہ دنیا فانی ہے اس لئے بس اپنے رب کو یاد کرو جو سب کی سنتا ہے 

بےشک وہ رحمان اور رحیم ہے

اپنے رب سے مدد طلب کیا کرو کیوں کے وہ سب جانتا ہے

Ya duniya fani hais liya bus apnay rab ko yad karo jo 

Sab ki sunta hai 

Beshak wo rahman od raheem hai 

Apnay rab say madad talab kiya karo kun kay wo sab janta hai

………………….

میت اور قبر کو دیکھ کر بھی 

ہم اپنے اعمال درست نہیں کرتے

 قبرستان سے واپسی پر ہم یہ سمجھتے ہیں 



کہ بس اسی نے مرنا تھا

 

Mayatbor qaber ko deakh kay b

Hum apnay amal drust nae karty

Qabersatan say wapsi par hum ya smjty hain 

Kay bus isi nay marna tha

 

………………….

آپ اللہ کو اتنا قریب سمجھو کہ وہ آپ کے خاموش الفاظ بھی سنتا ہے

Ap Allah ko itna qareeb samjo ky wo app ki khasoh ilfaz bhi sunta hai

………………….

عشق اگر انتہا پر آ جائے تو

سر نیزے پہ اور قرآن لبوں پہ آجاتاہے۔

Ishq ager untiha par ajaya to

Sir naizay pay or Quran labon pay ajata h

………………….

کربلا انسان کے سینے میں یوں رکھ دیا گیا

ایک منٹ میں دل دھڑکتا ہے بہتّر مرتبہ

Karbala insan kay seenay mai yoon rakh dia gaya 

Ak mint ma dill dharkta hai bhattee martabh

………………….

کبھی دیکھ اپنے خمیر میں کبھی پوچھ اپنے ضمیر سے

وہ جو مٹ گیا وہ یزید تھا جو نا مٹ سکا وہ حسین ہے

Kabhi deakh apnay khamir mai kabhi poch apny zameer say 

Wo jo mit gaya wo yazeed tha jo na mita wo Hussain hai

………………….

ہزاروں سوچیں الجھاتی ہیں مجھے

مگر ایک سجدہ سلجھا دیتا ہے سب.

Hazaron sochyin olajti hain muja 

Mager ak sajda suljah deta hai sab

………………….

کلیجہ شق ہوا مظلومیت کی انتہا لکھ کر 

قلم بھی رویا نام شہید کربلا لکھ کر

Kalijah shaq hoa muzlomiyat ki intiha lik kar 

Qilam bhi roya naam shaheed karbala likh kar

………………….

خنجر تلے حسین ہے تیروں کی جھڑی ہے 

ایسی نماز کس نے زمانے میں پڑھی ہے

Khanjar talay Hussain hai teraon ki jahri hai 

Asi namaz kis ny zamany mai parhi hai

………………….

آنکھوں کے ساحلوں پر ہے اشکوں کا اک ہجوم 

شاید غم حسین کا موسم قریب ہے

Ankhon ky sahil par hai askhkon ka ik hajoom 

Shayed ghum Hussain ka mosam qareeb hai

………………….

آنکھوں کے ساحلوں پر ہے اشکوں کا اک ہجوم 

شاید غم حسین کا موسم قریب ہے

Ankhon kay sahilon par hai askon ka hajoom 

Shayed ghum Hussain ka mosam qareeb ha

………………….

غرور ٹوٹ گیا کوئی مرتبہ نہ ملا

ستم کے بعد بھی کچھ حاصل جفا نہ ملا 

سر حسین ملا یزید کو لیکن 

شکست یہ ہے کہ پھر بھی جھکا ہوا نہ ملا

 

Garoor tot gaaya koi martabah na mila 

Sitam kay bad bhi kuch hasil jafa na mila 

Sir Hussain mila yazeed ko lakin 

Shakist ya hai kay phir bhi juka hoa na mila

………………….

جس کو اپنے اللہ کے سامنے سجدے کرنے کی توفیق نہیں ہوئی

اس سے بڑا کوئی بدنصیب کوئی نہیں ہے

Jis ko apnay Allah kay smnay sajday karnay ki tofiq nar hoi 

Is say bara koi bad naseeb koi nae hai

………………….

یکطرفہ محبت صرف خدا کر سکتا ہے 

انسانوں میں اتنا ظرف نہیں ہوتا کہ 

یکطرفہ طور پر تمام عمر نبھاتے چلے جائیں

Yaktarfah muhabat sirf khudha kar skata hai 

Insano mai itba zaraf nae hota kay 

Yaktarfa toor par tamam umar nibhatty chaly jayin

………………….

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جو شخص نیکی کے کسی کام کی طرف رہنمائی کرے تو اسے عمل کرنے والے کے برابر اجر و ثواب ملتا ہے

Rasool nay farmya jo shakash naiki kay kisi kam ki tarf rahnumayi kary to isay amal karny walay ky baraber ajro sawab milta ha

………………….

اللہ سے تعلق آپ کے احساس تنہائی کو ختم کر دیتا ہے

Allah say taluq ap kay ihsas tanhayi ko kahtm kar deta ha

………………….

اے ہمارے پروردگار ہم نے اپنی جانوں پر ظلم کیا ہے اور اگر آپ نے ہماری بخشش نہ کی اور ہم پر رحم نہ کیا تو یقیناً ہم خسارہ اٹھانے والوں میں سے ہو جائیں گے

Ay hamary parwardegar hum nay apni jano par zulam kiya hai 

Or ager ap ny hamri bakhses na ki or hum par rahum na kiya to yaqeenan hum khasaro ithany walon mai say ho jayin gyin

………………….

 بےکار ہیں ایسی خوشیاں اور بےکار ہیں ایسے غم جن میں رب یاد نہ آئے

Bekar hain adi khudiyan or bay kar hai. Asay ghum jin mai rab yad na aya

………………….

فضائیں سرخ ہوتی جا رہی ہیں

لگتا ہے مسافر کربلا پہنچنے والے ہیں

Fezayin surkh hoti ja ri han 

Lagta hai musafir karbala pohanchy walay hain

………………….

آنے لگی جو پاس دولت حرام کی

بھول گئے تمام عادت احترام کی

وضو غسل کے فرائض جسے پتا نہیں

غلطیاں وہ بھی نکالنے لگے امام کی

Anay lagi jo pass dolat haram. Ki 

Bhool gaya tamam adat ehtiram ki 

Wazo gusal kay faraiz jesay pata nae

Galtiyan wo bhai nikalny lagay imam ki

………………….

جب سارے دروازے بند ہو جائے تب بھی اللہ تعالی کا دروازہ اپنے بندوں کے لیے ہمیشہ کھلا رہتا ہے بندے کو چاہئے کہ وہ اپنے رب سے مانگے بیشک وہ رحمان ہے

Jab saray darwazay band ho jayn tab allah ka darwaza aonay baandin kay liya hamisha khula rhata ha banday ko chyia kay wo apnay rab say mangy beshak wo Rahman hain

 

………………….

بےشک جن لوگوں کی زبان ہمیشہ دوسروں کے لئے دعا میں متحرک رہتی ہیں خدا کبھی بھی ان کی جھولی خالی نہیں رکھتا

Beshaq jin logon ki zuban gamisha dosron kay liya dua mai muthruk rahnti hain khudah kabhi bhi in ki jhoolo khali nae rakhta 

………………….

گناہ جوان کا بھی اگرچہ بد ہے لیکن بوڑھے کا بدتر ہے

Gunah jawan ka bhi agrcha bad hai lakin borhay ka badtar ha

 

………………….

یا اللہ میرے ان گناہوں کو معاف فرما دے 

جو میری دعائیں قبول ہونے نہیں دیتے آمین

Ya Allah meray in gunahin ko maff farma day

Jo kari dunayin qabool hony nae deti ameen

………………….

یا اللہ میرے ان گناہوں کو معاف فرما دے 

جو میری دعائیں قبول ہونے نہیں دیتے آمین

Ya Allah meray in gunahin ko maff farma day

 

Jo kari dunayin qabool hony nae deti ameen

 

………………….

جب میں چاہتا ہوں خدا سے بات کرنا تو میں نماز پڑھتا ہوں اور جب میں چاہتا ہوں کہ خدا مجھ سے باتیں کرے تو میں قرآن پاک پڑھتا ہوں 

Ja ma chata hon khudah say bat karna to namaz parhata hon or jab ma ya vhata hon khudha muj asay bat kary to ma quran oarhta hon 

………………….

بیشک تمام مشکلات کا حل نماز اور قرآن پاک ہے

اللّٰہ پاک ہم سب کو نماز اور قرآن پاک پڑھنے اور سمجھنے کی توفیق عطا فرمائے الہی آمین ثم آمین

Besakh tamam muskilat ka hall namz or quran pak hi 

Allah pak sab ko namz or qurab pak psrny or smjny ki tofiq ata farmya ameen suma ameen 

 

………………….

اللہ کو پسند نہیں سختی زبان میں

اسی لیۓ تو نہیں رکھی ہڈی زبان میں

Allah ko pasand nae sakhti zuban

Is liya to nae rakhi hadi zubn maai

………………….

کیوں نہیں سمجھتے ہم اس بات کو اے زمانے والوں؟

جب رب کائنات نے واضح فرما دیا حقوق اللّٰہ معاف کر سکتا ہوں 

حقوق العباد نہیں

Koi nae smjaty hum is bat ko aonay zamany walon 

Jab rabe kainat nay wazihaya farma dia haqoiq allah maff kar skata hon 

………………….

اس کے در پہ دل کو سکون ملتا ہے

اس کی عبادت سے چہرے کو نور ملتا ہے

جو جھک گیا اللہ کے سجدے میں 

اسے کچھ نہ کچھ ضرور ملتا ہے

 

Is kay dard pay dill ko skoon milta ha

Is ki ibadat say charay pay noor milta ha

Jo jhuk gaya Allah kay sajday mai

Isy kuch zaror milta ha

 

 

 

………………….

 

قرآن کی دوستی

 

جو قبر کے اندھیروں سے لے کے پل صراط کی سختیوں تک آپ کا ساتھ نہیں چھوڑتی

 

Quran ki dosti

Jo qaber ky andhiron say lay kar pull sirat ki shaktiyakn tak ap ka shat nae chorti

 

………………….

قرآن کی دوستی 

جو قبر کے اندھیروں سے لے کے پل صراط کی سختیوں تک آپ کا ساتھ نہیں چھوڑتی 

Quran ki dosti

Jo qaber ky andhiron say lay kar pull sirat ki shaktiyakn tak ap ka shat nae chorti

 

………………….

میری تھکن ساری دنیا 

میرا سکون صرف ذکر الہی

Mari thaqna sari dinia

Mera sakoon zikre Elahi

………………….

موت کا ایک دن مقرر ہے وہ ہر حال میں آئے گی دعا کریں جہاں بھی جس جگہ بھی آئے ہمارا خاتمہ ایمان پہ ہو

آمین ثم آمین 

Moat ka har ak din muqarar h wo ak din har hall. Ma aya gi

Dua karin jahan bhi aya jis bhi jagha aya hamara kahtama eman py ho

………………….

کبھی کبھی زندگی ایسی ٹھوکر مارتی ہے 

کہ انسان سیدھا سجدے میں جا گرتا ہے

Kbhai kbahi zindagi asa thokar marti ha

Kay insan seedha sajday ma ja girta hai

………………….

اللہ کی رحمت گھیر لیتی ہے اس مکان کو 

جو سن کر اُٹھ جاتا ہے فجر کی اذان کو

Allah ki rahmat ghair lati ha is makan ki

Jo sun kar oth jata ha fajar ki azan ko

………………….

زندگی ہر شخص کی گزرتی ہے 

بہترین زندگی وہ ہے 

جو رب تبارک تعالی کے لیے وقف ہو جائے

Zindagi har shakash ki guzarti ha

Bhatareen zindagi wo ha

Jo rab kay liya waqaf ho jaya

………………….

خدا کی تلاش میں بھٹکتے پھرنے کی ضرورت نہیں 

دیکھنے کی نظر سے دیکھو 

اللہ شہ رگ سے زیادہ قریب تم کو ملے گا

Khudha ki talash ma bhatny phirnya ki zarort nae

Dekhany ki nazar say deko

Allah sha raag say b zayda qareeb ha

………………….

تمام تعریفیں اس سوہنے رب کی 

جو میرے اعمال کو دیکھے بغیر ہی ہر ایک نعمت سے نوازتا ہے

Tamam tarifyin is sonay rab ki jo meery amal dekhay bahir hi muja ak namt say nawazata hai

………………….

کیوں نہیں سمجھتے ہم اس بات کو اے زمانے والوں؟

جب رب کائنات نے واضح فرما دیا حقوق اللّٰہ معاف کر سکتا ہوں 

حقوق العباد نہیں

Kun nae smjaty hum is bat ko ay zamany walo

Jab rab kianaht nay wazaiha farma di haqooa Allah maff kar sakta ko

Haqooq ebad nae

………………….

اس کے در پہ دل کو سکون ملتا ہے

اس کی عبادت سے چہرے کو نور ملتا ہے

جو جھک گیا اللہ کے سجدے میں 

اسے کچھ نہ کچھ ضرور ملتا ہے

Is kay dard pay dill ko skoon milta ha 

Is ki ibadat say charay pay noor milta ha 

Jo jhuk gaya Allah kay sajday mai 

Isy kuch zaror milta ha

 

………………….

قرآن کی دوستی 

جو قبر کے اندھیروں سے لے کے پل صراط کی سختیوں تک آپ کا ساتھ نہیں چھوڑتی 

Quran ki dosti 

Jo qaber ky andhiron say lay kar pull sirat ki shaktiyakn tak ap ka shat nae chorti

 

………………….

میری تھکن ساری دنیا 

میرا سکون صرف ذکر الہی

Mari thaqan sari duniya 

Mera sakoon sirf zikre elahi

 

………………….

موت کا ایک دن مقرر ہے وہ ہر حال میں آئے گی دعا کریں جہاں بھی جس جگہ بھی آئے ہمارا خاتمہ ایمان پہ ہو

آمین ثم آمین 

Moat ka aik din muqarar hai wo har hall ma aya gi dua karin jahan bhi jis jagha bhi aya hmara khatma eman pay ho 

Ameen suma ameen

………………….

کبھی کبھی زندگی ایسی ٹھوکر مارتی ہے 

کہ انسان سیدھا سجدے میں جا گرتا ہے

Kbhai Kbhai zindagi asi thokar marti ha 

Kay insan sedha sajday ma ja girta hai

………………….

اللہ کی رحمت گھیر لیتی ہے اس مکان کو 

جو سن کر اُٹھ جاتا ہے فجر کی اذان کو

Allah ki rahmat ghair lati ha is makan ko jo sun kar oth jata hai fajar kinazan ko

………………….

زندگی ہر شخص کی گزرتی ہے 



بہترین زندگی وہ ہے 

جو رب تبارک تعالی کے لیے وقف ہو جائے

Zindagi har shaks ki guzarti ha 

Bhatareen zindagi wo ha

Wo rab talah kay liya waqaf ho jaya

 

………………….

خدا کی تلاش میں بھٹکتے پھرنے کی ضرورت نہیں 

دیکھنے کی نظر سے دیکھو 

اللہ شہ رگ سے زیادہ قریب تم کو ملے گا

Khudha ki talashi mai bhatknay phirnay ki zarort nae 

Dekhany ki nazar say dekaho 

Allag sha raag say b zayda qareeb h

………………….

تمام تعریفیں اس سوہنے رب کی 

جو میرے اعمال کو دیکھے بغیر ہی ہر ایک نعمت سے نوازتا ہے

Tamam tarifayin is sonay rab ki 

Jo meray amal kondekhay bahir hi har ak namar say nawazta hi

………………….

اللہ پاک جب کسی کو اپنی قربت عطا کرنے لگتا ہے

تو سب سے پہلے اُس کا اخلاق اچھا کر دیتا ہے

Allah pak jab kisi ko aonay qurabat ata karny lagta hai 

To sab say phaly iz ka ikhlaq acha kar deta hai

………………….

رب ساتھ ہو تو طوفان کی پروا نہیں 

رب ناراض ہو تو پھونک سے بھی ڈر لگتا ہے

Rab shta ho to tufan ki parwa nae 

Rab naraz jo to phonk say b darr lagta

………………….

‏ﺧﻮﺑﺼﻮﺭﺕ ﺭﺷﺘﮧ ﮨﮯ ﻣﯿﺮﺍ ﺍﻭﺭ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﺎ 

ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﯿﮟ ﻣﺎﻧﮕﺘﺎ ﻧﮩﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﮐﻢ ﻭﮦ ﺩﯾﺘﺎ ﻧﮩﯿﮟ

Khubsurat rista ha meray or Allah ka 

Zayda mai mangta nae or kam wo deta nae

………………….



نیکی کا حکم دو اور برائی سے منع کرو 

قبل اس کے کہ تم دعائیں مانگو اور تمہاری دعائیں قبول نہ کی جائے

Naiki ka hukam do or burayi say mana karo 

Qabal is kay kay tum dunayj mango oe tumhari duayi. Qabool na ki  jayin 

 

 

………………….

جب کوئی انسان اپنے رب کی ماننے لگتا ہے 

تو رب کی ساری توجہ اس کی طرف چلی جاتی ہے

Jab koi insan apnay rab ki mannay lagta ha

To rab ki sari tawaja is ki tarf chali jati ha

 

………………….

اس کے در پے سکوں ملتا ہے

اس کی عبادت سے نور ملتا ہے

جو جھک گیا اللہ کے سجدے میں

اسے دل کا سکوں ضرور ملتا ہے

Isi ki ibadat say noor milta hai 

Jo jhuk jaya Allag kay sajday mai 

Isay dill ka sookn zaror milta ha

 

………………….

گناہ کو پھیلانے کا ذریعہ بھی مت بنو 

کیونکہ ہوسکتا ہے آپ تو توبہ کرلیں 

پر جس کو اپنے گناہ پر لگایا ہے 

وہ آپ کی آخرت کی تباہی کا سبب بن جائے

Gunaha ko phelanay ka zarya b kat bano 

Kun kay ho skta hai app to toba kar layin 

Par kis ko apny gunah par lagaya 

Wo ap ki akhart ki tabhayi ka sababs ban jaya 

 

 

………………….

دو چیزیں جن سے رب کو راضی کیا جا سکتا ہے

کلمہ طیبہ کا ورد

استغفار کی کثرت

Do cheexyin jin say rab ko razai kiya ja skata ha 

Kalma tayaba ka wird 

Astagfar ki kasrat

………………….

سکون کے لیے وضو کا پانی

جگر کے لیے قرآن کی تلاوت

صحت کے لیے نماز

اور خوش رہنے کے لیے اللہ کا ذکر کیا کرو

اچھی بات پھیلانا صدقہ جاریہ ہے

Sakoon kay liya wazo ka pani 

Jigar kay liya quran 

Sehat kay liya namaz 

Or khush rahnay ky liya Allag ka zikar kia karo 

Achi bat bhelana sadqa jaria ha

 

 

………………….

مایوس وہ ہوتا ہے جو اللہ پہ یقین نہیں رکھتا اور محروم وہ ہوتا ہے جو اللہ کی دی ہوئی بے شمار نعمتوں کا شکر ادا نہیں کرتا 

Mayoos wo hota hi jo Allah pay yaqeen nae rakhta or 

Mahroom wo hota hai jo allah ki di hoi by sumar namaton ka sukar ada nae karta

………………….

خاموشی کی زبان کوئی کب جانتا ہے

جو تو نہیں جانتا تیرا رب جانتا ہے

تنہائی میں گناہ کر یا کر عبادت

تیرے قلب کی گہرائی میں کیا وہ سب جانتا ہے

Khamoshi ki zuban koi kab janta hai 

Jo to nae janta tera rab janta hai 

Tanhayi ma gunah kar ya ibadat kar 

Tray qalab ko ghariyai mai kiya wo sab janta hain

………………….

جگہ جگہ پہ پیارے نبی ﷺ کا کلام ہو

ہر شخص کے زباں پہ درود و سلام ہو

یارب ہر ایک روز یہی سلسلہ رہے

کہ مکّہ میں صبح ہو تو مدینہ میں شام ہو

Jagha jagha pay payare Nabi ka kalam ho 

Har shakas kay zuban pay darrod salam ho 

Ya Rab har aik roaz yahi silslah rahay

Kay makah mai subha ho to madinay mai sham ho

………………….

مسجد میں سیمنٹ کی بوری اس وقت دیں جب آپ کو معلوم ہو جاۓ کہ محلے میں کسی کو آٹے کی بوری کی ضرورت نہیں ہے

Masjid mai sement ki boori is waqat dayin jab ap ko malloom ho jaya kay muhalay mai kisi ko atay ki boori ki zarort nae hai

 

………………….

ہم اللہ کی وہ تخلیق ہیں 

جو اپنےخالق کی طرف تب دوڑتے ہیں 

جب اس کی مخلوق 

ہمیں تنہا چھوڑ دیتی ہے

Hum Allah ki wo mahklloq hain 

Jo apnay khaliq ki tarf tab dortat hian

Jab is ki mahlooq 

Humhay tanha chore deti hai

 

………………….

گناہوں سے نجات وہی پاتا ہے جو اقرار جرم کر لے 

اور ندامت کے لیے توبہ ہی کافی ہے 

Gunahon say nijat wohi pata hai jo iqrar juram kar lay 

Or ndamat kay liya toba hi kafi ha

 

………………….

اللہ کا ذکر اپنے ہاتھ کی انگلیوں پہ کیا کرو 

کیونکہ جب آپ اپنی قبر کے اندھیرے میں رہوں گے 

تو یہ انگلیاں روشنی کا کام کریں گئیں

Allah ka zikar aomay haton ki ongliyon pay kiya karo 

Kun kay jab ap aoni qbaer kay andharay mai raho gaya 

To ongliyan roshani ka kaam karn gyin

 

………………….

انسان کا نقصان مال اور جان کا چلا جانا نہیں 

بلکہ انسان کا سب سے بڑا نقصان نماز کا چھوٹ جانا ہے

Insan ka nuqsan mall or jan ka chala jana 

Balaky insan ka sab say bara muqsan nazam ka chhoot jana hai

………………….

سچائی اور نیکی کا راستہ دشوار ضرور ہے 

لیکن منزل بہت خوبصورت 

برائی کا راستہ بہت آسان سہی 

لیکن منزل تباہی ہی ہے

Suchayi or neki ka rasta dushwar zaror hai lakin munzil buht koobaurt 

Burayi ka rasta buht asan sahi 

Lakin munzil tabayi hi hai

………………….

بے شک وہ غرور کرنے والوں کو پسند نہیں کرتا

Beshak wo garoor karnay walon ko pasamd nae karta 

………………….

نماز کی فرصت نہ ملی تو کیا کرو گے 

اتنی مہلت نہ ملی تو کیا کرو گے 

روز کہتے ہو کل پڑھوں گا نماز 

کل اگر سانس نہ رہی تو کیا کرو گے

Namaz ki fursat na milli to kiya karo gay 

Itni muhlat na millu to kiya karo gay 

Roza kahty ho kal parhon gaa Namaz 

Kal ager saans na rahi to kiya karo gay

………………….

اللہ تعالی کو سب جگہوں سے زیادہ محبوب مساجد ہیں اور سب سے زیادہ ناپسندیدہ جگہ بازار ہیں

Allah Tala ko sab jhaghon say zayda majboob masajid 

Hain or sab sy zayda na pasandida jagha bazzar hai 

………………….

ایمان اور حیا دو ایسی چیزیں ہیں 

جن میں سے ایک چلی جائے 

تو دوسری خود بخود ختم ہو جاتی ہے

Aimaan or haya doo asi cheezyin hai 

Jin mai sy aik chali jaya 

To dosri khud ba khud khatm ho jati ha

………………….

جو اپنی تنہائیوں کو اللہ کے خوف سے مزین کر لے 

اللہ اس کی محفلوں کو بھی اچھا کردے گا

Jo apni tanhayion ko Allah kay khoof say mazayn kar ly 

Allah is ki mahfilon ko bhai acha kar day ga

………………….

بہت مایوس تھا زندگی سے 

پھر آواز آئی حی علی الفلاح

Buht mayoos tha zindagi 

Phir awaz ayi Hai Alla lfalah

………………….

رب سے جب کچھ مانگو تو رب کو ہی مانگو 

کیونکہ جب رب تمہارا ہے تو سب کچھ تمہارا ہے

Rab say jab kuch mango to rab ko hi mango 

Kun kay jab Rab tumhara hai to sab kuch tumhara hai

………………….

وہ شخص اپنے آپ پر بہت ظلم کرتا ہے 

جو پورے دن میں ایک بار بھی استغفار نہیں کرتا

Wo sakash apnay ap par buht zulam karta ha 

Jo poray din mai ak baar bhi Astegfar nae karta 

………………….

پہلے تو بسا تھا مدینے میں دل میرا 

اب دل میں بس گیا ہے مدینہ حضورﷺ کا

Phaly to bus tha Madinay mai dill mera 

Ab fill mai bus gaya hai Madin Hazoor ka

………………….

تم اللہ تعالی کے ذکر میں دل لگا لو 

سکون اور اطمینان تم سے دل لگا لیں گے

Tum Allah Tala kay zikar mai dill lga lo

Sakoon or atiminan tum say dill laga layin gayin

………………….

کسی بھی گناہ کے بعد اگر تمہارے دلمیں ندامت اور آنکھوں میں آنسو امڈ آئے تو سمجھ لو اللہ کا کرم ہو گیا ہے

Kisi bhi Gunah kay bad ager tumhary dill mai jadamat or 

Ankhon mai anso amad aya too smaj lo Allah ka karam ho geya hai

 

………………….

گناہ کے چھوٹا ہونے کی طرف نہ دیکھو 

بلکہ یہ دیکھو کہ تم نافرمانی کس کی کر رہے ہو

Gunah ky chota honay ki tarf na dekho 

Balaky ya dekho ky tum nafarmani kis ki kar rahy ho

………………….

دنیا کے لئے اتنی محنت کرو جتنا یہاں رہنا ہے 

اور آخرت کے لئے اتنی محنت کرو جتنا وہاں رہنا ہے

 

Duniya kay liya itni mahnat karo jitna yahan rahna hai

Or akhart kay liya itni mahmat karo jitna wahan rahna hai

………………….

بہت نوازا ہے اس پاک ذات نے مجھے 

میری عبادت کے برابر ملتا تو شاید کچھ نہ ملتا

Buht nawaza hai is pak zat nay mujay 

Mari ibadat kay barabr mikta too shayed kuch na milta

………………….

غم اور مشکلات صرف اللہ کو بتایا کرو 

اس یقین کے ساتھ کہ وہ تمہیں جواب بھی دے گا 

اور تمہاری تکلیف بھی دور کرے گا

Gham or muskilat sirf Allah ko bataya karo 

Is yaqeen kay shat wo tumhay jawab bhi day ga 

Or tumhari taqleef bhi door kay ga

………………….

کیا لطف ہو جو رب مجھے یہ کہہ کر بخش دے

سرکارِ دو جہاں ﷺ سے محبت اسے بھی تھی

Kiya lutaf ho jo Rab muja ya kha kar bakhsh day 

Sarka-e- do jahan say muhabat isay bhi thi

………………….

چھن جانے میں بھی مصلحت خدا ہوتی ہے 

ہر چیز کا پاس رہنا بھی بہتر نہیں ہوتا

Cheen janay mai bhi maslaht khudha hoti hi 

Har cheez ka pass rahna bhi bhatter nae hota 

………………….



بیشک نماز ہی ساتھی ہوتی ہے 

دنیا سے قبر تک 

قبر سے حشر تک 

حشر سے جنت تک 

Beshak Namaz hi shati hoti hai 😍💫

Dunia say qaber tak 🌆⚰️

Qaber say hashar tak ⚰️🔥

Hashar say janat tak🏞️🏝️

………………….